HK & Dr. Tariq Mehmood Taseer's Media Interviews

سپرموجن سپرم گرو کورس

اینکر:۔اسلام و علیکم۔۔ ناظرین ۔۔۔ امید ہے آپ سب خیریت سے ہوں گے۔ ناظرین آج ہم نے اپنے پروگرام میں جس شخصیت کو دعوت دی ہے وہ ملک پاکستان کے نامور اور بے اولادی کے مشہور روحانی معالج جو کسی تعارف کے محتاج نہیں جناب حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر آج ہم ڈاکٹر صاحب سے جس کورس کے بارے میں پوچھے گے اس کانام ہے سپرموجن سپرم گرو combinedکورس جو مردوں میں بانجھ پن کے مرض کو ختم کرتا ہے(جوoligospermia,azoospermia,necrospermiaمیں نہایت مفید ہے) اور ان کے اندر سپرم کی مقدار کو بڑھا کر اس میں طاقت لاتا ہے آج آپ کو ڈاکٹر صاحب بتائیں گے کہ مردانہ بانجھ کیا ہوتا ہے؟اس کی وجوہات ، اسباب، علامات ، علاج اس کے علاوہ اور بہت سی باتیں جن سے مردانہ بانجھ پن سے بچا جا سکتا ہے جیسا کہ بہت سے لوگ جانتے ہیں کہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر اپنے بہترین ہربل طریقہ علاج کی وجہ سے پوری دنیا میں شہرت یافتہ ہیں تو آئیے ڈاکٹر صاحب

سے ملتے ہیں ۔

اینکر:۔ڈاکٹر صاحب اسلام و علیکم۔۔۔
ڈاکٹر:۔وعلیکم اسلام
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب سب سے پہلے تو آج آپ ہمارے ناظرین کو اس مرض کے بارے میں بتائیں کے بانجھ پن کسے کہتے ہیں؟
ڈاکٹر:۔میاں بیوی کے درمیان ایک سال تک عمومی و ظیفہ زوجیت اور تعلق قائم رہنے کے باوجود اولاد نہ ہو یا حمل نہ ٹھہر پائے اسے ہم بانجھ پن سے تعبیر کرتے ہیں۔آپ کی چھوٹی سی کمزوری زند گی کی بڑی محرومی بن سکتی ہے۔آدم کی جنس مرد کو نر اور مادہ کو عورت کہا جاتا ہے۔ دیگر مقاصد تخلیق کے علاوہ ان کا ایک نہایت بنیادی و صف بقائے نسل انسانی اور تسلسل آدمیت ہے اور جب ان میں کوئی خرابی پیدا ہو کر نسل پیدا کرنے کی قابلیت مفقود ہو جائے تو طبعی اصطلاح میں اسے بانجھ پن کہا جاتا ہے۔ بد قسمتی سے ہمارے معاشرے میںیہ غلط تصور پایا جاتا ہے کہ بانجھ پن کا مرض صرف عورتوں میں پایا جاتا ہے۔ مگر حقیقت میں ایسا نہیں ہے۔ بانجھ پن مردوں اور عورتوں دونوں میں پایا جاتا ہے۔ مردوں کی طرف سے منسوب ہو کر عوامی زبان بانجھ پن کو نامردی یا مردانہ بانجھ پن کہا جاتا ہے۔ شادی شدہ جوڑوں میں شادی کے پہلے سال حصول حمل کا امکان80فیصد ہوتا ہے۔جبکہ شادی کے دوسرے سال اسی ابتدائی سو فیصد میں سے حمل کی کامیابی کا امکان 10فیصد تک رہ جاتا ہے۔ جبکہ شادی کے دو سال بعد باقی10فیصد جوڑوں کے لئے کسی نہ

کسی طرح کا طبی تعاون درکار ہوتا ہے۔
مردوں میں بانجھ پن کے لحاظ سے سمین(مادہ تولید) کی تین اقسام ہیں۔
1۔مادہ تولید میں سپرم کی کمی oligospermia
2۔مادہ تولیدمیں سپرم کی غیر موجودگی ؂ azoospermia
3۔مادہ تولید میں سپرم کا مردہ ہونا necrospermia
مادہ تولید میں سپرم کی کمی oligospermia:۔مردانہ بانجھ پن کی ایک وجہ مادہ تولید میں سپرم کی تعداد کا کم ہونا ہے۔ سپرم کی مناسب مقدار200ملین سے600ملین ہے۔ اگر سپرم کی مناسب تعداد120ملین سے کم ہو تو سپرم کی کمی کہا جائے گا۔ اس کی کمی کی کئی حیاتیاتی و ماحولیاتی وجوہات ہو سکتی ہیں مثلاً کثرت مباشرت ، مادہ تولیدکا کم پیدا ہونا، ان ٹیوبز میں نقص ہونا جو سپرم کو خصیوں سے عضوتناسل کی طرف لے جاتی ہیں ، خصیوں میں اینٹھن وغیرہ اس کے علاوہ ذہنی و جسمانی بے چینی، بے خوابی اور ہارمونز کے توازن میں بگاڑ ہونے سے بھی سپرم کی پیدائش کم ہوتی ہے ۔تنگ کپڑوں کا استعمال بھی ہارمون کی پیدائش کو کم کرنے میں مدد دیتا ہے۔ روزمرہ کی عادات مثلاً سگریٹ نوشی، گرم پانی کے ٹب میں دیر تک نہاتے رہنا۔ الکوحل کا زیادہ استعمال، لیپ ٹاپ کا زیادہ دیر گود میں رکھ کر استعمال وغیرہ شامل ہیں۔
2۔مادہ تولیدمیں سپرم کی غیر موجودگی azoospermia:۔مادہ تولید میں سپرم کی بالکل غیر موجودگیazoospermiaکہلاتا ہے۔ اس بیماری میں مادہ تولید میں سپرم بالکل پیدا ہی نہیں ہوتے ۔مادہ تولید میں سپرم بالکل پیدا نہ ہونے کا سب سے بڑا سبب انفیکشن ہے۔ جس میں پیپ آنا، خون کے سرخ ذرات کا آنا یا پھر بیکٹیریاوغیرہ کی موجودگی ہے۔azoospermiaکی دو اقسام ہیں۔
1۔obstrustctive azoospermia:۔اگر خصیے سائز میں نارمل ہوں اور ہارمون لیول بھی نارمل ہو تو خصیے اور عضوتناسل کے درمیان نالیاں بند ہونے کوobstrustctive azoospermiaکہتے ہیں۔ یہ مرض خصیوں سے مادہ تولید باہر نکالنے والی نالیوں پر چوٹ لگنے یا ان میں نقص پیدا ہونے کی وجہ سے ہوتا ہے اس کے علاوہ ہرنیوں کا آپریشن بھی اس کی خاص وجہ ہے۔
2۔nonobostrictive azoospermia:۔اس بیماری میں مادہ تولید میں سپرم کا پیدا نہ ہونا خصیوں کی وجہ سے خصیوں میں نقص ہونا، اس کے علاوہ خصیوں میں پیدائشی نقص ہونا، ہارمون لیول نارمل نہ ہونا، خصیوں کا انفیکشن اور تیز بخار بھی اس کی وجہ بنتا ہے۔
necrospermia(مادہ تولیدمیں سپرم کا مردہ ہونا):۔ necrospermiaبانجھ پن کی ایک ایسی قسم ہے جس میں مادہ تولید میں سپرم موجود تو ہوتے ہیں لیکن وہ زندہ نہیں ہوتے اور مردہ ہونے کے باعث وہ اس قابل نہیں رہتے کہ حمل قرار پانے کا باعث بن سکیں۔اگر منی میں40فیصد سپرم مردہ حالت میں ہوں تو یہ بیماریnecrospermiaکہلائے گی۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب کیا خود لذتی ایک نقصان دہ عمل ہے اور اس سے بانجھ پن کا مرض لاحق ہو سکتا ہے ؟
ڈاکٹر:۔ جی بالکل خودلذتی کی وجہ سے بانجھ پن کا مرض لاحق ہو سکتا ہے ۔خود لذتی ایک عام رویہ ہے مگر25سال کی عمر سے قبل اس کا بہت نقصان ہے عضو پتلا ہو جاتا ہے اور لمبائی رُک جاتی ہے اور شادی کے بعد بانجھ پن کی شکل میں اس کا نقصان سامنے آتا ہے ۔ لیکن اس عمل کو تقریباً ہر مرد اور عورت اپنی زندگی میں کبھی نہ کبھی اختیار کرتے ہیں ۔خود لذتی کے عمل سے طبی لحاظ سے کافی ذیلی اثرات واقع ہوتے ہیں ۔تاہم یہ اُس صورت میں مسئلہ بن سکتا ہے جب اس کی وجہ سے اپنی بیوی کے ساتھ کی جانے والی جنسی سرگرمیاں کم کر دیں ، شادی شدہ حضرات خودلذتی کی وجہ سے سرعت انزال کا شکا ر ہو جاتے ہیں یہ عمل روزمرہ کی زندگی اور سرگرمیوں میں خلل کا سبب بننے لگتا ہے ۔یہ گھریلو نا چاقی کا سب سے بڑا سبب بنتا ہے۔جب کوئی فرد کثرت کے ساتھ خود لذتی کا عمل کرتا ہے تو اُس کے وہ خلیات مسلسل تحریک پاتے ہیں جو دماغ میں ایسے کیمیائی اجزاء اور ہارمونز کو پیدا کرتے ہیں جو جنسی ردعمل کے دورانئے کے مختلف مراحل کے لئے ذمہ دار ہوتے ہیں ۔اس طرح ان خلیات کا نہ صرف اپنا عمل تیز ہو جاتا ہے بلکہ اس کی تعداد میں بھی اضافہ ہو جاتا ہے لہٰذا جب ایسا فرد خود لذتی کا عمل کرتا ہے تو اُس کے جسم میں ایسے کیمیائی اجزاء معمول سے زیادہ بنتے ہیں اور ان کے اثرات بھی معمول سے زیادہ ہوتے ہیں۔جو لوگ خود لذتی کر تے ہیں اس کی وجہ سے وہ بانجھ پن کا شکار بھی ہو جاتے

ہیں ۔
اینکر:َڈاکٹر صاحب مادہ منویہ کی قلت ورقت(پتلاپن)بھی مردانہ بانجھ پن کی وجہ بنتی ہے اس کے بارے میں ذرا ہمارے ناظرین کو بتا دیں؟
ڈاکٹر:۔جی بالکل مادہ تولید کا پتلا پن بھی مردانہ بانجھ پن کی وجہ بنتی ہے کیونکہ مادے میں اتنی طاقت نہیں رہتی جس کی وجہ سے وہ حمل ٹھہرا سکے۔بد ن سے جنسی ملاپ وغیرہ کے ذریعے مادہ منویہ خارج ہوتا ہے۔ مردانہ طاقت اور بدن کی قوت وغیرہ کے لئے ضروری ہے کہ اسی مقدار میں مادہ منویہ دوبارہ پیدا ہو۔ اس کے لئے ضروری ہے کہ متناسب غذا کا استعمال کیا جائے تا کہ بدن مادہ منویہ کا بدل حاصل کر سکے۔ جنسی ملاپ کی کثرت ، جلق،کثرت احتلام کی وجہ سے بدن میں مادہ منویہ کی کمی ہو جاتی ہے ،مریض سستی کا شکار ہو جاتا ہے۔ پوری طاقت محسوس نہیں ہوتی۔ انزال کے وقت مادہ منویہ کم مقدار میں خارج ہوتا ہے۔ بعض صورتوں میں انزال کے وقت مادہ منویہ کے بجائے خون خارج ہوتا ہے۔ مادہ منویہ کی رقت(پتلاپن)کئی جنسی امراض کا پیش خیمہ ثابت ہوتی ہے۔ یہ رقت کثرت جماع، جریان احتلام، جگر و مثانہ کی گرمی کے باعث ہے۔ رقت (پتلا پن)کو دور کرنا بہت ضروری ہے تا کہ جنسی اور جسمانی کمزوری جلد دور ہو جائے اور صحت دستیاب کرنے کے لئے مادہ منویہ میں متوازن رہے،نشہ آور اشیاء کے استعمال سے بھی یہ شکایت پیدا ہو جاتی ہے اسی عارضے میں آلات منی بھی متاثر ہوتے ہیں جن سے مادہ منویہ کی پیدائش کم ہو جاتی ہے۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب مردانہ بانجھ کے اسباب تو ہمارے ناظرین کو بتا دیں؟
ڈاکٹر: مردانہ بانجھ پن جنسی قوت کی خرابی کا نام ہے اور جنسی قوت تین قوتوں کا مجموعہ ہے ان تین قوتوں میں سے جب کسی قوت یا فعل میں خرابی ہو گی تو بانجھ پن پیدا ہو سکتا ہے ہر وقت کی غیر طبی حالت میں بانجھ پن کی نوعیت بھی مختلف ہوتیں ہیں۔1۔خواہش ، جذبے کا نہ ہونا۔ خواہش ، جذبے اور کشش کا تعلق اعصاب سے ہے۔ اس جذبے میں کمی بیشی کے لئے اعصاب کو دیکھا جائے گا۔2۔نطفے کی منتقلی کے لئے عضو مخصوص کی کارکردگی کو پیش نظر رکھا جائے گا۔ کیونکہ نطفہ اور خواہش دونوں موجود ہوں لیکن متعلقہ مقام تک پہنچانے کے لئے عضو میں ہی جان نہ ہو تو ایسے بانجھ پن کی نوعیت اول سے مختلف ہو گی۔3۔نطفہ خصیوںtesticlesکے تحت تیار ہوتا ہے۔ اس میں نقص واقع ہو تو غدی بانجھ پن تصور ہو گا۔ یہ تینوں مفرداعضاء اپنی حالت سے ایک دوسرے کو متاثر(طاقتور، کمزور اور سست)کرتے ہیں۔ جب ان کے افعال میں توازن ہو گا تو جنسی قوت بھی درست ہو گی۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب دوران علاج مریض کو کن کن چیزوں سے پرہیز کرنا چاہیے اور کون کون سی چیزوں کا استعمال کرنا مریض کے لئے مفید ہے؟
ڈاکٹر:۔۔ پرہیز علاج سے بہتر ہے۔
پرہیز:۔آلو مٹر، گوبھی ، بیگن ، پالک ، چاول، بڑا گوشت، پکوڑے سموسے، اچار چٹنی تمام گرم بادی جٹ پٹی تیز مصالحے جات تمام کولڈ ڈرنکس ، ٹھنڈی اشیاء ، شیور مرغی سے مکمل طور پر پرہیز کرنا چاہیے۔
استعمال کرنے والی اشیاء:۔کدو، ٹنڈے ، توری، مولی ، گاجر، شکجم، چھوٹا گوشت، دودھ دہی، تمام ڈرائی فروٹ ، شہد ، کھجور،کالے سفید چنے، دال ماش مچھلی دہی لیموں فرائش فروٹ سیب، کینو، مالٹا، آم اور کیلا وغیرہ استعمال کر سکتے ہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب جو مرد حضرات ان مرض میں مبتلا ہے آپ کے پاس اس مرض کا کوئی علاج موجود ہے جس کو استعمال کر کے مایوس لوگ اس بیماری سے بآسانی سے نجات حاصل کر سکے؟
ڈاکٹر:۔ہمارے ادارے تاثیر دواخانہ کے مایہ ناز ڈاکٹرز، حکماء اور سائنسدانوں نے میری سر پرستی میں برس ہا برس کی تحقیقات اور بانجھ پن کے اصل اسباب اور وجو ہات کو مد نظر رکھ کر اپنی ریسرچ سے سپرموجن سپرم گروcombinedکورس کو متعارف کراویاہے جو ہر طرح کے کیمیائی اجزاء سے پاک مکمل طور پر قدرتی دوا ہے اس کا کوئی بھی سائیڈ ایفیکٹ نہیں ہے یہ خالص جڑی بوٹیوں سے تیار شدہ ہے اور100فیصد نتائج کی حامل ہے ۔ تاثیر لیبارٹریز نے برسوں کی تحقیق کے بعد سپرم کی افرائش کے لئے ایسا کورس تیار کیا ہے جس کا نام سپرموجن سپرم گروcombined کورس ہے ۔ یہ کورس شعبہ ریسرچ نے دیسی جڑی بوٹیوں کی آمیزش کے ساتھ طب اسلامی کے اصولوں کے عین مطابق سائنٹیفک طریقوں پر تاثیر لیبارٹریز میں جدید آٹو میٹک مشینری کی مدد سے تیار کی ہے۔ جس کے استعمال سے ہر طرح کا انفکیشن ختم ہو جاتا ہے اور منی میں جراثیم نسل پیدا ہونے لگتے ہیں ۔ جس سے,oligospermia, necrospermia azoospermiaجیسی بیماری سے مکمل طور پر نجات مل جاتی ہے۔ یہ مردوں کے جرثومہ حیات میں ہونے والی تبدیلیوں کے افرائشی ہارمون HGHکے سپرم کی سطح میں اضافہ کرتا ہے۔ بے اولاد افراد کے سپرم کم ہوں تو ان کے مادہ تولید میں سپرمز کو نارمل حالت میں لاتا ہے ۔مادہ تولید کی افزائش کو بڑھا کر سپرم کو اولاد کے قابل بناتا ہے۔ سپرم کی پیدائشی کمزوری اور کمی ایسی محرومی ہے جو ایک صحت مند ،طاقتور مرد کو بھی کھوکھلا کر کے باگل پن کی حد تک پہنچا دیتی ہے ان دونوں صورتوں میں یعنی کرم منی کی کمزوری اور اس کے قدرتی تناسب کو درست کر کے اس کے قوام کو ٹھیک کرتا ہے اس میں شامل نہایت ہی قیمتی اور نایاب جڑی بوٹیاں نہ صرف مادہ تولید کو پیدا کرنے اور اسے گاڑھا کرنے میں موثر ہے بلکہ اس میں موجود سپرم کی کمی کو بھی دور کرتا ہے یہ کورس مادہ تولیداور سپرم سمیت تما م مردانہ امراض جو بانجھ پن کا سبب بنتے ہیں جیسے مادہ تولید میں جراثیم یعنی سپرم کا نہ ہونا، خصیوں کا نا کارہ ہونا، خصیوں اور عضوتناسل کے درمیان نالیوں کا بند ہونا، خصیوں میں انفیکشن ہونا وغیرہ کو نہ صرف ختم کرتا ہے بلکہ ان کو دوبارہ پیدا بھی نہیں ہونے دیتا۔سپرموجن سپرم گروcombinedتھیراپی 40یوم کے دورانیہ پر مشتمل ہے سپرموجن سپرم گرو combinedتھیراپی کی مکمل قیمت پاکستانی 12800/-روپے ہے کیونکہ اس سپرموجن سپرم گروcombinedتھیراپی کا شمار ہمارے پست در پست صدی نسخہ جات میں ہوتا ہے اس لئے یہ کورس صرف ہمارے ادارے تاثیر دواخانے پر ہی د ستیا ب ہے مرد حضرات کو میں بتاتا چلو کہ وہ پاکستان میں ہے یا دنیا کے کسی بھی ملک میں ہے آپ بذریعہ آڈر سپرموجن سپرم گروcombinedتھیراپی مانگووا سکتے ہیں۔پاکستان میں ہم بذریعہ V.Pپررسل بھیجتے ہیں اس کے علاوہ آپ خود ہمارے کلینک پر تشریف لا کر خود طلب کر سکتے ہیں۔پاکستان سے باہر دنیا کہ ہر ملک میں ہم بذریعہ ائیر شیب بھیجتے ہیں جہاں ایک خاص بات میں بتاتا چلو ہم پوری دنیا میں ہوم ڈیلوری سروس فراہم کرتے ہیں مطلوبہ کورس آپ کے گھر تک پہنچایا جا سکتا ہے۔ نوٹ( کورس کے بہترین نتائج کے لئے 4سے6ماہ مسلسل استعمال کریں)
ناظرین اگر آپ بھی سپرموجن سپرم گرو combinedکورس خریدنا چاہتے ہیں تو دیر مت کیجئے بلکہ ابھی کال کر کے اپنا آرڈر بک کروائیں۔ ہمارے ہیلپ لائن نمبرز یہ
ڈاکٹر صاحب سے براہ راست مشورے کے لئے ان نمبر ز پر رابطہ:+92334-9552889
+92321-9552889
+92300-9552889
آپ کی راہنمائی کے لئے میل اور فی میل میڈیکل آفیسرز ہمہ وقت موجود ہیں جن سے آپ اپنی بیماری اور ہر قسم کے مرض کے بارے میں راہنمائی حاصل کر سکتے ہیں جو آپ کو ہر قسم کی راہنمائی فراہم کرئے گے( کلینک ٹائم صبح 9بجے سے لے رات8بجے تک)
میڈیکل آفیسر نمبر1: +92333-5501390
میڈیکل آفیسر نمبر2:۔ +92323-5501390
میڈیکل آفیسرنمبر3: +92336-5777696
میڈیکل آفیسرنمبر4: +92336-5777697
فی میل (لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر1: +92331-5607654
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر2: +92332-5607654
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر3: +92332-5530536
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر4: +92315-5530536
کلینک (Reception landline) نمبرز:۔ +9251-5777696,+9251-5777697,+92515530536,+9251-5773239
نوٹ:۔ آپ اپنی بیماری کے متعلق مکمل معلومات کے ساتھ میل کریں ۔ آپ ہمارے ای میل taseerlabs@gmail.com،taseerdawakhana@gmail.comپر بھی آپ اپنا آرڈر بک کروا سکتے ہیں۔
ہمارا ایڈریس ہے: تاثیر دواخانہ i-111:اقبال روڈ، نزد کمیٹی چوک، چٹیاں ہٹیاں، تاثیر چوک راولپنڈی۔مزید معلومات کے لئے وزٹ کیجئے ہماری ویب سائیٹ www.taseerlabs.com,dawakhanataseer.com۔
اینکر:۔بہت بہت شکریہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر صاحب آپ نے ہمارے ناظرین کو سپرموجن سپرم گروcombinedکورس کے بارے میں بہترین راہنمائی کی امید ہے کہ ناظرین اس سے بہت زیادہ فائدہ اُٹھائیں گے اور آپ کو اپنی دعاؤں میں یاد رکھیں گے۔ ناظرین۔۔۔۔ یہ تھے بے اولادی کے مشہور روحانی معالج حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر جو کہ ہر قسم کے مردانہ و زنانہ امراض کے ماہر ہیں۔ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر نے آج مردانہ بانجھ پن سے متعلق ہم سب کی بہترین راہنمائی کی۔ امید ہے آپ ضرور ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتوں پر عمل کر کے مردانہ بانجھ پن سے چھٹکارا حاصل کر سکیں گے اور ایسے افراد تک ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتیں پہنچائیں گے جو کہ اولاد کی نعمت سے محروم ہیں تا کہ وہ جلد از جلد حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر سے اپنا علاج کروا کر اپنے آنگین میں خوشیاں بکھیر سکیں۔۔۔۔ اپنا خیال رکھئے گا۔۔۔ اللہ حافظ۔۔

سپرموجن سپرم گر و پلس کورس

اینکر:۔اسلام و علیکم۔۔۔ ناظرین ۔۔امید ہے آپ سب خیریت سے ہوں گے ۔۔ناظرین آ ج ہم نے اپنے پروگرام میں جس شخصیت کو دعوت دی ہے و ہ ملک پاکستان کے نامور اور بے اولادی کے مشہور روحانی معالج جو کسی تعارف کے محتاج نہیں جناب حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر آج ہم ڈاکٹر صاحب سے جس کورس کے بارے میں بات کریں گے وہ ہے سپرموجن سپرم گرو پلس کورس جس کو استعمال کر کے مرد حضرا ت اپنے سپرم کاؤنٹ کو باآسانی بڑھا سکتے ہیں و ہ بھی کسی سائیڈ ایفیکیٹ کے بغیر ۔ناظرین ڈاکٹر صاحب آپ کو بتائیں گے کہ مردانہ بانجھ پن کیا ہوتا ہے؟ اس کی وجوہات ، علامات او ر علاج اس کے علاوہ او ر بہت سے باتیں جس پر عمل کر کے آپ اپنی ازدواجی زندگی کو خوشگوار بنا سکتے ہیں اور اپنے آنگن میں اولاد کی نعمت سے مالا مال ہو سکتے ہیں ۔ جیسا کہ بہت سے لوگ جانتے ہیں کہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر اپنے بہترین ہربل طریقہ علاج کی وجہ سے پوری دنیا میں شہرت یافتہ ہیں تو آئیے ڈاکٹر صاحب سے ملتے ہیں۔


اینکر:۔ڈاکٹر صاحب اسلام و علیکم۔
ڈاکٹر:۔وعلیکم سلام۔۔۔۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب سب سے پہلے ہمارے ناظر ین کو یہ بتائیں کہ بانجھ پن کیا ہو تا ہے او ر اس سے ازدواجی زندگی پر کیا اثر پڑتا ہے؟
ڈاکٹر:۔عورتوں میں اولاد نہ ہونے کے مرض کو عقر (بانجھ پن) کہا جاتا ہے۔ لیکن یہاں اُس مرض کا ذکر کیا جا رہا ہے جو مرد کو اولاد سے محروم رکھنے کا موجب ہے وا ضح ہو کہ مرد کے ایک مرتبہ کے انزال میں جو مادہ تولید خارج ہوتے ہیں اسے (sperm) کہا جاتا ہے۔ اس میں چار سے چھ ارب حونیات منی پائے جاتے ہیں او ر عورتوں میں استقرار حمل کے لئے صرف ایک سپرم کی ضرورت ہوتی ہے بعض اوقات جنسی غلط کاریوں کے بُرے اثرات کی وجہ سے حونیات منویہ کمزور یا کم ہو جاتے ہیں جس کی بنا پر حمل قرا ر نہیں پاتا او ر اولاد پیدا نہیں ہوتی بعض حضرات میں مردانہ طاقت تو موجود ہوتی ہے لیکن سپرم کمزور ہوتے ہیں بعض اوقات مردا نہ طاقت کمزو ر ہوتی ہے مگر سپرم طاقتور او ر مکمل ہوتے ہیں عورت میں بھی یہ نقص پایا جاتا ہے جیسا بچپن کی غلظ کاریوں کے علاوہ خصیوں کی کمزوری، آتشک ، سوزاک، سل و دق ، اور ریڈیم کی شعاعوں کے بُرے اثرات سے بھی یہ مرض ہو جاتا ہے بعض ایلو پیتھک ادویات او ر سٹیرائیڈز کے استعمال سے بھی سپرم ختم ہو جاتے ہیں یا ان کی تعدا د کم ہو جاتی ہے۔منی میں خون، پیپ، بیکٹیر یا کا اخراج بھی اولاد سے محرومی کا باعث بنتا ہے اس مر ض کا علاج مشکل ضرور ہے لیکن ناممکن نہیں ۔ طب یونانی میں ایسی ادویات موجو د ہیں جن سے ما دہ تولید گاڑھا ہو سکتا ہے خون او ر پیپ ختم ہو جاتی ہے سپرم کی مقدا ر بڑھ سکتی ہے اور مادہ منویہ میں اولاد پید ا کرنے والے حیوانیت اور ماد ہ تولید پہلے سے زیادہ طاقتور ہو جاتے ہیں۔


اینکر:۔ڈاکٹر صاحب impotency یعنی نا مردی کسے کہتے ہیں؟
ڈاکٹر:۔وہ جنسی امراض او ر عوارضات جس کا ذکر میں پہلے کر چکا ہو ں کسی نہ کسی سطح پر نامردی کی تعریف میں آ تے ہیں تاہم اگر قوت مجامعت کمزور ہو جائے عضو مخصوص میں مکمل خیزش انتشار نہ ہو اور مریض وظیفہ جنسی کو پورے طور پر سر انجام نہ دے سکے تو اس حالت کو جنسی کمزوری یا ضعف باہ کہتے ہیں لیکن یہ قوت بالکل ناقص ا ور باطل ہو جائے عضو مخصو ص میں کوئی خیزش نہ ہو تو جماع کی طرف رغبت نہ رہے طبیعت کو جذبہ شہوت سے نفرت ہو جائے اور باوجود کوشش کے جنسی فعل انجام نہ دیا جا سکے تو ا سے عنانت یا نامردی کہتے ہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب نامردی کتنے ا قسام کی ہوتیں ہیں جس میں مرد حضرات ملوث ہوتے ہیں ؟
ڈاکٹر:۔نامردی کو دو اقسام میں منقسم کیا جا سکتا ہے۔


1۔عضوی (organic):۔
functional and
psychological1فعلی ا ور ذہنی:۔ عضوی نا مردی بیرونی طور پر عضو مخصوص کی ساخت ا ور جنسی گلینڈز کی خرابی سے تعلق رکھتی ہے۔ فعلی اور ذہنی نامردی کے مختلف نفسیا تی اور دیگر اسباب ہیں نا مرد ی کی تمام اقسام کی تشخص کرنے کے بعد کو ا لیفائیڈ حکیموں اور ڈاکٹرز سے جنسی تعلیمات حاصل کرنی چاہیے ۔پروفیشنل طوائفوں سے جنسی تعلقات قائم کر نا اگر چہ خلاف وضع فطری فعل نہیں لیکن قانونی او ر شرعی حیثیت سے یہ نا جائز ہے علاوہ ازیں طوائف کا پیار او ر محبت ر وپے پیسے کے لئے ہوتا ہے لہٰذا قدرتی پیار او ر محبت کے فقدان کی وجہ سے وہ کسی بھی فر د کو جنسی طور پر مکمل آسودگی بہم نہیں پہنچا سکتی اس کے علاوہ طوائف کسی ایک فرد کی پابند نہیں ہوتی بلکہ طر ح طرح کے لوگ اس سے جنسی تعلقات قائم کرتے ہیں جن میں چھوتدا ر امراض کے مریض بھی ہو سکتے ہیں لہٰذا بازاری اور پروفیشیل عورتوں سے مختلف امراض مثلاً سوزاک، آتشک ، ایڈز و غیر ہ لاحق ہو سکتی ہیں۔ ماہواری کے دوران عورت کے پاس جانا کئی بیماریوں کو دعوت دیتا ہے ۔چونکہ طوائف کا تو کا روبار ہوتا ہے لہٰذا وہ یہ کبھی بھی نہیں بتاتی کہ وہ ما ہواری سے
ہے لہٰذا دوران ماہواری جنسی تعلقات قائم کرنے و الے افرا د اپنی جوانی کو روگ لگا لیتے ہیں او ر کئی امراض کا شکار ہو جاتے ہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب مادہ تولید کی کتنی بیماریا ں ہوتیں ہیں جس میں مر د حضرات ملوث ہوتے ہیں؟
ڈاکٹر:۔مادہ تولید کی تین اقسام کی ہوتیں ہیں۔


1۔منی میں سپرم کی کمی oligospermia:۔مردانہ بانجھ پن کی ایک وجہ منی سپرم کی تعدا د کا کم ہونا ہے۔ سپرم کی مناسب مقدار 200 ملین سے 600 ملین ہے۔ اگر سپرم کی مناسب تعداد 120 ملین سے کم ہو تو سپر م کی کمی کہا جائے گا۔ اس کی کمی کی کئی حیاتیاتی، ماحولیاتی وجوہات ہو سکتی ہیں۔ مثلاً کثرت مباشرت، منی کا کم پید ا ہونا، ان ٹیوبز میں نقص ہونا جو سپرم کو خصیوں سے عضوتنا سل کی طرف لے جاتی ہے ، خصیوں میں ا ینٹھن وغیرہ اس کے علاوہ ذہنی و جسمانی ، بے چینی، بے خوابی اور ہارمونز کے توازن میں بگاڑ ہونے سے بھی سپرم کی پیدائش کم ہوتی ہے۔
2۔منی میں سپرم کی غیر موجودگی azoospermia:۔منی میں سپرم کی بالکل غیر موجودگی azoospermia کہلاتا ہے اس بیماری میں منی میں سپرم بالکل پیدا ہی نہیں ہوتے ۔ منی میں سپرم بالکل پیدا نہ ہو نے کا سب سے بڑا سبب انفکیشن ہے۔ جس میں پیپ آنا ، خون کے سرخ ذرات کا آنا یا پھر بیکٹیر یا وغیرہ کی موجودگی ہے ۔azoospermiaکی دو اقسام ہیں۔
i۔obstrustcive azoospermia:۔ا گر خصیے سائز میں نارمل ہوں ا ور ہا رمون لیول بھی نارمل ہو تو خصیے اور عضو تناسل کے درمیان نالیاں بند ہونے کو obstrustcive azoospermiaکہتے ہیں۔
ii۔nonobostrictive azoospermia:۔اس بیماری میں منی میں سپرم کا پیدا نہ ہونا خصیوں کی وجہ سے ہوتا ہے۔ جس کی وجہ سے خصیوں میں نقص ہونا، اس کے علاو ہ خصیوں میں پیدائشی نقص ہونا، ہارمون لیول نارمل نہ ہونا، خصیوں کا انفیکشن او ر تیز بخار بھی اس کی وجہ بنتا ہے۔
3۔necrospermia:۔necrospermia بانجھ پن کی ایسی قسم ہے جس میں منی میں سپرم موجو د تو ہوتے ہیں لیکن وہ زندہ نہیں ہوتے ا ور مردہ ہونے کے باعث وہ اس قابل نہیں رہتے کہ حمل قرار پا نے کا باعث بن سکیں۔ اگر منی میں 40 فیصد سپرم مرد ہ حالت میں ہوں تو یہ بیماری necrospermia کہلائے گی۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب سرعت انزال کے بارے میں ہمارے ناظرین کو بتا دیں کہ یہ کیا ہو تا ہے؟
ڈاکٹر:۔جنسی امراض میں مرد کے لئے سب سے زیاد ہ شرمناک او ر خفت مرض سرعت ا نزال ہے جس کے مکمل علاج کے بغیر رشتہ ازواج کا قائم رہنا دشوار ہو جاتا ہے اپنی بیوی سے شرم اور ندامت کی و جہ سے مریض زندگی پر موت کو ترجیح دینے لگتا ہے۔بوقت جماع (جنسی ملاپ ) فوری طور پر (انزال) منی کا اخراج سرعت انزال کہلاتا ہے جب یہ مرض شدت اختیار کرتا ہے تو دخول سے قبل ہی انزا ل ہو جاتا ہے بعد ازاں حالت یہ ہو جا تی ہے کہ ادھر جنسی ملاپ کا خیال آیا ا دھر ادھوری سی شہوت ہو کر فور اً مادہ تولید خارج ہو گیا او ر
جوش ٹھنڈ ا پڑ جاتا ہے بعض مریضوں کے ایسے حالات تو اس قدر بدتر ہو جاتے ہیں کہ محض شہوانی تصور یا کوئی خوبصورت لڑکی دیکھنے یا عضو مخصوص کے کسی ملا ئم کپڑ ے سے چھو جانے سے خیزش ہو کر یا خیزش ہوئے بغیر معمولی سا دغہ غہ محسوس ہو کر مادہ تولید خارج ہو جاتا ہے۔


اینکر:۔ڈاکٹر صاحب لوگوں کے لئے جنسی راہنمائی کیوں اتنی ضرور ی ہے؟
ڈاکٹر:۔بہت کم نوجوان ایسے ہیں جنہیں اپنی جوانی پر ناز ہو اور و ہ کہہ سکیں کہ ہم نے اپنے ہاتھوں اپنی جوانی کو روگ نہیں لگایا یا پھر دیگر ذ رائع سے جنسی تسکین حاصل کرنے کی کوشش نہیں کی ۔ آج کے نوجوا ن انٹرنیٹ، موبائل ، فحش فلموں و تصاویر ، شہوانی جذبات بھڑ کانے والے ناول اور یورپی طرز معاشرت اپنانے کی وجہ سے sex desire سے مکمل بالغ ہونے سے قبل ہی جنسی فعل کی خواہش کا شکار ہو جاتے ہیں او ر اس خواہش کی تکمیل کے لئے زیادہ تر نوجوا ن ہینڈ پریکٹس mastrubation کی عادت میں مبتلا ہو جاتے ہیں یا sexualty homo اپنا لیتے ہیں بیشتر ہم جنسیت بن جاتے ہیں ۔بھوک پیاس جیسی فطری خواہشو ں کی طر ح جنسی تسکین کی خواہش بھی ایک فطری خواہش ہے جو کہ قدرت کی طرف سے انسا ن کو طبی طور پر عطا کی گئی ہے اس تسکین ، کشش و محبت اور خواہش کا اعلیٰ مقصد اور اہم غرض بقائے نسل انسان ہے لیکن انسان چونکہ فطری طور پر حریص واقع ہو ا ہے اس لئے وہ اس قوت کو غلط کاموں میں استعمال کر کے اپنے آپ کو اس نعمت خد اوندی سے محروم کر لیتا ہے۔ اس لئے جنسی راہنما ئی بہت ضروری ہے ۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب مردانہ بانجھ پن کے اسباب تو ہمارے ناظرین کو بتا دیں؟
ڈاکٹر: مردانہ بانجھ پن جنسی قو ت کی خرابی کا نام ہے ا ور جنسی قوت تین قوتوں کا مجموعہ ہے ان تین قوتوں میں
سے جب کسی قوت یا فعل میں خرا بی ہو گی تو بانجھ پن پیدا ہو سکتا ہے ہر وقت کی غیر طبی حالت میں بانجھ پن کی نوعیت بھی مختلف ہوتیں ہیں ۔
1۔خواہش ، جذبے کا نہ ہونا۔ خواہش ، جذبے او ر کشش کا تعلق اعصاب سے ہے۔ اس جذبے میں کمی بیشی کے لئے
اعصاب کو دیکھا جا ئے گا۔ 2۔نطفے کی منتقلی کے لئے عضو مخصو ص کی کارکردگی کو پیش نظر رکھا جا ئے گا۔ کیونکہ نطفہ اور خواہش دونوں موجود ہوں لیکن متعلقہ مقام تک پہنچا نے کے لئے عضو میں ہی جان نہ ہو تو ایسے بانجھ پن کی نوعیت اول سے مختلف ہو گی۔ 3۔نطفہ خصیوں testicles کے تحت تیار ہو تا ہے۔ اس میں نقص واقع ہو تو غدی با نجھ پن تصور ہو گا۔ یہ تینو ں مفر د اعضاء اپنی حالت سے ایک دوسرے کو متاثر (طاقتور، کمزور اور سست) کرتے ہیں۔ جب ا ن کے افعال میں توازن ہو گا تو جنسی قوت بھی درست ہو گی۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب دوران علاج مریض کو کن کن چیزو ں سے پرہیز کرنا چاہیے او ر کون کون سی چیزوں کا استعمال کرنا مریض کے لئے مفید ہے؟

ڈاکٹر:۔۔ پرہیز علاج سے بہتر ہے۔
پرہیز:۔آلو مٹر ، گوبھی ، بیگن ، پالک ، چاول، بڑا گوشت، پکوڑے سموسے، اچار چٹنی تمام گرم بادی جٹ پٹی تیز مصالحے جات تمام کولڈ ڈرنکس ، ٹھنڈی اشیاء ، شیور مرغی سے مکمل طور پر پرہیز کرنا چاہیے۔
استعمال کرنے والی ا شیاء:۔کدو، ٹنڈے ، توری، مولی ، گاجر، شلجم ، چھوٹا گوشت، دودھ دہی، تمام ڈرائی فروٹ ، شہد ، کھجور، کالے سفید چنے، دال ماش مچھلی دہی لیموں فریش فروٹ سیب، کینو، مالٹا، آم او ر کیلا وغیرہ استعمال کر سکتے ہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب جو مرد اس مرض میں مبتلا ہے اُن مردوں کے لئے آپ کے پاس کوئی تحفہ خاص موجود ہے جس کو استعمال کر کے وہ اس مرض سے بآسانی باہر نکل سکے؟
ڈاکٹر:۔ہمارے ادارے تاثیر دواخانہ کے مایہ ناز ڈاکٹرز، حکماء اور سائنسدانوں نے میری سر پرستی میں برس ہا برس کی تحقیقات اور بانجھ پن کے اصل اسباب اور وجو ہات کو مد نظر رکھ کر اپنی ریسرچ سے سپر موجن سپرم گرو پلس کورس کو متعارف کراویا ہے جو ہر طرح کے کیمیائی اجزاء سے پاک مکمل طو ر پر قدرتی د وا ہے اس کا کوئی بھی سائیڈ ایفیکٹ نہیں ہے یہ خالص جڑی بوٹیوں سے تیار شدہ ہے اور 100 فیصد نتائج کا حامل ہے ۔ تاثیر لیبارٹریز نے برسوں کی تحقیق کے بعد سپرم کی افرائش کے لئے ایسا کورس تیار کیا ہے جس کا نام سپرموجن سپرم گر و پلس کورس ہے ۔یہ کو رس
شعبہ ریسرچ نے دیسی جڑی بوٹیوں کی آمیزش کے ساتھ طب اسلامی کے اصولوں کے عین مطابق سائنٹیفک طریقوں پر تاثیر لیبارٹریز میں جدید آٹو میٹک مشینری کی مدد سے تیا ر کیا ہے۔ جس کے ا ستعمال سے ہر طرح کا انفکیشن ختم ہو جاتا ہے او ر منی میں جراثیم نسل پیدا ہو نے لگتے ہیں ۔ جس سے ,oligospermia, necrospermia azoospermia جیسی بیماری سے مکمل طور پر نجات مل
جاتی ہے۔ یہ مردوں کے جرثومہ حیات میں ہونے والی تبدیلیوں کے افرائشی ہارمون HGH کے سپرم کی سطح میں اضافہ کرتا ہے۔ بے اولاد افراد کے سپرم کم ہوں تو ان کے مادہ تولید میں سپرمز کو نارمل حالت میں لاتا ہے ۔مادہ تولید کی افزائش کو بڑھا کر سپرم کو اولاد کے قابل بناتا ہے۔ سپرم کی پیدائشی کمزوری اور کمی ایسی محرومی ہے جو ایک صحت مند آدمی کو بھی کھو کھلا بنا دیتی ہے ان دونوں صورتوں میں یعنی کرم منی کی کمزوری اور اس کے قدرتی تناسب کو درست کر کے ا س کے قوام کو ٹھیک کرتا ہے اس میں شامل نہایت ہی قیمتی اور نایاب جڑی بوٹیاں نہ صرف مادہ تولید کو پیدا کرنے اور اسے گا ڑھا کرنے میں موثر ہے بلکہ اس میں موجو د سپرم کی کمی کو بھی د ور کر تا ہے یہ کورس
ما دہ تولید اور سپرم سمیت تما م مردانہ امراض جو بانجھ پن کا سبب بنتے ہیں جیسے مادہ تولید میں جراثیم یعنی سپرم کا نہ ہونا، خصیوں کا نا کارہ ہونا، خصیوں اور عضو تناسل کے درمیان نالیوں کا بند ہونا، خصیوں میں انفیکشن ہونا وغیر ہ کو نہ صرف ختم کرتا ہے بلکہ ان کو دوبار ہ پید ا بھی نہیں ہونے دیتا۔ سپرموجن سپرم گرو پلس کورس 40 یوم کے دورانیہ پر
مشتمل ہے سپر موجن سپر م گر و پلس کورس کی مکمل قیمت پاکستانی 16800 روپے ہے کیونکہ اس سپر موجن سپرم گرو پلس کورس کا شمار ہمارے پشت در پشت صد ی نسخہ جات میں ہوتا ہے اس لئے یہ کورس صرف ہمارے ادارے تاثیر دواخانے پر ہی د ستیا ب ہے مرد حضرات کو میں بتاتا چلوں کہ وہ پاکستان میں ہیں یا دنیا کے کسی بھی ملک میں ہیں آپ بذریعہ آڈر سپرموجن سپرم گرو پلس منگوا سکتے ہیں۔ پاکستان میں ہم بذریعہ V.P پارسل بھیجتے ہیں اس کے علاو ہ آپ خود ہمارے کلینک پر تشریف لا کر خو د طلب کر سکتے ہیں۔پاکستان سے با ہر دنیا کہ ہر ملک میں ہم بذریعہ ائیر شیب بھیجتے ہیں جہاں ایک خا ص بات میں بتاتا چلوں ہم پوری دنیا میں ہوم ڈیلوری سروس فراہم کرتے ہیں مطلوبہ کورس آپ کے گھر تک پہنچایا جا سکتا ہے۔ نوٹ ( کورس کے بہترین نتائج کے لئے 4 سے 6 ما ہ مسلسل استعمال کریں)
ناظرین اگر آپ بھی سپرموجن سپرم گرو پلس کور س خریدنا چاہتے ہیں تو د یر مت کیجئے بلکہ ابھی کال کر کے اپنا آرڈر بک کروائیں۔ ہمارے ہیلپ لائن نمبرز پر رابطہ کریں۔
ڈاکٹر صاحب سے براہ راست مشورے کے لئے ا ن نمبر ز پر رابطہ:+92334-9552889
+92321-9552889
+92300-9552889
آپ کی راہنمائی کے لئے میل او ر فی

میل میڈیکل آ فیسرز ہمہ وقت موجود ہیں جن سے آپ اپنی بیماری او ر ہر قسم کے مرض کے بارے میں راہنمائی حاصل کر سکتے ہیں جو آپ کو ہر قسم کی راہنمائی فراہم کرئے گے ( کلینک ٹائم صبح 9بجے سے لے رات8بجے تک)
میڈیکل آفیسر نمبر1: +92333-5501390

زعفرانی سپرم گرو کورس

اینکر:۔ اسلام و علیکم ۔۔۔ ناظرین ۔۔ امید ہے آ پ سب خیریت سے ہوں گے۔ ناظر ین آ ج ہم نے اپنے پروگرام میں جس شخصیت کو دعوت دی ہے وہ ملک پاکستا ن کے نامور اور بے اولاد ی کے مشہور روحانی معالج جو کسی تعارف کے محتاج نہیں جناب حکیم و ڈاکٹر طار ق محمود تاثیر آج ہم ڈاکٹر صاحب سے جس کورس کے بارے میں پوچھے گے اس کا نام زعفرانی سپرم گرو کورس ہے یہ اُن مردو ں کے لئے تحفہ خاص ہے جو مرد حضرات اولاد کی نعمت سے محر و م ہوتے ہیں یہ کورس مردو ں میں سپرم کی تعد ا د کو بڑھتا ہے اور مادہ تولید کو گاڑھا کرتا ہے جس سے سپرم حمل ٹھہرانے کے قابل بن جا تے ہیں۔ ڈاکٹر صاحب آپ کو بتائیں گے کہ مردا نہ بانجھ ہوتا کیا ہے اس کی وجوہات ، علامات او ر علاج اس کے علاوہ اور بہت سی باتیں جس پر عمل کر کے آپ مر ض سے نجات حاصل کر سکتے ہیں۔ جیسا کہ بہت سے لوگ جانتے ہیں کہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر اپنے بہترین ہربل طریقہ علاج کی وجہ سے پوری دنیا میں شہرت یافتہ ہیں تو آئیے ڈاکٹر صاحب سے ملتے ہیں۔
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب اسلام و علیکم۔
ڈاکٹر:۔ وعلیکم اسلام۔۔
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب بانجھ پن کسے کہتے ہیں اور بانجھ پن کی کتنی اقسام ہوتیں ہیں؟


ڈاکٹر:۔آا پ کی چھوٹی سی کمزور ی زندگی کی بڑی محرومی کا سبب بن سکتی ہے۔ ایک سال تک میاں بیوی آپس میں ملاپ کریں اور کوشش کرنے کے باو جود اُن کے درمیان حمل قرار نہ پایا جائے تو اس صورت کو ہم بانجھ پن کہتے ہیں۔ بانجھ پن کی تین اقسام ہوتیں ہیں۔
1۔ منی میں سپر م کی کمی oligospermia:۔ مردانہ بانجھ پن کی ایک وجہ منی میں سپرم کی تعدا د کا کم ہونا ہے۔ سپرم کی مناسب مقدار 200 ملین سے 600 ملین ہے۔ اگر سپرم کی مناسب تعداد 120 ملین سے کم ہو تو سپرم کی کمی کہا جائے گا۔ اس کی کمی کی کئی حیاتیاتی و ماحولیاتی وجو ہات ہو سکتی ہیں۔ مثلاً کثرت مباشرت، منی کا کم ہونا، ان ٹیوبز میں نقص ہونا جو سپرم کو خصیو ں سے عضو تنا سل کی طرف لے جاتی ہیں۔ خصیوں میں اینٹھن وغیرہ اس کے علاوہ ذہنی و جسما نی بے چینی، بے خوابی او ر ہار مونز کے توازن میں بگاڑ ہونے سے بھی سپرم کی پیدائش کم ہوتی ہے۔
2۔ منی میں سپرم کی غیر موجود گی azoospermia:۔ منی میں سپرم کی بالکل غیر موجودگی azoospermia کہلاتی ہے۔ اس بیمار ی میں منی میں سپر م بالکل پیدا ہی نہیں ہو تے ۔ منی میں سپرم بالکل پیدا نہ ہونے کا سب سے بڑا سبب انفیکشن ہے جس میں پیپ آنا، خون کے سر خ ذرات کا آنا یا پھر بیکٹیریا وغیرہ کی موجودگی ہے۔ azoospermia کی دو اقسام ہیں۔
i۔obstrustcive azoospermia:۔ اگر خصیے سائز میں نارمل ہوں اور ہارمون لیول بھی نارمل ہو تو خصیے اور عضو تنا سل کے درمیان نالیاں بند ہونے کو obstrustcive azoospermia کہتے ہیں۔
ii۔nonobostrictive azoospermia:۔ اس بیماری میں منی میں سپرم کا پیدا نہ ہونا خصیوں کی وجہ سے ہوتا ہے۔ جس کی وجہ سے خصیوں میں نقص ہونا اس کے علاوہ خصیوں میں پیدائشی نقص ہونا، ہارمون لیول نارمل نہ ہونا، خصیوں کا انفیکشن او ر تیز بخار بھی اس کی وجہ بنتا ہے۔


3۔necrospermia:۔necrospermia بانجھ پن کی ایسی قسم ہے جس میں منی میں سپرم موجو د تو ہوتے ہیں لیکن وہ زند ہ نہیں ہوتے اور مرد ہ ہونے کے باعث وہ اس قابل نہیں رہتے کہ حمل قرار پانے کا باعث بن سکیں۔ اگر منی میں 40فیصد سپرم مرد ہ حالت میں ہوں تو یہ بیماری necrospermia کہلائے گی۔
اینکر:۔ ڈ اکٹر صاحب مردانہ کمزوری او ر ضعف باہ کسے کہتے ہیں؟
ڈاکٹر:۔ مردا نہ کمزور ی و ضعف باہ کی اصلیت ، نامردی، ضعف باہ ان الفاظ میں وسیع معنی موجود ہیں یعنی معمولی کمزور ی سے لے کر نامردی تک کے تمام درجات اس میں شامل ہیں مگر اس میں تین صورتیں اہمیت کی حامل ہیں۔
1۔ایسی کمزوری کہ مباشرت و مواصلت اور جماع کی قابلیت ختم ہو جا ئے ۔
2۔مباشرت کا شوق یا خواہش کا ختم ہونا یا کم ہو جانا۔
3۔قوت تولید کا نقص یعنی ا ولاد پیدا کر نے کے قابل نہ ہونا اس میں مباشرت کی قابلیت تو موجود ہوتی ہے مگر اولاد پیدا کرنے کی قو ت نہیں ہو تی ا ن تینو ں صورتوں کو بھی ضعف باہ میں شمار کیا جاتا ہے۔
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب جو مرد حضرا ت اس بانجھ پن کے مرض میں مبتلا ہوتے ہیں اُن کے اند ر کو ن سے اسباب پائے جاتے ہیں جس سے پتہ چلتا ہے کہ مریض اس مر ض میں مبتلا ہے؟
ڈاکٹر:۔ یہ مرض مختلف اسباب کی وجہ سے پید ا ہوتے ہیں۔ کثر ت مباشرت، جلق، اغلام، کثرت احتلام ، کثرت جریان، منی، عضو تناسل کے ذاتی نقص ، خصیہ کا ورم، ماد ہ منویہ کی کمی ، شدید جسمانی مشقت ، موٹاپا، نشہ آو ر چیزوں کا کثرت استعمال، ذہنی و نفسیاتی اثرات، خصیوں کے سائز میں فرق آنا ، مادہ منویہ کا پتلا ہونا، شوق مباشرت کا ختم ہو جانا ، وغیرہ اس کے اسباب میں شامل ہیں۔
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب جو مریض اس مرض میں مبتلا ہوتے ہیں اُن مریضوں میں کون کون سی علامات پائی جاتی ہیں؟
ڈاکٹر:۔ عضو مخصوص کا ڈھیلا ہونا ، جس سے قوت مباشر ت ناقص یا بالکل ختم ہو جاتی ہے کبھی معمولی سا تنا ؤ آتا ہے تو کبھی تناؤ بالکل نہیں آتا کبھی مباشر ت کی طرف رغبت ہی نہیں ہوتی مریض سست کمزور پست ہمت ، ڈر بھوک اور اس میں چڑ چڑا پن آ جاتا ہے ، مردانہ بانجھ پن جنسی قوت کی خرابی کا نام ہے اور جنسی قوت تین قوتوں کا مجموعہ ہے ان تین قوتوں میں سے جب کسی قوت یا فعل میں خرابی ہو گی تو بانجھ پن پیدا ہو سکتا ہے ۔ خواہش و جذبے کا نہ ہونا۔ خواہش ، جذبے او ر کشش کا تعلق اعصاب سے ہے۔ اس جذبے میں کمی بیشی کے لئے اعصاب کو دیکھا جائے گا۔ نطفے کی منتقلی کے لئے عضو مخصوص کی کار کرد گی کو پیش نظر رکھا جائے گا۔ کیونکہ نطفہ اور خواہش دونوں موجو د ہو ں لیکن متعلقہ مقام تک پہنچانے کے لئے عضو میں ہی جان نہ ہو تو ا یسے بانجھ پن کی نوعیت او ل مختلف ہو گی۔ نطفہ خصیوں کے تحت تیار ہوتا ہے۔ اس میں نقص واقع ہو تو غدی بانجھ پن تصور ہو گا۔ یہ تینوں مفرد اعضاء اپنی حالت سے ایک دوسر ے کو متاثر (طاقتور، کمزور او ر سست) کرتے ہیں۔ جب ان کے افعال میں توا زن ہو گا جنسی قوت بھی درست ہو گی۔
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب دوران علاج کون کو ن سے چیزوں سے مریض کو پرہیز کرنا چاہیے اور کون سی اشیاء کا استعمال کر سکتے ہیں؟
ڈاکٹر:۔ پرہیز علاج سے بہتر ہے
پرہیز:۔ آلو مٹر، گوبھی، بیگن، پالک، چاول، بڑا گوشت ، پکوڑے سموسے، اچار چٹنی تمام گرم بادی چٹ پٹی تیز مصالحہ جات تمام کو لڈ ڈ رنکس ٹھنڈی اشیاء شیو ر مرغی۔
استعمال کرنے والی اشیاء:۔ کدو، ٹنڈے، توری، مولی، گاجر، شلجم، چھوٹا گوشت، دودھ ، دہی، تمام ڈرائی فروٹ، شہد ، کھجور، کالے اور سفید چنے د ال ماش، مچھلی دیسی لیموں فرائش ، فروٹ، سیب، کینو، مالٹا، آم اور کیلا وغیرہ استعمال کر سکتے ہیں۔
اینکر:۔ داکٹر صاحب جیسا کہ آپ بے اولادی کے مشہور و معروف روحانی معالج کا درجہ رکھتے ہیں اور اپنے قدرتی طریقہ علاج کی وجہ سے پوری دنیا میں مشہور و معروف شخصیت ہیں آج آپ ہمارے ناظرین کو بتائیں کہ کیا طب میں مردانہ بانجھ کا کوئی علاج موجود ہے؟ ا ور اگر علاج ہے تو وہ ہمارے ناظرین کو بتائیں تا کہ مردا نہ بانجھ پن کے شکار مرد و خواتین اس سے نجات پا کر اپنی دیرینہ خواہش یعنی اولاد کی نعمت سے مالا ما ل ہو سکیں۔


ڈاکٹر:۔ سب سے پہلے تو میں ناظرین کو یہ بتانا چاہتا ہوں کہ مردانہ بانجھ پن یعنی مردوں میں اولاد کا نہ ہونا ایک قابل علاج مرض ہے ا ور مردانہ بانجھ پن کے لئے طبی علاج یعنی ہربل طریقہ علاج ہی سب سے بہتر اور پُر اثر علاج ہے جو کہ بانجھ پن کا 100 فیصد خاتمہ کر کے اولاد کی نعمت سے محروم جوڑوں کو قابل اولاد بناتا ہے اور دوسری بات یہ کہ قدرتی (ہربل)ّ طریقہ علاج ہی ایسا علاج ہے جس کے رزلٹس مستقل ہوتے ہیں او ر اس کا کسی بھی قسم کا کوئی سائیڈ ایفیکیٹ بھی نہیں ہوتا۔
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب آپ کے پاس مردانہ بانجھ پن کا جو علاج ہے اس کے بارے میں ذرا تفصیل سے ہمارے ناظرین کو بتائیں تا کہ ایسے مرد حضرات جو کہ اولاد کی نعمت سے محروم ہیں اور طرح طرح کے علاج کروا کر بھی اولاد کی نعمت سے محرو م ہیں اور اب مایوس ہو چکے ہیں۔ و ہ تاثیر دواخانے پر تشریف لائیں اور آپ سے علاج کرو ا کر اپنی دیرا ینہ خواہش یعنی اولاد کی نعمت سے مالا مال ہوں سکے؟
ڈاکٹر: تاثیر دواخانے پر مردانہ بانجھ پن کے لئے مختلف قسم کے علاج موجود ہیں جو کہ ہمارے ادارے کے مستند ا و ر تجربہ کار ڈاکٹرز حکماء اور سائنسدانوں نے قدیم و جدید تحقیق کے نچوڑ سے اور بے اولادی کے اصل اسباب کو مدنظر ر کھ کر مختلف قسم کی قدرتی جڑی بوٹیوں او ر قیمتی مرکبات پر ریسرچ کر کے بے ا ولاد مرد حضرات کے لئے بانجھ پن کی تینوں اقسام یعنی۔۔azoospermia,oligospermia,necrospermiaکا مکمل قدرتی علاج دریافت کیا ہے ۔ بہت سے دوسرے حکیماء یا ڈاکٹرز بانجھ کے مریض میں مرض کی مکمل تشخص کیے بغیر اور بنا رپورٹس چیک کئے نسخہ مایوسی کی صورت میں ہوتا ہے ۔ الحمد ا للہ ہم مریض کا مکمل چیک اپ کرتے ہیں او ر مرض کی رپور ٹس دیکھ کر مرض کی اصل وجوہات معلوم کرتے ہیں جس کے بعد ہی بہترین نسخہ تجویز کیا جاتا ہے۔ اللہ کا شکر ہے کہ آج بے اولادی کے لئے بہترین مر کز سمجھا جانے والا ادارہ تاثیر دواخانہ پاکستان کا وہ واحدادارہ ہے جہاں سے سینکڑوں جوڑے اپنی مراد پوری کر چکے ہیں اور ناظرین اگر آپ ہماری ویب سائیٹ وزٹ کریں تو آپ کو یہاں پر مریضوں کا مکمل ڈیٹا ملے گا جس میں علاج کے لئے آنے والے مریضوں کے علاج سے پہلے سے لے کر علاج کے بعد تک کی مکمل رپورٹس موجود ہیں جن سے آپ کو ہمارے علاج کا اندازہ ہو گا کہ بے اولادی کے لئے ہمارا علاج ہی مریض کا پہلا انتخاب ہوتا ہے۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب جو مرد اس مرض میں مبتلا ہے اُن مردوں کے لئے آپ کے پاس کوئی تحفہ خاص موجود ہے جس کو استعمال کر کے وہ اس مرض سے بآسانی باہر نکل سکے؟
ڈاکٹر:۔ہمارے ادارے تاثیر دواخانہ کے مایہ ناز ڈاکٹرز، حکماء اور سائنسدانوں نے میری سر پرستی میں برس ہا برس کی تحقیقات اور بانجھ پن کے اصل اسباب اور وجو ہات کو مد نظر رکھ کر اپنی ریسرچ سے زعفرانی سپرم گرو کورس کو متعارف کراویاہے جو ہر طرح کے کیمیائی اجزاء سے پاک مکمل طور پر قدرتی دوا ہے اس کا کوئی بھی سائیڈ ایفیکٹ نہیں ہے یہ خالص جڑی بوٹیوں سے تیار شدہ ہے اور100فیصد نتائج کا حامل ہے ۔ تاثیر لیبارٹریز نے برسوں کی تحقیق کے بعد سپرم کی افرائش کے لئے ایسا کورس تیار کیا ہے جس کا نام زعفرانی سپرم گرو کورس ہے ۔ یہ کورس شعبہ ریسرچ نے دیسی جڑی بوٹیوں کی آمیزش کے ساتھ طب اسلامی کے اصولوں کے عین مطابق سائنٹیفک طریقوں پر تاثیر لیبارٹریز میں جدید آٹو میٹک مشینری کی مدد سے تیار کیا ہے۔ جس کے استعمال سے ہر طرح کا انفکیشن ختم ہو جاتا ہے اور منی میں جراثیم نسل پیدا ہونے لگتے ہیں ۔ جس سے,oligospermia, necrospermia azoospermiaجیسی بیماری سے مکمل طور پر نجات مل جاتی ہے۔ یہ مردوں کے جرثومہ حیات میں ہونے والی تبدیلیوں کے افرائشی ہارمون HGHکے سپرم کی سطح میں اضافہ کرتا ہے۔ بے اولاد افراد کے سپرم کم ہوں تو ان کے مادہ تولید میں سپرمز کو نارمل حالت میں لاتا ہے ۔مادہ تولید کی افزائش کو بڑھا کر سپرم کو اولاد کے قابل بناتا ہے۔ سپرم کی پیدائشی کمزوری اور کمی ایسی محرومی ہے جو ایک صحت مند آدمی کو بھی کھوکھلابنا دیتی ہے ان دونوں صورتوں میں یعنی کرم منی کی کمزوری اور اس کے قدرتی تناسب کو درست کر کے اس کے قوام کو ٹھیک کرتا ہے اس میں شامل نہایت ہی قیمتی اورنایاب جڑی بوٹیاں نہ صرف مادہ تولید کو پیدا کرنے اور اسے گاڑھا کرنے میں موثر ہے بلکہ اس میں موجود سپرم کی کمی کو بھی دور کرتا ہے یہ کورس مادہ تولیداور سپرم سمیت تما م مردانہ امراض جو بانجھ پن کا سبب بنتے ہیں جیسے مادہ تولید میں جراثیم یعنی سپرم کا نہ ہونا، خصیوں کا نا کارہ ہونا، خصیوں اور عضوتناسل کے درمیان نالیوں کا بند ہونا، خصیوں میں انفیکشن ہونا وغیرہ کو نہ صرف ختم کرتا ہے بلکہ ان کو دوبارہ پیدا بھی نہیں ہونے دیتا۔زعفرانی سپرم گرو کورس 40یوم کے دورانیہ پر مشتمل ہے زعفرانی سپرم گرو کورس کی مکمل قیمت پاکستانی 18000/-روپے ہے کیونکہ اس زعفرانی سپرم گرو کورس کا شمار ہمارے پست در پست صدی نسخہ جات میں ہوتا ہے اس لئے یہ کورس صرف ہمارے ادارے تاثیر دواخانے پر ہی د ستیا ب ہے مرد حضرات کو میں بتاتا چلو کہ وہ پاکستان میں ہے یا دنیا کے کسی بھی ملک میں ہے آپ بذریعہ آڈر زعفرانی سپرم گرو کورس مانگووا سکتے ہیں۔پاکستان میں ہم بذریعہ V.Pپررسل بھیجتے ہیں اس کے علاوہ آپ خود ہمارے کلینک پر تشریف لا کر خود طلب کر سکتے ہیں۔پاکستان سے باہر دنیا کہ ہر ملک میں ہم بذریعہ ائیر شیب بھیجتے ہیں جہاں ایک خاص بات میں بتاتا چلو ہم پوری دنیا میں ہوم ڈیلوری سروس فراہم کرتے ہیں مطلوبہ کورس آپ کے گھر تک پہنچایا جا سکتا ہے۔ نوٹ( کورس کے بہترین نتائج کے لئے 4سے6ماہ مسلسل استعمال کریں)تاثیر دواخانے پر ان تینوں حالتوں کا مکمل اور قدرتی طریقہ علاج ہے۔اگر آپ کسی بھی مرض میں مبتلا ہے بانجھ پن کی کسی بھی قسم میں مبتلا ہےazoospermia,oligospermia,necrospermiaتو آج ہی بے اولادی کے نامور اور مشہور روحانی معالج حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر سے رابطہ کریں جہاں پر سینکڑوں بے اولاد جوڑے اپنے آنگین میں خوشیاں بکھیر چکے ہے ۔
ناظرین اگر آپ بھی زعفرانی سپرم گرو کورس خریدنا چاہتے ہیں تو دیر مت کیجئے بلکہ ابھی کال کر کے اپنا آرڈر بک کروائیں۔ ہمارے ہیلپ لائن نمبرز یہ
ڈاکٹر صاحب سے براہ راست مشورے کے لئے ان نمبر ز پر رابطہ:+92334-9552889
+92321-9552889
+92300-9552889
آپ کی راہنمائی کے لئے میل اور فی میل میڈیکل آفیسرز ہمہ وقت موجود ہیں جن سے آپ اپنی بیماری اور ہر قسم کے مرض کے بارے میں راہنمائی حاصل کر سکتے ہیں جو آپ کو ہر قسم کی راہنمائی فراہم کرئے گے( کلینک ٹائم صبح 9بجے سے لے رات8بجے تک)
میڈیکل آفیسر نمبر1: +92333-5501390
میڈیکل آفیسر نمبر2:۔ +92323-5501390
میڈیکل آفیسرنمبر3: +92336-5777696
میڈیکل آفیسرنمبر4: +92336-5777697
فی میل (لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر1: +92331-5607654
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر2: +92332-5607654
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر3: +92332-5530536
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر4: +92315-5530536
کلینک (Reception landline) نمبرز:۔ +9251-5777696,+9251-5777697,+92515530536,+9251-5773239
نوٹ:۔ آپ اپنی بیماری کے متعلق مکمل معلومات کے ساتھ میل کریں ۔ آپ ہمارے ای میل taseerlabs@gmail.com،taseerdawakhana@gmail.comپر بھی آپ اپناآرڈر بک کروا سکتے ہیں۔
ہمارا ایڈریس ہے: تاثیر دواخانہ i-111:اقبال روڈ، نزد کمیٹی چوک، چٹیاں ہٹیاں، تاثیر چوک راولپنڈی۔مزید معلومات کے لئے وزٹکیجئے ہماری ویب سائیٹ www.taseerlabs.com,dawakhanataseer.com۔
اینکر:۔بہت بہت شکریہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر صاحب آپ نے ہمارے ناظرین کو زعفرانی سپرم گرو کورس کے بارے میں بہترین راہنمائی کی امید ہے کہ ناظرین اس سے بہت زیادہ فائدہ اُٹھائیں گے اور آپ کو اپنی دعاؤں میں یاد رکھیں گے۔ ناظرین۔۔۔۔ یہ تھے بے اولادی کے مشہور روحانی معالج حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر جو کہ ہر قسم کے مردانہ و زنانہ امراض کے ماہر ہیں۔ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود
تاثیر نے آج مردانہ بانجھ پن سے متعلق ہم سب کی بہترین راہنمائی کی۔ امید ہے آپ ضرور ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتوں پر عمل کر کے مردانہ بانجھ پن سے چھٹکارا حاصل کر سکیں گے اور ایسے افراد تک ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتیں پہنچائیں گے جو کہ اولاد کی نعمت سے محروم ہیں تا کہ وہ جلد از جلد حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر سے اپنا علاج کروا کر اپنے آنگین میں خوشیاں بکھیر سکیں۔۔۔۔ اپنا خیال رکھئے گا۔۔۔ اللہ حافظ۔۔

 مرواریدی سپرم گرو کورس

اینکر:۔اسلام و علیکم۔۔ ناظرین ۔۔امید ہے آپ سب خیریت سے ہوں گے۔ ناظرین آج ہم نے اپنے پروگرام میں جس شخصیت کو دعوت دی ہے وہ ملک پاکستان کے نامور اور بے اولادی کے مشہور روحانی معالج جو کسی تعارف کے کے محتاج نہیں جناب حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر آج ہم ڈاکٹر صاحب سے جس کورس کے بارے میں پوچھے گے وہ زعفرانی مرواریدی سپرم گرو کورس ہے جس کو استعمال کر کے مرد بانجھ پن سے نجات حاصل کر سکتے ہیں وہ بھی کسی سائیڈ ایفیکٹ کے بغیر اس کے علاوہ ڈاکٹر صاحب آپ کو بتائیں گے کہ مردانہ بانجھ کیا ہے؟اس کی وجوہات ، علامات اور علاج اس کے علاوہ اور بہت سی باتیں جن سے مردانہ بانجھ پن سے بچا جا سکتا ہے۔ جیسا کہ بہت سے لوگ جانتے ہیں کہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر اپنے بہترین ہربل طریقہ علاج کی وجہ سے پوری دنیا میں شہرت
یافتہ ہیں۔ تو آئیے۔ ڈاکٹر صاحب سے ملتے ہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب اسلام و علیکم۔۔
ڈاکٹر:۔وعلیکم اسلام
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب مردانہ بانجھ پن کسے کہتے ہیں؟
ڈاکٹر:۔بچہ پیدا کرنے کی صلاحیت میں کمی یا بچہ پیدا کرنے کی صلاحیت کا نہ ہونا، بانجھ پن کی تعریف اس طرح کی جاتی ہے کہ1سال کے عرصے تک نارمل مباشرت ہوتے رہنے کے باوجود اور مائع حمل ادویات استعمال کئے بغیر حمل قرار نہ پانا ہے۔ بانجھ پن کا شکار مر د بھی ہو سکتا ہے اور عورت بھی اس مرض میں مبتلا ہو سکتی ہے ۔بانجھ پن ابتدائی اور ثانوی دو طرح کا ہوتا ہے ۔primary infertilityسے مراد وہ مریض ہیں جن میں پہلے کبھی حمل نہیں ہوا اور ثانوی بانجھ پن secondary infertilityسے مراد وہ مریض جن کے ہاں پہلے حمل واقع ہو چکا ہو جبکہ اس ایک اور اصطلاح سٹرلٹی سے مراد بچہ پیدا کرنے کی صلاحیت کا مرد یا عورت میں مکمل طور پر ختم ہو جانا ہے ،ماضی میں بانجھ پن کے شکار جوڑوں میں بچہ پیدا ہونے کی صلاحیت کم ہوتی تھی مگر آج جدید دور میں مناسب تشخص اور علاج سے85فیصد جوڑے بچہ پیدا ہونے کی اُمید کر سکتے ہیں ۔بانجھ پن میں مبتلا جوڑوں کو بہت زیادہ پریشانی اور دباؤ کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ عورت کے لئے تو بانجھ گالی بن جاتی ہے ۔ایسے جوڑے جن کے ہاں بچہ نہ ہوا ہو سارے کا سارا قصورعورت کا ہی بن جاتا ہے اور بچہ پیدا نہ کرنے پر طعنے ملتے رہتے ہیں اور لعنت ملامت ہوتی رہتی ہے ۔حالانکہ بانجھ پن کا شکار مرد بھی ہو سکتے ہیں ۔ بانجھ پن کی40فیصد وجوہات مردوں میں پائی جاتی ہیں اور آج کل بہت جلد اس کی تشخص ہو سکتی ہے بانجھ پن کا شکار کون ہے مرد یا عورت ۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب حمل کے لئے کیا شرائط ہوتیں ہیں جس پر عمل کر کے آسانی سے حمل ٹھہر جاتا ہے؟
ڈاکٹر:۔مرد اور عورت دونوں کا تندرست ہونا بہت ضروری ہے۔ مرد کو سرعت انزال اور ضعف باہ کا مریض نہیں ہونا چاہیے ۔ مرد کی طرف سے اس کے مادہ منویہ نارمل اور مناسب جرثومہ منویہ پیدا ہونے کی ضرورت ہوتی ہے سپرم کی صورت حال کچھ اس طرح سے ہونی چاہیے کہ کم از کم 72گھنٹے کے پرہیز کے بعد مرد میں (حاصل ہونے والے )مادہ منویہ کا تجزیہ کرنے یہ مادہ منویہ کی مقدار1.5ملی لیٹر سے5ملی لیٹر تک پیدا ہوتی ہے۔ ایک ملی لیٹر مادہ منویہ میں20ملین یا اس سے زائد سپرم50سے60فیصد تک حرکت کرنے والے(motile)اور60فیصد سے زائد نارمل شکل و صورت والے سپرم ہو نے چائیں مرد کو سپرم کی تعداد میں کمی oligospermiaیعنی سپرم کی تعداد کا ایک ملی لیٹر میں 20ملین سے کم ہونا یا مادہ منویہ میں سپرم کا موجود نہ ہوناazoospermiaکا مریض نہیں ہونا چاہیے ۔

اینکر:۔مردوں میں بانجھ پن کے اسباب کون کون سے ہوتے ہیں؟
ڈاکٹر:۔مردوں میں تولید مادہ منویہ کے مسائل40فیصد سے زائد بانجھ پن کی وجوہات کا سبب بنتے ہیں۔سپرمیٹوجینیسز سپرم بننے یا سپرم کی نشوونما کو کہتے ہیں ۔ عورتوں کے بیضہovumسے بالکل مختلف جو کہ ہر ماہ عورتوں میں وقفے سے اووریز سے خارج ہوتا رہتا ہے ۔سپرم خصیوں کی بشرہ جرثومہ سے لگاتار تیار ہوتے رہتے ہیں جرمینل ایبی تھیلیل سے سپرم اغدید یوس میں خارج کر دئیے جاتے ہیں جہاں پرانزال سے پہلے سپرم میں میجوریشن ہوتی ہے۔ سپرم کی نسل تیار ہونے میں تقریباً 73دن لگتے ہیں اس لئے سپرم کی ابنارمل تعداد واقعات کا ریفیکشن ہوتی ہے۔ جو سپرم اکٹھا کرنے سے پہلے 73دن میں واقع ہوتے ہوں سپرم کی پیداوار میں تبدیلی کا مشاہدہ کر نے کے لئے کم از کم 73دن کی ضرورت ہوتی ہے۔ سپرم کی پیداوار thermoragulatedہے یعنی حرارت سے کنٹرول ہوتی ہے ۔ خصیوں کے اندر حرارت خصیوں کی تھیلی کے پھیلنے اور سکڑنے سے کنٹرول ہوتی ہے ۔ سپرم کی پیدائش تقریباً 10Fپر ہوتی ہے خصیوں کے لئے بیرونی حرارتی صدمہ سپرم کی پیدائش میں کمی کا سبب بن سکتا ہے مثلاً خصیوں کو پہنچنے والے صدمے ،انفکشن ورم خصیہ ، کن پیٹرے یا پیدائشی طور پر خصیوں کا پیٹ میں رہ جانا، ہارمون کے توازن میں خرابی ،تیز بخار ، کوکین ، بھنگ، الکوحل کا استعمال وغیرہ ،وزن بہت زیادہ ہونا یا کم ہونا،مردوں میں منی میں گرمی و تیزی کے نتیجے میں منی کی رنگت زرد مقدار کم اور بو بہت بری ہوتی ہے اس طرح اگر منی میں برودت کی زیادتی ہے تو منی کا قوام پتلا اور اس کی مقدار بہت زیادہ ہو گئی ۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب مردانہ بانجھ پن کے لاحق ہونے میں کون کون سے عوامل شامل ہوتے ہیں؟
ڈاکٹر:۔ناظرین مردانہ بانجھ پن کے لاحق میں بہت سے عوامل ہوتے ہیں جس کی وجہ سے یہ ہولناک مرض پیدا ہوتا ہے۔
اعصابی تحریک اور جنسی قوت:۔ دماغ و اعصاب احساسات کا مرکز ہیں جو اندرونی جسم اور بیرونی ماحول میں ہونے والی تبدیلیوں اور محرکات کا احساس کرنے اور حالات کے مطابق عضلات کو حکم رسائی کر کے پسندیدگی اور ناپسندیدگی کو حاصل کرتے ہیں۔ہضم چہارم کے فضلے کی جب خون میں بہتات ہوتی ہے تو خصیے خون سے اپنی ساخت کی منی علیحدہ و جمع کر دیتے ہیں ۔ اس دباؤ کو احساسات ایک خاص لذت کی صورت میں محسوس کرتے ہیں۔ لذت کی انتہائی صورت اخراج کے وقت حاصل ہوتی ہے۔ چنانچہ اس دباؤ اور حصول سے نجات کے لئے جنسی اعضاء اعصاب کو حکم دیتے ہیں۔ حکم کا طریقہ یہ ہے کہ اس طرف دوران خون کا رجوع ہو کر عضو مخصوص جس کا زیادہ تر حصہ عضلاتی انسحہ کا بنا ہوا ہے وہ تناؤ میں آ جاتا ہے۔ پھر اس کی حرکات اور محرکات کے نتیجے میں پیدا ہونے والی حرارت کے اثر سے خصیے اور منی خارج ہوتی ہے اخراج منی اور جماع کا یہ فطری طریقہ ہے اور یہ اسی وقت ممکن ہے جب تینوں مفرد اعضاء توازن و صحت کی حالت میں ہوں۔
عضلاتی تحریک اور جنسی بیماری:۔جسم انسانی میں ارادی اور غیر ارادی حرکات کے ذمہ دار عضلات فطری صورت میں مضر اثرات سے بچنے کے لئے اور مرطوبات اور مطلوبات کے حصول کے لئے اعصاب ایک ترتیب و سلیقے سے کام کرتے ہیں لیکن انتہائی موافق حالات یا تیزی میں آ جاتے ہیں۔اسے ہم عضلاتی تحریک کہتے ہیں۔ ہر تحریک میں درجہ بہ درجہ جسم کے اندر تبدیلیوں میں اضافہ ہوتا رہتا ہے ۔غیر طبی تحریک ہو جائے تو ایک حد تک دماغ کے کنٹرول سے نکل کر جسم اور جنسی قوت پر اثرات مرتب کرتے ہیں۔دماغ کی صالح رطوبات بوجہ تحلیل فنا ہوتی رہتی ہیں۔ غدود خصیے تسکین کی وجہ سے اپنا کام روک دیتے ہیں یا کم کر دیتے ہیں۔
غدی بانجھ پن اور جنسی علامات:۔افزائش نسل کے لئے نطفہsemenخصیوںtesticlesمیں تیار ہوتا ہے۔ خصیوں مین غدود چھوٹے چھوٹے اجزاء میں تقسیم ہو جاتے ہیں۔ ہر نطفے میں تین سو کے قریب لابیول پائے جاتے ہیں۔انکے اندر سے باریک خمدار نالیاں بن کر نکلتے ہیں۔ خمدار نالیاں در اصل منی کی نالیاں ہیں ان کے منی خون سے علیحدہ ہوتی ہے۔خم اس لئے ہے کہ فاصلہ زیادہ ہو جائے اور منی ٹھر کر مطلوبہ حرارت جذب کر کے پختہ ہو جائے۔ منی دو تھیلیوں جو تقریباً5سینٹی میٹر لمبی ہوتی ہیں۔ مثانے کے پیچھے پائی جاتی ہیں اور اس میں جمع ہوتی رہتی ہے۔ ٹیوبیولز میں پختگی کے بعد سپرم کی پیدائش ہوتی ہے جو منی کے ساتھ خارج ہوتے ہیں۔
سیمن semenکے امراض:۔سمین کے امراض جاننے سے پہلے مختصر طور پر جاننا ضروری ہے کہ یہ کہاں پیدا ہوتے ہیں یہ کتنی دیر میں جوان ہوتے ہیں یہ محرک اور زندہ کس رطوبت میں رہتے ہیں ان کی اقسام کتنی ہیں ان کا مزاج کیا ہے ان کی مقدار کتنی ہے؟ اور یہ کتنے فیصد ہوں تو اپنا فعل سر انجام دیتے ہیں کرم منی بلوغت میںF.S.Hاور ٹیسٹو سیڑن کے زیر اثر سمینی
فیرس ٹیوبز کے خلیوں میں پیدا ہونا شروع ہو جاتے ہیں یعنی کرم منی sperm،خصیتینtesticlesمیں تیار ہوتے ہیں۔جبکہ باقی رطوبات سمینل وہیکل اور پیراسٹیٹ میں بنتی ہیں اس لیئے یمنل وہیکل سے خارج ہونے والی لیسدار رطوبت کے اندر سپرم متحرک زندہ اور صحت مند رہتے ہیں۔ اگر منی خارج نہ ہو تو سپرم کی شکل و حالت بن جاتی ہے سمین میں خرابی ہونا پیچیدہ و خطرناک بیماری یا زندگی کے خطرے کی پہلی علامت ہو سکتی ہے۔ جیسےtestes cancerخصیوں کا کینسرکہتے ہیں۔
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب دوران علاج مریض کو کن کن چیزوں سے پرہیز کرنا چاہیے اور کون سی ایسی اشیاء ہے جس کا استعمال کرنا
مریض کے لئے مفید ہے؟
ڈاکٹر:۔پرہیز علاج سے بہتر ہے۔
پرہیز:۔آلو مٹر ، گوبھی ، بیگن، پالک، چاول، بڑا گوشت ، پکوڑے سموسے ، اچار چٹنی تمام گرم بادی چٹ پٹی تیز مصالحے جات تمام کولڈ ڈرنکس ، ٹھنڈی اشیاء، شیور مرغی۔
استعمال کرنے والی اشیاء:۔کدو، ٹنڈے، توری، مولی ، گاجر، شلجم، چھوٹا گوشت، دودھ، دہی تمام ڈرائی فروٹ، شہد کھجور کالے اور سفید چنے ،دال ماش، مچھلی دیسی لیموں فروٹ میں سیب ، کینو، مالٹا، آم اور کیلا وغیرہ استعمال کر سکتے ہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب جو مرد اس مرض میں مبتلا ہے اُن مردوں کے لئے آپ کے پاس کوئی تحفہ خاص موجود ہے جس کو استعمال کر کے وہ اس مرض سے بآسانی باہر نکل سکے؟
ڈاکٹر:۔ہمارے ادارے تاثیر دواخانہ کے مایہ ناز ڈاکٹرز، حکماء اور سائنسدانوں نے میری سر پرستی میں برس ہا برس کی تحقیقات اور بانجھ پن کے اصل اسباب اور وجو ہات کو مد نظر رکھ کر اپنی ریسرچ سے زعفرانی مرواریدی سپرم گرو کورس کو متعارف کراویاہے جو ہر طرح کے کیمیائی اجزاء سے پاک مکمل طور پر قدرتی دوا ہے اس کا کوئی بھی سائیڈ ایفیکٹ نہیں ہے یہ خالص جڑی بوٹیوں سے تیار شدہ ہے اور100فیصد نتائج کا حامل ہے ۔ تاثیر لیبارٹریز نے برسوں کی تحقیق کے بعد سپرم کی افرائش کے لئے ایسا کورس تیار کیا ہے جس کا نام زعفرانی مرواریدی سپرم گرو کورس ہے ۔ یہ کورس شعبہ ریسرچ نے دیسی جڑی بوٹیوں کی آمیزش کے ساتھ طب اسلامی کے اصولوں کے عین مطابق سائنٹیفک طریقوں پر تاثیر لیبارٹریز میں جدید آٹو میٹک مشینری کی مدد سے تیار کیا ہے۔ جس کے استعمال سے ہر طرح کا انفکیشن ختم ہو جاتا ہے اور منی میں جراثیم نسل پیدا ہونے لگتے ہیں ۔ جس سے,oligospermia, necrospermia azoospermiaجیسی بیماری سے مکمل طور پر نجات مل جاتی ہے۔ یہ مردوں کے جرثومہ حیات میں ہونے والی تبدیلیوں کے افرائشی ہارمون HGHکے سپرم کی سطح میں اضافہ کرتا ہے۔ بے اولاد افراد کے سپرم ہوں تو ان کے مادہ تولید میں سپرمز کو نارمل حالت میں لاتا ہے ۔مادہ تولید کی افزائش کو بڑھا کر سپرم کو اولاد کے قابل بناتا ہے۔ سپرم کی پیدائشی کمزوری اور کمی ایسی محرومی ہے جو ایک صحت مند آدمی کو بھی کھوکھلابنا دیتی ہے ان دونوں صورتوں میں یعنی کرم منی کی کمزوری اور اس کے قدرتی تناسب کو درست کر کے اس کے قوام کو ٹھیک کرتا ہے اس میں شامل نہایت ہی قیمتی اورنایاب جڑی بوٹیاں نہ صرف مادہ تولید کو پیدا کرنے اور اسے گاڑھا کرنے میں موثر ہے بلکہ اس میں موجود سپرم کی کمی کو بھی دور کرتا ہے یہ کورس مادہ تولیداور سپرم سمیت تما م مردانہ امراض جو بانجھ پن کا سبب بنتے ہیں جیسے مادہ تولید میں جراثیم یعنی سپرم کا نہ ہونا، خصیوں کا نا کارہ ہونا، خصیوں اور عضوتناسل کے درمیان نالیوں کا بند ہونا، خصیوں میں انفیکشن ہونا وغیرہ کو نہ صرف ختم کرتا ہے بلکہ ان کو دوبارہ پیدا بھی نہیں ہونے دیتا۔زعفرانی مرواریدی سپرم گرو کورس 40یوم کے دورانیہ پر مشتمل ہے اس زعفرانی مرواریدی سپرم گرو کورس کا شمار ہمارے پست در پست صدی نسخہ جات میں ہوتا ہے اس لئے یہ کورس صرف ہمارے ادارے تاثیر دواخانے پر ہی د ستیا ب ہے مرد حضرات کو میں بتاتا چلو کہ وہ پاکستان میں ہے یا دنیا کے کسی بھی ملک میں ہے آپ بذریعہ آڈر زعفرانی مرواریدی سپرم گرو کورس مانگووا سکتے ہیں۔پاکستان میں ہم بذریعہ V.Pپررسل بھیجتے ہیں اس کے علاوہ آپ خود ہمارے کلینک پر تشریف لا کر خود طلب کر سکتے ہیں۔پاکستان سے باہر دنیا کہ ہر ملک میں ہم بذریعہ ائیر شیب بھیجتے ہیں جہاں ایک خاص بات میں بتاتا چلو ہم پوری دنیا میں ہوم ڈیلوری سروس فراہم کرتے ہیں مطلوبہ کورس
آپ کے گھر تک پہنچایا جا سکتا ہے۔ نوٹ( کورس کے بہترین نتائج کے لئے 4سے6ماہ مسلسل استعمال کریں)
ناظرین اگر آپ بھی زعفرانی مرواریدی سپرم گرو کورس خریدنا چاہتے ہیں تو دیر مت کیجئے بلکہ ابھی کال کر کے اپنا آرڈر بک کروائیں۔ ہمارے ہیلپ لائن نمبرز یہ
ڈاکٹر صاحب سے براہ راست مشورے کے لئے ان نمبر ز پر رابطہ:+92334-9552889
+92321-9552889
+92300-9552889
آپ کی راہنمائی کے لئے میل اور فی میل میڈیکل آفیسرز ہمہ وقت موجود ہیں جن سے آپ اپنی بیماری اور ہر قسم کے مرض کے بارے میں راہنمائی حاصل کر سکتے ہیں جو آپ کو ہر قسم کی راہنمائی فراہم کرئے گے( کلینک ٹائم صبح 9بجے سے لے رات8بجے تک)
میڈیکل آفیسر نمبر1: +92333-5501390
میڈیکل آفیسر نمبر2:۔ +92323-5501390
میڈیکل آفیسرنمبر3: +92336-5777696
میڈیکل آفیسرنمبر4: +92336-5777697
فی میل (لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر1: +92331-5607654
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر2: +92332-5607654
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر3: +92332-5530536
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر4: +92315-5530536
کلینک (Reception landline) نمبرز:۔ +9251-5777696,+9251-5777697,+92515530536,+9251-5773239
نوٹ:۔ آپ اپنی بیماری کے متعلق مکمل معلومات کے ساتھ میل کریں ۔ آپ ہمارے ای میل taseerlabs@gmail.com،taseerdawakhana@gmail.comپر بھی آپ اپناآرڈر بک کروا سکتے ہیں۔
ہمارا ایڈریس ہے: تاثیر دواخانہ i-111:اقبال روڈ، نزد کمیٹی چوک، چٹیاں ہٹیاں، تاثیر چوک راولپنڈی۔مزید معلومات کے لئے وزٹکیجئے ہماری ویب سائیٹ www.taseerlabs.com,dawakhanataseer.com۔
اینکر:۔بہت بہت شکریہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر صاحب آپ نے ہمارے ناظرین کو زعفرانی مرواریدی سپرم گرو کورس کے بارے میں بہترین راہنمائی کی امید ہے کہ ناظرین اس سے بہت زیادہ فائدہ اُٹھائیں گے اور آپ کو اپنی دعاؤں میں یاد رکھیں گے۔ ناظرین۔۔۔۔ یہ تھے بے اولادی کے مشہور روحانی معالج حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر جو کہ ہر قسم کے مردانہ و زنانہ امراض کے ماہر ہیں۔ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر نے آج مردانہ بانجھ پن سے متعلق ہم سب کی بہترین راہنمائی کی۔ امید ہے آپ ضرور ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتوں پر عمل کر کے مردانہ بانجھ پن سے چھٹکارا حاصل کر سکیں گے اور ایسے افراد تک ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتیں پہنچائیں گے جو کہ اولاد کی نعمت سے محروم ہیں تا کہ وہ جلد از جلد حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر سے اپنا علاج کروا کر اپنے آنگین میں خوشیاں بکھیر سکیں۔۔۔۔ اپنا خیال رکھئے گا۔۔۔ اللہ حافظ۔۔

یاقوتی سپرم گرو کورس

اینکر:۔اسلام و علیکم۔۔ ناظرین ۔۔امید ہے آپ سب خیریت سے ہوں گے۔ ناظرین آج ہم نے اپنے پروگرام میں جس شخصیت کو دعوت دی ہے وہ ملک پاکستان کے نامور اور بے اولادی کے مشہور روحانی معالج جو کسی تعارف کے کے محتاج نہیں جناب حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر آج ہم ڈاکٹر صاحب سے جس کورس کے بارے میں پوچھے گے وہ یاقوتی سپرم گرو کورس ہے جس کو استعمال کر کے مرد بانجھ پن سے نجات حاصل کر سکتے ہیں وہ بھی کسی سائیڈ ایفیکٹ کے بغیر اس کے علاوہ ڈاکٹر صاحب آپ کو بتائیں گے کہ مردانہ بانجھ کیا ہے؟اس کی وجوہات ، علامات اور علاج اس کے علاوہ اور بہت سی باتیں جن سے مردانہ بانجھ پن سے بچا جا سکتا ہے۔ جیسا کہ بہت سے لوگ جانتے ہیں کہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر اپنے بہترین ہربل طریقہ علاج کی وجہ سے پوری دنیا میں شہرت یافتہ ہیں۔ تو آئیے۔ ڈاکٹر صاحب سے ملتے ہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب اسلام و علیکم۔۔
ڈاکٹر:۔وعلیکم اسلام
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب سب سے پہلے یہ بتائے کہ مردانہ بانجھ پن کیا ہوتا ہے؟
ڈاکٹر:۔مادہ تولید میں ایکٹو جراثیم کی کمی یا غیر موجودگی مردانہ بانجھ پن کہلاتا ہے۔ آپ کی چھوٹی سی کمزوری زندگی کی بڑی محرومی کا سبب بن سکتی ہے مرد کو نر اور عورت کو مادہ کہا جاتا ہے ۔دیگر مقاصد تخلیق کے علاوہ ان کا ایک نہایت بنیادی وصف بقائے نسل انسانی اور تسلسل آدمیت ہے اور جب ان میں کوئی خرابی پیدا ہو کر نسل پیدا کرنے کی قابلیت مفقود ہو جائے تو طبی اصطلاح میں اسے بانجھ پن کیا جاتا ہے ۔بانجھ پن کی تین اقسام ہوتیں ہیں۔
1۔منی میں سپرم کی کمی oligospermia:۔مردانہ بانجھ پن کی ایک وجہ منی میں سپرم کی تعداد کا کم ہونا ہے۔ سپرم کی مناسب مقدار 200ملین سے600ملین ہے۔ اگرسپرم کی مناسب تعداد 120ملین سے کم ہو تو سپرم کی کمی کہا جائے گا۔ اس کی کمی کی کئی حیاتیاتی و ماحولیاتی وجوہات ہو سکتی ہیں۔مثلاًکثرت مباشرت، منی کا کم ہونا، ان ٹیوبز میں نقص ہونا جو سپرم کو خصیوں سے عضوتناسل کی طرف لے جاتی ہیں۔ خصیوں میں اینٹھن وغیرہ اس کے علاوہ ذہنی و جسمانی بے چینی، بے خوابی اور ہارمونز کے توازن میں بگاڑ ہونے سے بھی سپرم کی پیدائش کم ہوتی ہے۔
2۔منی میں سپرم کی غیر موجودگیazoospermia:۔منی میں سپرم کی بالکل غیر موجودگی azoospermiaکہلاتی ہے۔ اس بیماری میں منی میں سپرم بالکل پیدا ہی نہیں ہوتے ۔ منی میں سپرم بالکل پیدا نہ ہونے کا سب سے بڑا سبب انفیکشن ہے جس میں پیپ آنا، خون کے سرخ ذرات کا آنا یا پھر بیکٹیریا وغیرہ کی موجودگی ہے۔azoospermiaکی دو اقسام ہیں۔
i۔obstrustcive azoospermia:۔اگر خصیے سائز میں نارمل ہوں اور ہارمون لیول بھی نارمل ہو تو خصیے اور عضوتناسل کے درمیان نالیاں بند ہونے کوobstrustcive azoospermiaکہتے ہیں۔
ii۔nonobostrictive azoospermia:۔اس بیماری میں منی میں سپرم کا پیدا نہ ہونا خصیوں کی وجہ سے ہوتا ہے۔ جس کی وجہ سے خصیوں میں نقص ہونا اس کے علاوہ خصیوں میں پیدائشی نقص ہونا، ہارمون لیول نارمل نہ ہونا، خصیوں کا انفیکشن اور تیز بخار بھی اس کی وجہ خصیوں میں نقص ہونا، ہارمون لیول نارمل نہ ہونا، خصیوں کا انفیکشن اور تیز بخار بھی اس کی وجہ بنتا ہے۔
3۔necrospermia:۔necrospermiaبانجھ پن کی ایسی قسم ہے جس میں منی میں سپرم موجود تو ہوتے ہیں لیکن وہ زندہ نہیں ہوتے اور مردہ ہونے کے باعث وہ اس قابل نہیں رہتے کہ حمل قرار پانے کا باعث بن سکیں۔ اگر منی میں40فیصد سپرم مردہ حالت میں ہوں تو یہ بیماریnecrospermiaکہلائے گی۔
اینکر :۔ڈاکٹر صاحب semen کیا ہوتی ہے اور semenکہاں اور کیسے بنتی ہے؟
ڈاکٹر:۔مشت زنی (Masturbation)کے بعد سب سے زیادہ غلط باتیں منی(semen)کے حوالے سے مشہور ہیں۔ اکثر نوجوان منی کی کوالٹی کے حوالے سے پریشا ن ہیں کہ یہ پتلی ہے یا گاڑھی ، تھوڑی ہے یا طاقت سے نکلتی یا بغیر طاقت کے۔ جاہل ڈاکٹرز اور نیم حکیم اسے بھی خوب exploitکرتے ہیں۔منی تین جگہ بنتی ہے۔1۔خصیوں(Testicles)2۔پراسٹیٹ غدود۔3۔ منی کی تھیلیاں(seminal vesicles)۔ان تینوں جگہ سے نکل کر پیشاب کی نالی میں اکٹھی ہو جاتی ہے ۔خصیوں میں دو طرح کے سیلcellsہوتے ہیں ۔ پہلی قسم جنسی ہارمون testosteroneپیدا کرتے ہیں جن کا تعلق جنسی خواہش(sexual drive)اور مردانہ قوت (potency)یعنی تناؤ (erection)کے ساتھ ہے۔ یعنی اس ہارمون کی وجہ سے شہوت اور پینس میں پیدا ہوتا ہے ۔دوسرے سیل نطفہ (sperm)پیدا کرتے ہیں جو بچہ پیدا کرنے کا سبب بنتے ہیں۔فرد جب ایک بار انزال ہوتا ہے تو خارج ہونے والی منی کی مقدار اوسطً3.5ملی لیٹر ہوتی ہے(میرے ایک کلائنٹ کی مقدار10ملی لیٹر تھی)جس میں20کروڑ یا ایک ارب نطفے(sperms)ہوتے ہیں ۔حمل کے لئے تین کروڑ سے زیادہ صحت مند(active)سپرم کی ضرورت ہے لیکن اس صورت میں عموماً لڑکی پیدا ہوتی ہے۔ اگر سپرم زیادہ ہو ں گے تو لڑکا پیدا ہونے کے امکانات میں اضافہ ہو جاتا ہے ۔سپرم کا جنسی قوت کے ساتھ کوئی تعلق نہیں۔اگر سپرم بالکل ختم ہو جائیں تو بھی فرد کی مردانہ قوت پر کوئی اثر نہیں پڑتا اور فرد جنسی عمل کے لیے بالکل فٹ ہوتا ہے۔ اس لئے بعض افراد جنسی لحاظ سے بہت مضبوط اور ایکٹو ہوتے ہیں مگر وہ بچہ پیدا نہیں کر سکتے۔انفرادی اختلافات کی وجہ سے منی کی کوالٹی میں فرق ہوتا ہے۔ جس کا مردانہ قوت کے ساتھ کوئی تعلق نہیں ۔ منی کا سوائے بچے پیدا کرنے کے اور کوئی فنکشن نہیں لہٰذا اس کی کوالٹی کی کوئی اہمیت نہیں۔ منی سپرم کے اخراج کے لئے ایک ذریعہ ہے۔ یعنی اس کے ذریعے سپرم باہر آتے ہیں ۔دوسرے منی میں پروٹین اور شوگر وغیرہ کی صورت میں سپرم کے لئے خوراک ہوتی ہے۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب اگربانجھ پن کا مریض جنسی ملاپ سے پہلے ہی منی کا اخراج کر دے تو ایسے مرض کو کیا کہتے ہیں؟
ڈاکٹر:۔سُرعت انزال اور ذکاوت حس بھی ایسی صورت کو کہتے ہیں جب معمولی جنسی تحریک کے نتیجے میں، دخول سے پہلے، دخول کے ساتھ ہی یا دخول سے تھوڑی دیر بعد ، مستقل طو ر پر بار بار انزال ہو جائے اس سلسلے میں مختلف سطحوں پر علاج دستیاب ہیں یعنی نفسیاتی ، کسی مرد کو جلد انزال ہو جائے اور اس سے چند منٹ بعد اُس کے عضوتناسل میں دُوبارہ تناؤ پیدا ہو جانے کی صورت میں اُسے زیادہ بہتر کنٹرول محسوس ہو گا ۔ لہٰذا بعض معالجین ، مردوں (خاص طور پر نو عمر مردوں کو)کو، جنسی تعلق اختیار کرنے سے ایک سے دو گھنٹے پہلے اپنی ساتھی سے تیز تر جنسی تحریک کے ذریعے جذباتی عروج حاصل کرنے کا مشورہ دیتے ہیں۔دوبارہ جذباتی عروج حاصل کر نے کے لئے عام طور پر کافی وقت درکار ہوتا ہے اس طرح مرد کافی بہتر کنٹرول حاصل کر سکتے ہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب بانجھ پن کے مریضوں میں کون سی علامات اور اسباب پائے جاتے ہیں؟
ڈاکٹر:۔منی کی نالیوں میں سوزش ، خصیوں میں زخم، عضو خاص کا چھوٹا ہونا یا کمزور ہونا، انتشار کا کم ہونا، مادہ منی میں پس سیل کا موجود ہونا، یا مادہ منی کی مقدار کم ہونا، یا منی میں جراثیم کا کم ہونا، جو کہ ایک ملی لیٹر میں100ملین سے لے کر 40ملین تک ہونا ضروری ہے۔ معدہ میں تیزابیت کی مقدار بڑھنا بھی خرابی کا باعث ہے۔ مردانہ ہارمونز کی کمی اور بے ترتیبی بھی مردانہ بانجھ پن کا باعث ہے۔اس کی تین اقسام ہیں۔1۔منی کی نالیوں میں انفکیشن2۔گنوریا (سوزاک)آتشک ۔3۔منی میں تیزابیت۔افزائش نسل کے لئے نطفہ ،خصیوں میں تیار ہوتا ہے۔ خصیوں میں غدود چھوٹے چھوٹے اجزاء میں تقسیم ہو جاتے ہیں۔ ہر نطفے میں تین سو کے قریب لابیول پائے جاتے ہیں۔ان کے اندر سے باریک خمدار نالیاں(ٹیوبز)بن کر نکلتے ہیں۔ یہ خمدار نالیاں دراصل منی کی نالیاں ہیں ان میں منی خون سے علیحدہ ہوتی ہے۔ خم اس لئے ہے کہ فاصلہ زیادہ ہو جائے اور منی ٹھرکر مطلوبہ حرارت جذب کر کے پختہ ہو جائے۔ منی دو تھیلیوں جو تقریباً5سینٹی میٹر لمبی ہوتی ہیں۔ مثانے کے پیچھے پائی جاتی ہیں میں جمع ہوتی رہتی ہے۔ ٹیوبیولز میں پختگی کے بعد سپرم کی پیدائش ہوتی ہے ۔ جو منی کے ساتھ خارج ہوتے ہیں۔
اسباب:۔ہم جنس تعلقات ، فحاشہ عورتوں سے تعلقات ، گندے واش روم کا استعمال، فحش لٹریچر ، فحش موویز،بچپن کی غلط کاریاں ،مشت زنی ،ناقص غذا ،فحاش گفتگو، استعمال شدہ انڈر گار منٹس ، نشہ آور اشیاء (شراب نوشی ،سگریٹ ، کوکین ،چرس،افیون،تمباکووالے پان ، نسوار، گٹگاوغیرہ)،تیز مصالحہ دار غذائیں، ترش اشیاء ڈیب فرائیڈ غذائیں ۔خواہش ، جذبے کا نہ ہونا۔ خواہش ، جذبے اور کشش کا تعلق اعصاب سے ہے۔ اس جذبے میں کمی بیشی کے لئے اعصاب کو دیکھا جائے گا۔ نطفے کی منتقلی کے لئے عضو مخصوص کی کارکردگی کو پیش نظر رکھا جائے گا کیونکہ نطفہ اور خواہش دونوں موجود ہوں لیکن متعلقہ مقام تک پہنچانے کے لئے عضو میں ہی جان نہ ہو تو ایسے بانجھ پن کی نوعیت مختلف ہو گی۔نطفہ خصیوں کے تحت تیار ہوتا ہے۔ اس میں نقص واقع ہو تو غدی بانجھ پن تصور ہو گا یہ تینوں مفرد اعضاء اپنی حالت سے ایک دوسرے کو متاثر(طاقتور، کمزور اور ست)کرتے ہیں۔ جب ان کے افعال میں توازن ہوگا تو جنسی قوت بھی درست ہو گی۔
اینکر:، ڈاکٹر صاحب بانجھ پن کی وجوہات اور اس کی احتیاطی تدابیر تو ذرا ہمارے ناظرین کو بتا دیں؟
ڈاکٹر:۔سگریٹ نوشی:۔سگریٹ نوشی سپرم کی دشمن ہے ایک ریسرچ سے معلوم ہوا ہے کہ سگریٹ نوشی سے 15فیصدسپرم رہ جاتے ہیں۔ اس کے علاوہ سگریٹ نوشی کی وجہ سے بیضہ بار آور نہ ہو گا۔ لہٰذا اگر آپ سگریٹ نوشی کرتے ہیں تو فوراً اسے چھوڑ دیں۔
موٹاپا:۔اگر آپ موٹاپے کا شکار ہیں تو فوری طور پر اپنا وزن کم کرنے کی کوشش کریں۔ موٹاپے کی صورت میںtesticlesجسم کے ساتھ لگے رہتے ہیں جس کی وجہ سے ان کا درجہ حرارت بڑھ جاتا ہے اور اس سے سپرم مر جاتے ہیں۔ موٹے لوگوں کی خصیوں کا درجہ حرارت نسبتاً زیادہ ہوتا ہے جس کی وجہ سے بہت سے سپرم مر جاتے ہیں۔
شراب نوشی:۔شراب نوشی بھی سپرم کے لئے نقصان دہ ہے اس سے سپرم خصوصاً نازکyسپرم مر جاتے ہیں۔ چنانچہ شراب نوشی بھی ترک کر دیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب دوران علاج مریض کو کن کن چیزوں سے پرہیز کرنا چاہیے اور کون سی ایسی اشیاء ہے جن کا استعمال کرنا مریض کے لئے مفید ہے؟
ڈاکٹر:۔پرہیز علاج سے بہتر ہے۔
پرہیز:۔آلو مٹر ، گوبھی، بیگن، پالک، چاول بڑا گوشت ، پکوڑے سموسے ، اچار چٹنی، تمام گرم بادی چٹ پٹی تیز مصالحہ جات تمام کولڈ ڈرنکس، ٹھنڈی اشیاء ، شیور مرغی سے مکمل پرہیز کرنا چاہیے۔
استعمال کرنے والی غذا:۔کدو، ٹنڈے، توری، مولی، گاجر، شلجم، چھوٹا گوشت، دودھ ، دہی، تمام ڈرائی فروٹ، شہد کھجور ، کالے اور سفید چنے دال ماش ، مچھلی دیسی لیموں ،فروٹ میں سیب، کینو، مالٹا، آم اور کیلا وغیرہ استعمال کر سکتے ہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب جو مرد اس مرض میں مبتلا ہے اُن مردوں کے لئے آپ کے پاس کوئی تحفہ خاص موجود ہے جس کو استعمال کر کے وہ اس مرض سے بآسانی باہر نکل سکے؟
ڈاکٹر:۔ہمارے ادارے تاثیر دواخانہ کے مایہ ناز ڈاکٹرز، حکماء اور سائنسدانوں نے میری سر پرستی میں برس ہا برس کی تحقیقات اور بانجھ پن کے اصل اسباب اور وجو ہات کو مد نظر رکھ کر اپنی ریسرچ سے یاقوتی سپرم گرو کورس کو متعارف کراویاہے جو ہر طرح کے کیمیائی اجزاء سے پاک مکمل طور پر قدرتی دوا ہے اس کا کوئی بھی سائیڈ ایفیکٹ نہیں ہے یہ خالص جڑی بوٹیوں سے تیار شدہ ہے اور100فیصد نتائج کا حامل ہے ۔ تاثیر لیبارٹریز نے برسوں کی تحقیق کے بعد سپرم کی افرائش کے لئے ایسا کورس تیار کیا ہے جس کا نام یاقوتی سپرم گرو کورس ہے ۔ یہ کورس شعبہ ریسرچ نے دیسی جڑی بوٹیوں کی آمیزش کے ساتھ طب اسلامی کے اصولوں کے عین مطابق سائنٹیفک طریقوں پر تاثیر لیبارٹریز میں جدید آٹو میٹک مشینری کی مدد سے تیار کیا ہے۔ جس کے استعمال سے ہر طرح کا انفکیشن ختم ہو جاتا ہے اور منی میں جراثیم نسل پیدا ہونے لگتے ہیں ۔ جس سے,oligospermia, necrospermia azoospermiaجیسی بیماری سے مکمل طور پر نجات مل جاتی ہے۔ یہ مردوں کے جرثومہ حیات میں ہونے والی تبدیلیوں کے افرائشی ہارمون HGHکے سپرم کی سطح میں اضافہ کرتا ہے۔ بے اولاد افراد کے سپرم کم ہوں تو ان کے مادہ تولید میں سپرمز کو نارمل حالت میں لاتا ہے ۔مادہ تولید کی افزائش کو بڑھا کر سپرم کو اولاد کے قابل بناتا ہے۔ سپرم کی پیدائشی کمزوری اور کمی ایسی محرومی ہے جو ایک صحت مند آدمی کو بھی کھوکھلابنا دیتی ہے ان دونوں صورتوں میں یعنی کرم منی کی کمزوری اور اس کے قدرتی تناسب کو درست کر کے اس کے قوام کو ٹھیک کرتا ہے اس میں شامل نہایت ہی قیمتی اورنایاب جڑی بوٹیاں نہ صرف مادہ تولید کو پیدا کرنے اور اسے گاڑھا کرنے میں موثر ہے بلکہ اس میں موجود سپرم کی کمی کو بھی دور کرتا ہے یہ کورس مادہ تولیداور سپرم سمیت تما م مردانہ امراض جو بانجھ پن کا سبب بنتے ہیں جیسے مادہ تولید میں جراثیم یعنی سپرم کا نہ ہونا، خصیوں کا نا کارہ ہونا، خصیوں اور عضوتناسل کے درمیان نالیوں کا بند ہونا، خصیوں میں انفیکشن ہونا وغیرہ کو نہ صرف ختم کرتا ہے بلکہ ان کو دوبارہ پیدا بھی نہیں ہونے دیتا۔یاقوتی سپرم گرو کورس 40یوم کے دورانیہ پر مشتمل ہے اس یاقوتی سپرم گرو کورس کا شمار ہمارے پست در پست صدی نسخہ جات میں ہوتا ہے اس لئے یہ کورس صرف ہمارے ادارے تاثیر دواخانے پر ہی د ستیا ب ہے مرد حضرات کو میں بتاتا چلو کہ وہ پاکستان میں ہے یا دنیا کے کسی بھی ملک میں ہے آپ بذریعہ آڈر یاقوتی سپرم گرو کورس مانگووا سکتے ہیں۔پاکستان میں ہم بذریعہ V.Pپررسل بھیجتے ہیں اس کے علاوہ آپ خود ہمارے کلینک پر تشریف لا کر خود طلب کر سکتے ہیں۔پاکستان سے باہر دنیا کہ ہر ملک میں ہم بذریعہ ائیر شیب بھیجتے ہیں جہاں ایک خاص بات میں بتاتا چلو ہم پوری دنیا میں ہوم ڈیلوری سروس فراہم کرتے ہیں مطلوبہ کورس آپ کے گھر تک پہنچایا جا سکتا ہے۔ نوٹ( کورس کے بہترین نتائج کے لئے 4سے6ماہ مسلسل استعمال کریں)
ناظرین اگر آپ بھی یاقوتی سپرم گرو کورس خریدنا چاہتے ہیں تو دیر مت کیجئے بلکہ ابھی کال کر کے اپنا آرڈر بک کروائیں۔ ہمارے ہیلپ لائن نمبرز یہ
ڈاکٹر صاحب سے براہ راست مشورے کے لئے ان نمبر ز پر رابطہ:+92334-9552889
+92321-9552889
+92300-9552889
آپ کی راہنمائی کے لئے میل اور فی میل میڈیکل آفیسرز ہمہ وقت موجود ہیں جن سے آپ اپنی بیماری اور ہر قسم کے مرض کے بارے میں راہنمائی حاصل کر سکتے ہیں جو آپ کو ہر قسم کی راہنمائی فراہم کرئے گے( کلینک ٹائم صبح 9بجے سے لے رات8بجے تک)
میڈیکل آفیسر نمبر1: +92333-5501390
میڈیکل آفیسر نمبر2:۔ +92323-5501390
میڈیکل آفیسرنمبر3: +92336-5777696
میڈیکل آفیسرنمبر4: +92336-5777697
فی میل (لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر1: +92331-5607654
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر2: +92332-5607654
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر3: +92332-5530536
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر4: +92315-5530536
کلینک (Reception landline) نمبرز:۔ +9251-5777696,+9251-5777697,+92515530536,+9251-5773239
نوٹ:۔ آپ اپنی بیماری کے متعلق مکمل معلومات کے ساتھ میل کریں ۔ آپ ہمارے ای میل taseerlabs@gmail.com،taseerdawakhana@gmail.comپر بھی آپ اپناآرڈر بک کروا سکتے ہیں۔
ہمارا ایڈریس ہے: تاثیر دواخانہ i-111:اقبال روڈ، نزد کمیٹی چوک، چٹیاں ہٹیاں، تاثیر چوک راولپنڈی۔مزید معلومات کے لئے وزٹکیجئے ہماری ویب سائیٹ www.taseerlabs.com,dawakhanataseer.com۔
اینکر:۔بہت بہت شکریہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر صاحب آپ نے ہمارے ناظرین کو یاقوتی سپرم گرو کورس کے بارے میں بہترین راہنمائی کی امید ہے کہ ناظرین اس سے بہت زیادہ فائدہ اُٹھائیں گے اور آپ کو اپنی دعاؤں میں یاد رکھیں گے۔ ناظرین۔۔۔۔ یہ تھے بے اولادی کے مشہور روحانی معالج حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر جو کہ ہر قسم کے مردانہ و زنانہ امراض کے ماہر ہیں۔ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر نے آج مردانہ بانجھ پن سے متعلق ہم سب کی بہترین راہنمائی کی۔ امید ہے آپ ضرور ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتوں پر عمل کر کے مردانہ بانجھ پن سے چھٹکارا حاصل کر سکیں گے اور ایسے افراد تک ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتیں پہنچائیں گے جو کہ اولاد کی نعمت سے محروم ہیں تا کہ وہ جلد از جلد حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر سے اپنا علاج کروا کر اپنے آنگین میں خوشیاں بکھیر سکیں۔۔۔۔ اپنا خیال رکھئے گا۔۔۔ اللہ حافظ۔

زعفرانی مرواریدی سپرم گرو کورس

اینکر:۔اسلام و علیکم۔۔ ناظرین ۔۔امید ہے آپ سب خیریت سے ہوں گے۔ ناظرین آج ہم نے اپنے پروگرام میں جس شخصیت کو دعوت دی ہے وہ ملک پاکستان کے نامور اور بے اولادی کے مشہور روحانی معالج جو کسی تعارف کے کے محتاج نہیں جناب حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر آج ہم ڈاکٹر صاحب سے جس کورس کے بارے میں پوچھے گے وہ زعفرانی مرواریدی سپرم گرو کورس ہے جس کو استعمال کر کے مرد بانجھ پن سے نجات حاصل کر سکتے ہیں وہ بھی کسی سائیڈ ایفیکٹ کے بغیر اس کے علاوہ ڈاکٹر صاحب آپ کو بتائیں گے کہ مردانہ بانجھ کیا ہے؟اس کی وجوہات ، علامات اور علاج اس کے علاوہ اور بہت سی باتیں جن سے مردانہ بانجھ پن سے بچا جا سکتا ہے۔ جیسا کہ بہت سے لوگ جانتے ہیں کہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر اپنے بہترین ہربل طریقہ علاج کی وجہ سے پوری دنیا میں شہرت Sperm count

یافتہ ہیں۔ تو آئیے۔ ڈاکٹر صاحب سے ملتے ہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب اسلام و علیکم۔۔
ڈاکٹر:۔وعلیکم اسلام
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب مردانہ بانجھ پن کسے کہتے ہیں؟
ڈاکٹر:۔بچہ پیدا کرنے کی صلاحیت میں کمی یا بچہ پیدا کرنے کی صلاحیت کا نہ ہونا، بانجھ پن کی تعریف اس طرح کی جاتی ہے کہ1سال کے عرصے تک نارمل مباشرت ہوتے رہنے کے باوجود اور مائع حمل ادویات استعمال کئے بغیر حمل قرار نہ پانا ہے۔ بانجھ پن کا شکار مر د بھی ہو سکتا ہے اور عورت بھی اس مرض میں مبتلا ہو سکتی ہے ۔بانجھ پن ابتدائی اور ثانوی دو طرح کا ہوتا ہے ۔primary infertilityسے مراد وہ مریض ہیں جن میں پہلے کبھی حمل نہیں ہوا اور ثانوی بانجھ پن secondary infertilityسے مراد وہ مریض جن کے ہاں پہلے حمل واقع ہو چکا ہو جبکہ اس ایک اور اصطلاح سٹرلٹی سے مراد بچہ پیدا کرنے کی صلاحیت کا مرد یا عورت میں مکمل طور پر ختم ہو جانا ہے ،ماضی میں بانجھ پن کے شکار جوڑوں میں بچہ پیدا ہونے کی صلاحیت کم ہوتی تھی مگر آج جدید دور میں مناسب تشخص اور علاج سے85فیصد جوڑے بچہ پیدا ہونے کی اُمید کر سکتے ہیں ۔بانجھ پن میں مبتلا جوڑوں کو بہت زیادہ پریشانی اور دباؤ کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ عورت کے لئے تو بانجھ گالی بن جاتی ہے ۔ایسے جوڑے جن کے ہاں بچہ نہ ہوا ہو سارے کا سارا قصورعورت کا ہی بن جاتا ہے اور بچہ پیدا نہ کرنے پر طعنے ملتے رہتے ہیں اور لعنت ملامت ہوتی رہتی ہے ۔حالانکہ بانجھ پن کا شکار مرد بھی ہو سکتے ہیں ۔ بانجھ پن کی40فیصد وجوہات مردوں میں پائی جاتی ہیں اور آج کل بہت جلد اس کی تشخص ہو سکتی ہے بانجھ پن کا شکار کون ہے مرد یا عورت ۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب حمل کے لئے کیا شرائط ہوتیں ہیں جس پر عمل کر کے آسانی سے حمل ٹھہر جاتا ہے؟
ڈاکٹر:۔مرد اور عورت دونوں کا تندرست ہونا بہت ضروری ہے۔ مرد کو سرعت انزال اور ضعف باہ کا مریض نہیں ہونا چاہیے ۔ مرد کی طرف سے اس کے مادہ منویہ نارمل اور مناسب جرثومہ منویہ پیدا ہونے کی ضرورت ہوتی ہے سپرم کی صورت حال کچھ اس طرح سے ہونی چاہیے کہ کم از کم 72گھنٹے کے پرہیز کے بعد مرد میں (حاصل ہونے والے )مادہ منویہ کا تجزیہ کرنے یہ مادہ منویہ کی مقدار1.5ملی لیٹر سے5ملی لیٹر تک پیدا ہوتی ہے۔ ایک ملی لیٹر مادہ منویہ میں20ملین یا اس سے زائد سپرم50سے60فیصد تک حرکت کرنے والے(motile)اور60فیصد سے زائد نارمل شکل و صورت والے سپرم ہو نے چائیں مرد کو سپرم کی تعداد میں کمی oligospermiaیعنی سپرم کی تعداد کا ایک ملی لیٹر میں 20ملین سے کم ہونا یا مادہ منویہ میں سپرم کا موجود نہ ہوناazoospermiaکا مریض نہیں ہونا چاہیے ۔
اینکر:۔مردوں میں بانجھ پن کے اسباب کون کون سے ہوتے ہیں؟
ڈاکٹر:۔مردوں میں تولید مادہ منویہ کے مسائل40فیصد سے زائد بانجھ پن کی وجوہات کا سبب بنتے ہیں۔سپرمیٹوجینیسز سپرم بننے یا سپرم کی نشوونما کو کہتے ہیں ۔ عورتوں کے بیضہovumسے بالکل مختلف جو کہ ہر ماہ عورتوں میں وقفے سے اووریز سے خارج ہوتا رہتا ہے ۔سپرم خصیوں کی بشرہ جرثومہ سے لگاتار تیار ہوتے رہتے ہیں جرمینل ایبی تھیلیل سے سپرم اغدید یوس میں خارج کر دئیے جاتے ہیں جہاں پرانزال سے پہلے سپرم میں میجوریشن ہوتی ہے۔ سپرم کی نسل تیار ہونے میں تقریباً 73دن لگتے ہیں اس لئے سپرم کی ابنارمل تعداد واقعات کا ریفیکشن ہوتی ہے۔ جو سپرم اکٹھا کرنے سے پہلے 73دن میں واقع ہوتے ہوں سپرم کی پیداوار میں تبدیلی کا مشاہدہ کر نے کے لئے کم از کم 73دن کی ضرورت ہوتی ہے۔ سپرم کی پیداوار thermoragulatedہے یعنی حرارت سے کنٹرول ہوتی ہے ۔ خصیوں کے اندر حرارت خصیوں کی تھیلی کے پھیلنے اور سکڑنے سے کنٹرول ہوتی ہے ۔ سپرم کی پیدائش تقریباً 10Fپر ہوتی ہے خصیوں کے لئے بیرونی حرارتی صدمہ سپرم کی پیدائش میں کمی کا سبب بن سکتا ہے مثلاً خصیوں کو پہنچنے والے صدمے ،انفکشن ورم خصیہ ، کن پیٹرے یا پیدائشی طور پر خصیوں کا پیٹ میں رہ جانا، ہارمون کے توازن میں خرابی ،تیز بخار ، کوکین ، بھنگ، الکوحل کا استعمال وغیرہ ،وزن بہت زیادہ ہونا یا کم ہونا،مردوں میں منی میں گرمی و تیزی کے نتیجے میں منی کی رنگت زرد مقدار کم اور بو بہت بری ہوتی ہے اس طرح اگر منی میں برودت کی زیادتی ہے تو منی کا قوام پتلا اور اس کی مقدار بہت زیادہ ہو گئی ۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب مردانہ بانجھ پن کے لاحق ہونے میں کون کون سے عوامل شامل ہوتے ہیں؟
ڈاکٹر:۔ناظرین مردانہ بانجھ پن کے لاحق میں بہت سے عوامل ہوتے ہیں جس کی وجہ سے یہ ہولناک مرض پیدا ہوتا ہے۔
اعصابی تحریک اور جنسی قوت:۔ دماغ و اعصاب احساسات کا مرکز ہیں جو اندرونی جسم اور بیرونی ماحول میں ہونے والی تبدیلیوں اور محرکات کا احساس کرنے اور حالات کے مطابق عضلات کو حکم رسائی کر کے پسندیدگی اور ناپسندیدگی کو حاصل کرتے ہیں۔ہضم چہارم کے فضلے کی جب خون میں بہتات ہوتی ہے تو خصیے خون سے اپنی ساخت کی منی علیحدہ و جمع کر دیتے ہیں ۔ اس دباؤ کو احساسات ایک خاص لذت کی صورت میں محسوس کرتے ہیں۔ لذت کی انتہائی صورت اخراج کے وقت حاصل ہوتی ہے۔ چنانچہ اس دباؤ اور حصول سے نجات کے لئے جنسی اعضاء اعصاب کو حکم دیتے ہیں۔ حکم کا طریقہ یہ ہے کہ اس طرف دوران خون کا رجوع ہو کر عضو مخصوص جس کا زیادہ تر حصہ عضلاتی انسحہ کا بنا ہوا ہے وہ تناؤ میں آ جاتا ہے۔ پھر اس کی حرکات اور محرکات کے نتیجے میں پیدا ہونے والی حرارت کے اثر سے خصیے اور منی خارج ہوتی ہے اخراج منی اور جماع کا یہ فطری طریقہ ہے اور یہ اسی وقت ممکن ہے جب تینوں مفرد اعضاء توازن و صحت کی حالت میں ہوں۔
عضلاتی تحریک اور جنسی بیماری:۔جسم انسانی میں ارادی اور غیر ارادی حرکات کے ذمہ دار عضلات فطری صورت میں مضر اثرات سے بچنے کے لئے اور مرطوبات اور مطلوبات کے حصول کے لئے اعصاب ایک ترتیب و سلیقے سے کام کرتے ہیں لیکن انتہائی موافق حالات یا تیزی میں آ جاتے ہیں۔اسے ہم عضلاتی تحریک کہتے ہیں۔ ہر تحریک میں درجہ بہ درجہ جسم کے اندر تبدیلیوں میں اضافہ ہوتا رہتا ہے ۔غیر طبی تحریک ہو جائے تو ایک حد تک دماغ کے کنٹرول سے نکل کر جسم اور جنسی قوت پر اثرات مرتب کرتے ہیں۔دماغ کی صالح رطوبات بوجہ تحلیل فنا ہوتی رہتی ہیں۔ غدود خصیے تسکین کی وجہ سے اپنا کام روک دیتے ہیں یا کم کر دیتے ہیں۔
غدی بانجھ پن اور جنسی علامات:۔افزائش نسل کے لئے نطفہsemenخصیوںtesticlesمیں تیار ہوتا ہے۔ خصیوں مین غدود چھوٹے چھوٹے اجزاء میں تقسیم ہو جاتے ہیں۔ ہر نطفے میں تین سو کے قریب لابیول پائے جاتے ہیں۔انکے اندر سے باریک خمدار نالیاں بن کر نکلتے ہیں۔ خمدار نالیاں در اصل منی کی نالیاں ہیں ان کے منی خون سے علیحدہ ہوتی ہے۔خم اس لئے ہے کہ فاصلہ زیادہ ہو جائے اور منی ٹھر کر مطلوبہ حرارت جذب کر کے پختہ ہو جائے۔ منی دو تھیلیوں جو تقریباً5سینٹی میٹر لمبی ہوتی ہیں۔ مثانے کے پیچھے پائی جاتی ہیں اور اس میں جمع ہوتی رہتی ہے۔ ٹیوبیولز میں پختگی کے بعد سپرم کی پیدائش ہوتی ہے جو منی کے ساتھ خارج ہوتے ہیں۔
سیمن semenکے امراض:۔سمین کے امراض جاننے سے پہلے مختصر طور پر جاننا ضروری ہے کہ یہ کہاں پیدا ہوتے ہیں یہ کتنی دیر میں جوان ہوتے ہیں یہ محرک اور زندہ کس رطوبت میں رہتے ہیں ان کی اقسام کتنی ہیں ان کا مزاج کیا ہے ان کی مقدار کتنی ہے؟ اور یہ کتنے فیصد ہوں تو اپنا فعل سر انجام دیتے ہیں کرم منی بلوغت میںF.S.Hاور ٹیسٹو سیڑن کے زیر اثر سمینی
فیرس ٹیوبز کے خلیوں میں پیدا ہونا شروع ہو جاتے ہیں یعنی کرم منی sperm،خصیتینtesticlesمیں تیار ہوتے ہیں۔جبکہ باقی رطوبات سمینل وہیکل اور پیراسٹیٹ میں بنتی ہیں اس لیئے یمنل وہیکل سے خارج ہونے والی لیسدار رطوبت کے اندر سپرم متحرک زندہ اور صحت مند رہتے ہیں۔ اگر منی خارج نہ ہو تو سپرم کی شکل و حالت بن جاتی ہے سمین میں خرابی ہونا پیچیدہ و خطرناک بیماری یا زندگی کے خطرے کی پہلی علامت ہو سکتی ہے۔ جیسےtestes cancerخصیوں کا کینسرکہتے ہیں۔
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب دوران علاج مریض کو کن کن چیزوں سے پرہیز کرنا چاہیے اور کون سی ایسی اشیاء ہے جس کا استعمال کرنا مریض کے لئے مفید ہے؟
ڈاکٹر:۔پرہیز علاج سے بہتر ہے۔
پرہیز:۔آلو مٹر ، گوبھی ، بیگن، پالک، چاول، بڑا گوشت ، پکوڑے سموسے ، اچار چٹنی تمام گرم بادی چٹ پٹی تیز مصالحے جات تمام کولڈ ڈرنکس ، ٹھنڈی اشیاء، شیور مرغی۔
استعمال کرنے والی اشیاء:۔کدو، ٹنڈے، توری، مولی ، گاجر، شلجم، چھوٹا گوشت، دودھ، دہی تمام ڈرائی فروٹ، شہد کھجور کالے اور سفید چنے ،دال ماش، مچھلی دیسی لیموں فروٹ میں سیب ، کینو، مالٹا، آم اور کیلا وغیرہ استعمال کر سکتے ہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب جو مرد اس مرض میں مبتلا ہے اُن مردوں کے لئے آپ کے پاس کوئی تحفہ خاص موجود ہے جس کو استعمال کر کے وہ اس مرض سے بآسانی باہر نکل سکے؟
ڈاکٹر:۔ہمارے ادارے تاثیر دواخانہ کے مایہ ناز ڈاکٹرز، حکماء اور سائنسدانوں نے میری سر پرستی میں برس ہا برس کی تحقیقات اور بانجھ پن کے اصل اسباب اور وجو ہات کو مد نظر رکھ کر اپنی ریسرچ سے زعفرانی مرواریدی سپرم گرو کورس کو متعارف کراویاہے جو ہر طرح کے کیمیائی اجزاء سے پاک مکمل طور پر قدرتی دوا ہے اس کا کوئی بھی سائیڈ ایفیکٹ نہیں ہے یہ خالص جڑی بوٹیوں سے تیار شدہ ہے اور100فیصد نتائج کا حامل ہے ۔ تاثیر لیبارٹریز نے برسوں کی تحقیق کے بعد سپرم کی افرائش کے لئے ایسا کورس تیار کیا ہے جس کا نام زعفرانی مرواریدی سپرم گرو کورس ہے ۔ یہ کورس شعبہ ریسرچ نے دیسی جڑی بوٹیوں کی آمیزش کے ساتھ طب اسلامی کے اصولوں کے عین مطابق سائنٹیفک طریقوں پر تاثیر لیبارٹریز میں جدید آٹو میٹک مشینری کی مدد سے تیار کیا ہے۔ جس کے استعمال سے ہر طرح کا انفکیشن ختم ہو جاتا ہے اور منی میں جراثیم نسل پیدا ہونے لگتے ہیں ۔ جس سے,oligospermia, necrospermia azoospermiaجیسی بیماری سے مکمل طور پر نجات مل جاتی ہے۔ یہ مردوں کے جرثومہ حیات میں ہونے والی تبدیلیوں کے افرائشی ہارمون HGHکے سپرم کی سطح میں اضافہ کرتا ہے۔ بے اولاد افراد کے سپرم ہوں تو ان کے مادہ تولید میں سپرمز کو نارمل حالت میں لاتا ہے ۔مادہ تولید کی افزائش کو بڑھا کر سپرم کو اولاد کے قابل بناتا ہے۔ سپرم کی پیدائشی کمزوری اور کمی ایسی محرومی ہے جو ایک صحت مند آدمی کو بھی کھوکھلابنا دیتی ہے ان دونوں صورتوں میں یعنی کرم منی کی کمزوری اور اس کے قدرتی تناسب کو درست کر کے اس کے قوام کو ٹھیک کرتا ہے اس میں شامل نہایت ہی قیمتی اورنایاب جڑی بوٹیاں نہ صرف مادہ تولید کو پیدا کرنے اور اسے گاڑھا کرنے میں موثر ہے بلکہ اس میں موجود سپرم کی کمی کو بھی دور کرتا ہے یہ کورس مادہ تولیداور سپرم سمیت تما م مردانہ امراض جو بانجھ پن کا سبب بنتے ہیں جیسے مادہ تولید میں جراثیم یعنی سپرم کا نہ ہونا، خصیوں کا نا کارہ ہونا، خصیوں اور عضوتناسل کے درمیان نالیوں کا بند ہونا، خصیوں میں انفیکشن ہونا وغیرہ کو نہ صرف ختم کرتا ہے بلکہ ان کو دوبارہ پیدا بھی نہیں ہونے دیتا۔زعفرانی مرواریدی سپرم گرو کورس 40یوم کے دورانیہ پر مشتمل ہے اس زعفرانی مرواریدی سپرم گرو کورس کا شمار ہمارے پست در پست صدی نسخہ جات میں ہوتا ہے اس لئے یہ کورس صرف ہمارے ادارے تاثیر دواخانے پر ہی د ستیا ب ہے مرد حضرات کو میں بتاتا چلو کہ وہ پاکستان میں ہے یا دنیا کے کسی بھی ملک میں ہے آپ بذریعہ آڈر زعفرانی مرواریدی سپرم گرو کورس مانگووا سکتے ہیں۔پاکستان میں ہم بذریعہ V.Pپررسل بھیجتے ہیں اس کے علاوہ آپ خود ہمارے کلینک پر تشریف لا کر خود طلب کر سکتے ہیں۔پاکستان سے باہر دنیا کہ ہر ملک میں ہم بذریعہ ائیر شیب بھیجتے ہیں جہاں ایک خاص بات میں بتاتا چلو ہم پوری دنیا میں ہوم ڈیلوری سروس فراہم کرتے ہیں مطلوبہ کورس آپ کے گھر تک پہنچایا جا سکتا ہے۔ نوٹ( کورس کے بہترین نتائج کے لئے 4سے6ماہ مسلسل استعمال کریں)
ناظرین اگر آپ بھی زعفرانی مرواریدی سپرم گرو کورس خریدنا چاہتے ہیں تو دیر مت کیجئے بلکہ ابھی کال کر کے اپنا آرڈر بک کروائیں۔ ہمارے ہیلپ لائن نمبرز یہ
ڈاکٹر صاحب سے براہ راست مشورے کے لئے ان نمبر ز پر رابطہ:+92334-9552889
+92321-9552889
+92300-9552889
آپ کی راہنمائی کے لئے میل اور فی میل میڈیکل آفیسرز ہمہ وقت موجود ہیں جن سے آپ اپنی بیماری اور ہر قسم کے مرض کے بارے میں راہنمائی حاصل کر سکتے ہیں جو آپ کو ہر قسم کی راہنمائی فراہم کرئے گے( کلینک ٹائم صبح 9بجے سے لے رات8بجے تک)
میڈیکل آفیسر نمبر1: +92333-5501390
میڈیکل آفیسر نمبر2:۔ +92323-5501390
میڈیکل آفیسرنمبر3: +92336-5777696
میڈیکل آفیسرنمبر4: +92336-5777697
فی میل (لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر1: +92331-5607654
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر2: +92332-5607654
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر3: +92332-5530536
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر4: +92315-5530536
کلینک (Reception landline) نمبرز:۔ +9251-5777696,+9251-5777697,+92515530536,+9251-5773239
نوٹ:۔ آپ اپنی بیماری کے متعلق مکمل معلومات کے ساتھ میل کریں ۔ آپ ہمارے ای میل taseerlabs@gmail.com،taseerdawakhana@gmail.comپر بھی آپ اپناآرڈر بک کروا سکتے ہیں۔
ہمارا ایڈریس ہے: تاثیر دواخانہ i-111:اقبال روڈ، نزد کمیٹی چوک، چٹیاں ہٹیاں، تاثیر چوک راولپنڈی۔مزید معلومات کے لئے وزٹکیجئے ہماری ویب سائیٹ www.taseerlabs.com,dawakhanataseer.com۔
اینکر:۔بہت بہت شکریہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر صاحب آپ نے ہمارے ناظرین کو زعفرانی مرواریدی سپرم گرو کورس کے بارے میں بہترین راہنمائی کی امید ہے کہ ناظرین اس سے بہت زیادہ فائدہ اُٹھائیں گے اور آپ کو اپنی دعاؤں میں یاد رکھیں گے۔ ناظرین۔۔۔۔ یہ تھے بے اولادی کے مشہور روحانی معالج حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر جو کہ ہر قسم کے مردانہ و زنانہ امراض کے ماہر ہیں۔ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر نے آج مردانہ بانجھ پن سے متعلق ہم سب کی بہترین راہنمائی کی۔ امید ہے آپ ضرور ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتوں پر عمل کر کے مردانہ بانجھ پن سے چھٹکارا حاصل کر سکیں گے اور ایسے افراد تک ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتیں پہنچائیں گے جو کہ اولاد کی نعمت سے محروم ہیں تا کہ وہ جلد از جلد حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر سے اپنا علاج کروا کر اپنے آنگین میں خوشیاں بکھیر سکیں۔۔۔۔ اپنا خیال رکھئے گا۔۔۔ اللہ حافظ۔۔

ایکروبیان سپرم گروکمبائنڈ تھیراپی

اینکر:۔ اسلام و علیکم۔۔ ناظرین۔۔۔ امید ہے آپ سب خیریت سے ہوں گے۔ ناظرین آج ہم نے اپنے پروگرام میں جس شخصیت کو دعوت دی ہے وہ ملک پاکستان کے نامور اور بے اولادی کے مشہور روحانی معالج جو کسی تعارف کے محتاج نہیں جناب حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر آج ہم حکیم صاحب سے جس کورس کے بارے میں پوچھے گے اس کا نام ایکربیان سپرم گرو combinedتھیراپی جس کو استعمال کرنے سے مرد حضرات جو بانجھ پن میں مبتلا ہے وہ بآسانی اس مرض سے نجات حاصل کر سکتے ہیں آج حکیم صاحب آپ کو بتائیں گے کہ مردانہ بانجھ پن ہوتا کیا ہے؟ اس کی وجوہات ، علامات اور علاج اور اس کے علاوہ اور بہت سی باتیں جن سے مردانہ بانجھ پن سے بچا جا سکتا ہے جیسا کہ بہت سے لوگ جانتے ہیں کہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر اپنے بہترین ہربل طریقہ علاج کی وجہ سے پوری دنیا میں شہرت یافتہ ہیں تو آئیے حکیم صاحب سے ملتے ہیں۔
اینکر۔ ڈاکٹر صاحب اسلام و علیکم۔۔۔
ڈاکٹر:۔وعلیکم اسلام ۔۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب سب سے پہلے تو آپ ہمارے ناظرین کو یہ بتائیں کہ مردانہ بانجھ پن ہوتا کیا ہے؟
ڈاکٹر:۔اگر شادی کے بعد ریگولر سیکس کی جائے یعنی روزانہ مباشرت کی جائے یا ایک دن چھوڑ کر کی جائے یا ہمارے بتائے گے طریقے کے مطابق بیضہ ریزی کے وقت مباشرت کی جائے اور پھر ایک سال تک حمل نہ ہو تو ہو سکتا ہے کہ میاں بیوی میں کوئی بانجھ ہو امریکہ میں 12فیصد لوگ بانجھ ہیں ایک ریسرچ سے معلوم ہوا کہ ان میں سے33فیصد عورتوں میں نقص ہوتا ہے اور 33فیصد مردوں میں اور باقی دونوں میں ایک اور ریسرچ کے مطابق 40فیصد مرد بانجھ پن کا شکار ہوتے ہیں بانجھ پن کی تین اقسام ہیں۔
منی میں سپرم کا نہ ہوناazoospermia
منی میں سپرم کی تعداد کا کم ہوناoligospermia
منی میں سپرم کا مردہ ہوناnecrospermia
منی میں سپرم کی غیر موجودگیazoospermia:۔منی میں سپرم کی بالکل غیر موجودگی azoospermiaکہلاتی ہے۔ اس بیماری میں منی میں سپرم بالکل پیدا ہی نہیں ہوتے ۔ منی میں سپرم بالکل پیدا نہ ہونے کا سب سے بڑا سبب انفیکشن ہے جس میں پیپ آنا، خون کے سرخ ذرات کا آنا یا پھر بیکٹیریا وغیرہ کی موجودگی ہے۔azoospermiaکی دو اقسام ہیں۔
i۔obstrustcive azoospermia:۔اگر خصیے سائز میں نارمل ہوں اور ہارمون لیول بھی نارمل ہو تو خصیے اور عضوتناسل کے درمیان نالیاں بند ہونے کوobstrustcive azoospermiaکہتے ہیں۔
ii۔nonobostrictive azoospermia:۔اس بیماری میں منی میں سپرم کا پیدا نہ ہونا خصیوں کی وجہ سے ہوتا ہے۔ جس کی وجہ سے خصیوں میں نقص ہونا اس کے علاوہ خصیوں میں پیدائشی نقص ہونا، ہارمون لیول نارمل نہ ہونا، خصیوں کا انفیکشن اور تیز بخار بھی اس کی وجہ خصیوں میں نقص ہونا، ہارمون لیول نارمل نہ ہونا، خصیوں کا انفیکشن اور تیز بخار بھی اس کی وجہ بنتا ہے۔
منی میں سپرم کی کمی oligospermia:۔مردانہ بانجھ پن کی ایک وجہ منی میں سپرم کی تعداد کا کم ہونا ہے۔ سپرم کی مناسب مقدار 200ملین سے600ملین ہے۔ اگرسپرم کی مناسب تعداد 120ملین سے کم ہو تو سپرم کی کمی کہا جائے گا۔ اس کی کمی کی کئی حیاتیاتی و ماحولیاتی وجوہات ہو سکتی ہیں۔مثلاًکثرت مباشرت، منی کا کم ہونا، ان ٹیوبز میں نقص ہونا جو سپرم کو خصیوں سے عضوتناسل کی طرف لے جاتی ہیں۔ خصیوں میں اینٹھن وغیرہ اس کے علاوہ ذہنی و جسمانی بے چینی، بے خوابی اور ہارمونز کے توازن میں بگاڑ ہونے سے بھی سپرم کی پیدائش کم ہوتی ہے۔
necrospermia:۔necrospermiaبانجھ پن کی ایسی قسم ہے جس میں منی میں سپرم موجود تو ہوتے ہیں لیکن وہ زندہ نہیں ہوتے اور مردہ ہونے کے باعث وہ اس قابل نہیں رہتے کہ حمل قرار پانے کا باعث بن سکیں۔ اگر منی میں40فیصد سپرم مردہ حالت میں ہوں تو یہ بیماریnecrospermiaکہلائے گی۔
یہ جاننے کے لیے کہ اصل خرابی کہاں ہے مرد کو اپنی منی کا تجزیہ کرانا چاہیے بہتر ہے کہ منی لیبارٹری ہی میں نکالی جائے گھر سے لے جانے کی صورت میں عموماً رزلٹ صحیح نہیں ہوتا اگر واقعی مرد میں خرابی ہے تو وہ کسی اچھے حکیم سے ملیں اور اپنا علاج کروائے۔
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب مردانہ بانجھ پن کی کیا وجوہات ہوتیں ہیں؟
ڈاکٹر:۔اولاد اللہ تعالیٰ کی ایک بہت بڑی نعمت ہے تو پھر انسان اس کو کیوں کنٹرول کرنا چاہتا ہے اس کی کئی وجوہات ہو سکتی ہیں مثلاً بہت سے مرد وں کی خواہش ہوتی ہے کہ ان کے بچوں کی پیدائش کے درمیان دو، اڑھائی سال کے وقفہ ہو کیوں کہ یہ بچوں کی صحت کے لیے مفید ہے۔اکثر جوڑے خاندان کا سائز کو چھوٹا رکھنا چاہتے ہیں تا کہ وہ ان کی بہتر پرورش اور تعلیم و تربیت کر سکیں زیادہ بچوں کو پالنا ،سنبھالنا مشکل کام ہے۔مردانہ بانجھ پن زیادہ سگریٹ نوشی، شراب نوشی ، کھٹی تلی ہوئی بازاری چیزیں کھانے سے بھی ہو جاتا ہے۔ اس کے علاوہ کثرت مباشرت ، منی کی قلت یامنی کا کم بننا ، ہر وقت غلط خیالات سوچنے سے بھی ہو جاتا ہے ۔ سگریٹ نوشی سپرم کی دشمن ہے۔ ایک ریسرچ سے معلوم ہوا ہے کہ سگریٹ نوشی سے15فی صد سپرم رہ جاتے ہیں۔ اس کے علاوہ سگریٹ نوشی کی وجہ سے سپرم بیضہ کے اندر داخل نہیں ہو سکتا جس کی وجہ سے بیضہ با ر آور نہ ہو گا۔
اینکر :۔ڈاکٹر صاحب کوئی شخص اگر مردانہ بانجھ پن کے مرض میں مبتلا ہو تو اس کے لیے کوئی حفاظتی تدابیر ناظرین کو بتا دیں جس پر عمل کر کے وہ اس مرض سے ب�آسانی بچ سکے؟
ڈاکٹر:۔1۔سگریٹ نوشی سپرم کی دشمن ہے۔ ایک ریسرچ سے معلوم ہوا کہ سگریٹ نوشی سے15فی صد سپرم کم ہو جاتے ہیں ۔ اس کے علاوہ سگریٹ نوشی کی وجہ سے سپرم بیضہ کے اندر داخل نہیں ہو سکتا ۔ جس کی وجہ سے بیضہ بار آور نہ ہوگا لہٰذا گر آپ سگریٹ نوشی کرتے ہیں تو حصول اولاد کے لیے چھوڑدیں۔
2۔شراب نوشی بھی سپر م کے لئے نقصان دہ ہے۔ اس سے سپرم خصوصاً نازکyسپرم مر جاتے ہیں ۔چنانچہ شراب نوشی بھی ترک کر دیں ۔شراب نوشی گناہ کبیرہ ہے۔
3۔اپنا وزن کم سے کم کریں۔موٹاپے کی صور ت میں خصیے جسم کے ساتھ لگے رہتے ہیں ۔ جس کی وجہ سے ان کا درجہ حرارت بڑھ جاتا ہے اور اس سے سپرم مر جاتے ہیں۔ ریسرچ سے معلوم ہوا ہے کہ موٹے آدمی کے خصیوں کا درجہ حرارت نسبتاً زیادہ ہوتی ہے جس کی وجہ سے بہت سے سپرم مر جاتے ہیں۔
4۔ خصیوں کا درجہ حرارت جسم کے درجہ حرارت سے کم ہوتا ہے ۔ اگر ان کا درجہ حرارت جسم کے درجہ حرارت کے برابر ہو جائے تو بھی سپرم مر جاتے ہیں ۔ اگر آپ تنگ لباس خصوصاً تنگ انڈروئیز پہنتے ہیں تو آپ کے خصیے اکثر اوقات آپ کے جسم کے ساتھ لگے رہتے ہیں جس کی وجہ سے خصیوں کا درجہ حرارت کے برابر ہو جاتا ہے جو کہ سپرم کے لیے نقصان دہ ہے۔ لہٰذا کھلا لباس پہنیں خصوصاً گرمیوں میں آپ کے خصیے زیادہ دیر جسم کے ساتھ نہ لگے رہیں ۔
5۔گرمی سپرم کی دشمن ہے ۔لہٰذا گرم پانی میں زیادہ دیر تک نہ بیٹھیں ، زیادہ دیر تک گرم پانی سے نہ نہائیں ، اپنے خصیوں کو ٹھنڈا رکھیں۔ جب بھی باتھ روم میں جائیں خصیوں پر ایک دو منٹ کے لئے ٹھنڈا پانی ڈالیں ۔ آگ کے قریب کام کرنے والوں کے ہاں اکثر بیٹیاں پیدا ہوتی ہیں۔ گرمی سے Yکروموسوم جلد مر جاتے ہیں۔
6۔جو لوگ روزانہ ڈرائیونگ کرتے ہیں، انجن کی گرمی کی وجہ سے ان کے صحت مند سپرم بھی کم ہو جاتے ہیں اس کے لیے اپنے نیچے ہوا دار سیٹ رکھیں ۔ہر ایک گھنٹوں بعد خصیوں پر ٹھنڈا پانی ڈال لیں۔
7۔خوراک متوازن ہو جس میں سارے وٹامن اے اور وٹامن ای کا زیادہ استعمال کیا جائے ۔
8۔ ایک ریسرچ سے معلوم ہوا ہے کہ زیادہ دوڑنے اور سائکل چلانے سے دو ہفتوں میں سپرم کی تعداد 29فی صد کم ہو جاتی ہے۔ یعنی بہت زیادہ ورزش بھی سپرم کے لئے نقصان دہ ہے۔
9۔بعض کیمیائی مادے مثلاً کرم کش ادویات glycol etherجو کہ پرنٹنگ اور گوند وغیرہ بنانے میں استعمال ہوتے ہیں وہ بھی سپرم کے لیے نقصان دہ ہے ۔ کرم کش ادویات کا سپرے کر تے وقت خصوصی احتیاط کی ضرورت ہے۔
10۔ریسرچ سے یہ معلوم ہوا ہے کہ کمپیوٹر کے سامنے زیادہ دیر بیٹھنے سے بھی سپرم کی تعداد کم ہو جاتی ہے جس کی وجہ سے ایسے افراد کے ہاں اکثر لڑکیاں پیدا ہوتی ہیں۔
11۔ذہنی دباؤstressبھی سپرم کے لیے بہت نقصان دہ ہے یہ سپرم کی تعداد کو کم کر دیتا ہے ۔ لہٰذا اس سے بچیں اور ہمیشہ پر سکون رہنے کی کوشش کریں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب مردانہ بانجھ پن ایک قابل علاج مرض ہے اور یہ مرض کن مرد حضرات میں زیادہ پایا جاتا ہے؟
ڈاکٹر:۔بانجھ پن آج کل مردوں کا سب سے بڑا مسئلہ ہے ۔ بعض اوقات مرد اپنی اس بیماری کو چھیانے کے لئے مکمل علاج نہیں کرواتے جس کے باعث یہ بیماری شدت پکڑتی ہے۔ سپرم کی کمی لا علاج مرض نہیں ہے ۔ اگر بروقت اس بیماری پر توجہ دینا شروع کر دی جائے تو اس
مسئلے پر قابو پایا جا سکتا ہے۔بعض اوقات بیرونی عوامل بھی اس کی کمی کا باعث بنتے ہیں جیسے کہ غیر معیاری خوراک ، ورزش بالکل نہ کرنا،سگریٹ نوشی اور الکوحل کا استعمال زیادہ کرنا اس کے علاوہ موٹاپا بھی اگر عمر کے لحاظ سے زیادہ ہو جائے تو یہ خصیوں پر بُرے اثرات مرتب کرتا ہے ۔ جس کی وجہ سے بھی سپرم کی کمی کا مرض لاحق ہو جاتا ہے ۔ایسے مرد حضرات جو ہر وقت منفی سوچ اور فحش ویڈیو کو زیادہ دیکھتے ہیں ان میں یہ مسئلہ زیادہ بڑھ جاتا ہے اور دو تین مرتبہ ڈسچارج ہونا بھی اس کی ایک وجہ ہے وہ نوجوان لڑکے یا مرد حضرات جو ایک دن میں بیس سے زیادہ سگریٹ پیتے ہیں وہ بھی اکثر سپرم کی کمی کا شکار ہو جاتے ہیں۔ دوران کام ہر وقت بیٹھے رہنا بھی اس کی ایک وجہ بن سکتا ہے ۔ سپرم کی کمی کو جانچنے کے لیے سیمن کا ٹیسٹ کروایا جاتا ہے۔بعض اوقات شوگر مرض اگر کم عمر ی میں لاحق ہو جائے تو سپرم کی کمی ہو جاتی ہے ۔ اس کے علاوہ زیادہ ڈرائیو نگ کرنے سے بھی پرہیز کرنا چاہیے کیونکہ جو لوگ زیادہ ڈرائیونگ کرتے ہیں گاڑی کے انجن کی گرمی کی وجہ سے ان کے صحت مند سپرم بھی کم ہو جاتے ہیں۔آج کل بانجھ کا مسئلہ کافی عام ہو رہا ہے ۔ مردوں کے بانجھ پن کی عموماً ایک ہی وجہ ہوتی ہے کہ ان کے سپرم کی تعداد کم ہو جاتی ہے ۔ مرد کے ایک بار انزال ہونے پر منی کی مقدار اوسطاً 3.5ملی لیٹر ہوتی ہے ۔ اگر آپ موٹاپے کا شکار ہیں تو فوراً اپنا وزن کم کریں کیونکہ وزن زیادہ ہونے کی وجہ سے بھی testiclesجسم کے ساتھ لگے رہتے ہیں جس کی وجہ سے ان اکا درجہ حرارت بڑھ جاتا ہے اور اس سے سپرم مر جاتے ہیں ۔ہمارے ہاں اگر یہ مسئلہ ہے کہ اگر بچہ پیدا نہیں ہو رہا تو بیوی کو طعنے دیے جاتے ہیں اور بیٹے کی دوسری شادی کروانے پر زور دیا جاتا ہے ۔ جس سے گھریلو نا چاقی بڑھ جاتی ہے۔ مرد حضرات کو ایسے حالات میں اپنی بیوی کے ساتھ مکمل تعاون کر نا چاہیے کیونکہ پاکستان میں55فیصد مرد حضرات کی وجہ سے خواتین کو بانجھ پن کے مسئلے کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ اس کا مکمل علاج کروانا چاہیے تا کہ گھریلو زندگی پُرسکون گزر سکے ۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب بانجھ پن کا طبی اصول علاج کیا ہوتا ہے ؟
ڈاکٹر:۔اس مرض کا علاج اصل سبب کو رفع کرنا ہے اگر عورت یا مرد کے اعضاء تناسل میں کوئی پیدائشی نقص ہو تو پھر یہ مرض عموماً لاعلاج ہوا کرتا ہے بلکہ مرض پرانا ہونے کی صورت میں تین سے چار ماہ بھی لگ سکتے ہیں اور یہ بات خاص طور پریادرہے کہ علاج کے سلسلے میں مستقل مزاجی بہت ضروری ہے ۔غیر مستقل مزاجی سے مراد حاصل نہیں ہوتی یہ ملاح کا کام ہے کے کشتی کو کس رستے وہ باحفاظت پار اتار سکتا ہے سواریوں کا کام نہیں کہ ہر موڑ پر وہ شور مچانے لگیں۔اس مرض کا علاج بڑا صبر آزماہوتا ہے اس سلسلے میں ایک قصہ بیان کرتا چلوں کہ ایک مالی نے دو نوجوانوں کو دو پودے دیئے اور کہا کہ گھر جا کر مٹی کھود کر لگا دو اور روزانہ پانی دیتے رہو۔ دس پندرہ دن میں یہ جڑ پکڑ جائیں گے اور کچھ عرصہ بعد ان میں خوش نما پھول آئیں گے ایک نوجوان نے تو مالی کی بات مان کر پودا لگا کر پانی دینا شروع کر دیا اور صبر سے اس کے بڑھنے کا انتظار کرنے لگا۔ دوسرا جو زیادہ عقل مند تھا اور عقل مندی اسے چین سے بیٹھنے نہ دیتی تھی وہ روزانہ پودے کو ذرا اوپر کھینچ کر دیکھتاکہ جڑ لگ گئی ہے یا نہیں لیکن جڑ بیچاری خاک لگتی جو کچھ وہ زمین میں تھوڑی سی جگہ پکڑتی دوسرے روز یہ صاحب امتحان کی خاطر اسے کچا کر دیتے نتیجہ یہ ہوا کہ پہلے نوجوان کا پودا چند دنوں میں پھول دینے لگ گیا اور دوسرے کا پودا مرجھا گیا ،یہی بات علاج میں بھی بے صبر استقلال سے کام لیں گے اور پورا وقت با پرہیز علاج کرائیں گے تو آپ کا دامن گوہر مراد سے بھر جائے گا۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب دوران علاج مریض کو کون سی چیزوں سے پرہیز کرنا چاہیے اور کون سی چیزوں کا استعمال کرنا اُس کے لئے مفید ہے؟
ڈاکٹر:۔پرہیز علاج سے بہتر ہے۔
پرہیز:۔آلو مٹر، گوبھی، بیگن، پالک ، چاول، بڑا گوشت، پکوڑے سموسے، اچار چٹنی تمام گرم بادی چٹ پٹی تیز مصالحہ جات تمام گولڈڈرنکس ٹھنڈی اشیاء ، شیو مرغی ۔
استعمال کرنے والی اشیاء:۔کدو، ٹنڈے، توری، مولی، گاجر، شلجم، چھوٹا گوشت ، دودھ، دہی تمام ڈرائی فروٹ، شہد کھجور، کالے سفید چنے دال ماش ۔ مچھلی ، دیسی لیموں فریش فروٹ سیب کینو، مالٹا، آم اور کیلا وغیرہ استعمال کر سکتے ہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب جو مرد اس مرض میں مبتلا ہے اُن مردوں کے لئے آپ کے پاس کوئی تحفہ خاص موجود ہے جس کو استعمال کر کے وہ اس مرض سے بآسانی باہر نکل سکے؟
ڈاکٹر:۔ہمارے ادارے تاثیر دواخانہ کے مایہ ناز ڈاکٹرز، حکماء اور سائنسدانوں نے میری سر پرستی میں برس ہا برس کی تحقیقات اور بانجھ پن کے اصل اسباب اور وجو ہات کو مد نظر رکھ کر اپنی ریسرچ سے ایکربیان سپرم گرو combinedتھیراپی متعارف کروائی ہے جومرض کی نوعیت کے حساب سے مریض کو دئے جاتے ہیں جو ہر طرح کے کیمیائی اجزاء سے پاک مکمل طور پر قدرتی دوا ہے اس کا کوئی بھی سائیڈ ایفیکٹ نہیں ہے یہ خالص جڑی بوٹیوں سے تیار شدہ تیار ہیں اور100فیصد نتائج کے حامل ہیں ۔ تاثیر لیبارٹریز نے برسوں کی تحقیق کے بعد سپرم کی افرائش کے لئے ایکربیان سپرم گروcombinedتھیراپی تیار کیا ہے ۔ یہ کورس شعبہ ریسرچ نے دیسی جڑی بوٹیوں کی آمیزش کے ساتھ طب اسلامی کے اصولوں کے عین مطابق سائنٹیفک طریقوں پر تاثیر لیبارٹریز میں جدید آٹو میٹک مشینری کی مدد سے تیار کیا ہے۔ جس کے استعمال سے ہر طرح کا انفکیشن ختم ہو جاتا ہے اور منی میں جراثیم نسل پیدا ہونے لگتے ہیں ۔ جس سے,oligospermia, necrospermia azoospermiaجیسی بیماری سے مکمل طور پر نجات مل جاتی ہے۔ یہ مردوں کے جرثومہ حیات میں ہونے والی تبدیلیوں کے افرائشی ہارمون HGHکے سپرم کی سطح میں اضافہ کرتا ہے۔ بے اولاد افراد کے سپرم ہوں تو ان کے مادہ تولید میں سپرمز کو نارمل حالت میں لاتا ہے ۔مادہ تولید کی افزائش کو بڑھا کر سپرم کو اولاد کے قابل بناتا ہے۔ سپرم کی پیدائشی کمزوری اور کمی ایسی محرومی ہے جو ایک صحت مند آدمی کو بھی کھوکھلابنا دیتی ہے ان دونوں صورتوں میں یعنی کرم منی کی کمزوری اور اس کے قدرتی تناسب کو درست کر کے اس کے قوام کو ٹھیک کرتا ہے اس میں شامل نہایت ہی قیمتی اورنایاب جڑی بوٹیاں نہ صرف مادہ تولید کو پیدا کرنے اور اسے گاڑھا کرنے میں موثر ہے بلکہ اس میں موجودسپرم کی کمی کو بھی دور کرتا ہے یہ
کورس مادہ تولیداور سپرم سمیت تما م مردانہ امراض جو بانجھ پن کا سبب بنتے ہیں جیسے مادہ تولید میں جراثیم یعنی سپرم کا نہ ہونا، خصیوں کا نا کارہ ہونا، خصیوں اور عضوتناسل کے درمیان نالیوں کا بند ہونا، خصیوں میں انفیکشن ہونا وغیرہ کو نہ صرف ختم کرتا ہے بلکہ ان کو دوبارہ پیدا بھی نہیں ہونے دیتا۔
اینکر:۔ناظرین میں آپ کو بتا چلو
یہ کورسزز 40یوم کے دورانیہ پر مشتمل ہیں اس کورس کا شمار ہمارے پسُت در پسُت صدی نسخہ جات میں ہوتا ہے اس لئے یہ کورس صرف ہمارے ادارے تاثیر دواخانے پر ہی د ستیا ب ہے مرد حضرات کو میں بتاتا چلو کہ وہ پاکستان میں ہے یا دنیا کے کسی بھی ملک میں ہے آپ بذریعہ آڈر یہ کورسزز مانگووا سکتے ہیں۔پاکستان میں ہم بذریعہ V.Pپررسل بھیجتے ہیں اس کے علاوہ آپ خود ہمارے کلینک پر تشریف لا کر خود طلب کر سکتے ہیں۔پاکستان سے باہر دنیا کہ ہر ملک میں ہم بذریعہ ائیر شیب بھیجتے ہیں جہاں ایک خاص بات میں بتاتا چلو ہم پوری دنیامیں ہوم ڈیلوری سروس فراہم کرتے ہیں مطلوبہ کورس آپ کے گھر تک پہنچایا جا سکتا ہے۔ نوٹ( کورس کے بہترین نتائج کے لئے 4سے6ماہ مسلسل استعمال کریں)۔
ناظرین اگر آپ بھی ایکربیان سپرم گرو combined تھیراپی خریدنا چاہتے ہیں تو دیر مت کیجئے بلکہ ابھی کال کر کے اپنا آرڈر بک کروائیں۔ ہمارے ہیلپ لائن نمبرز یہ
ڈاکٹر صاحب سے براہ راست مشورے کے لئے ان نمبر ز پر رابطہ:+92334-9552889
+92321-9552889
+92300-9552889
آپ کی راہنمائی کے لئے میل اور فی میل میڈیکل آفیسرز ہمہ وقت موجود ہیں جن سے آپ اپنی بیماری اور ہر قسم کے مرض کے بارے میں راہنمائی حاصل کر سکتے ہیں جو آپ کو ہر قسم کی راہنمائی فراہم کرئے گے( کلینک ٹائم صبح 9بجے سے لے رات8بجے تک)
میڈیکل آفیسر نمبر1: +92333-5501390
میڈیکل آفیسر نمبر2:۔ +92323-5501390
میڈیکل آفیسرنمبر3: +92336-5777696
میڈیکل آفیسرنمبر4: +92336-5777697
فی میل (لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر1: +92331-5607654
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر2: +92332-5607654
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر3: +92332-5530536
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر4: +92315-5530536
کلینک (Reception landline) نمبرز:۔ +9251-5777696,+9251-5777697,+92515530536,+9251-5773239
نوٹ:۔ آپ اپنی بیماری کے متعلق مکمل معلومات کے ساتھ میل کریں ۔ آپ ہمارے ای میل taseerlabs@gmail.com،taseerdawakhana@gmail.comپر بھی آپ اپناآرڈر بک کروا سکتے ہیں۔
ہمارا ایڈریس ہے: تاثیر دواخانہ i-111:اقبال روڈ، نزد کمیٹی چوک، چٹیاں ہٹیاں، تاثیر چوک راولپنڈی۔مزید معلومات کے لئے وزٹ کیجئے ہماری ویب سائیٹ www.taseerlabs.com,dawakhanataseer.com۔
اینکر:۔بہت بہت شکریہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر صاحب آپ نے ہمارے ناظرین کو ایکربیان سپرم گروcombined تھیراپی کے بارے میں بہترین راہنمائی کی امید ہے کہ ناظرین اس سے بہت زیادہ فائدہ اُٹھائیں گے اور آپ کو اپنی دعاؤں میں یاد رکھیں گے۔ ناظرین۔۔۔۔ یہ تھے بے اولادی کے مشہور روحانی معالج حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر جو کہ ہر قسم کے مردانہ و زنانہ امراض کے ماہر ہیں۔ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر نے آج مردانہ بانجھ پن سے متعلق ہم سب کی بہترین راہنمائی کی۔ امید ہے آپ ضرور ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتوں پر عمل کر کے مردانہ بانجھ پن سے چھٹکارا حاصل کر سکیں گے اور ایسے افراد تک ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتیں پہنچائیں گے جو کہ اولاد کی نعمت سے محروم ہیں تا کہ وہ جلد از جلد حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر سے اپنا علاج کروا کر اپنے آنگین میں خوشیاں بکھیر سکیں۔۔۔۔ اپنا خیال رکھئے گا۔۔۔ اللہ حافظ۔۔

ایکروبیان سپرم گروکمبائنڈ پلس کورس

اینکر:۔اسلام و علیکم۔۔۔ ناظرین امید ہے آپ سب خیریت سے ہوں گے ۔ ناظرین آج ہم نے اپنے پروگرام میں جس شخصیت کو دعوت دی ہے وہ ملک پاکستان کے نامور اور بے اولادی کے مشہور روحانی معالج جو کسی تعارف کے محتاج نہیں جناب حکیم ڈاکٹر طارق محمود تاثیر آج ہم ڈاکٹر صاحب سے جس کورس کے بارے میں پوچھے گے اس کورس کا نام ایکربیان سپرم گروcombined plusکورس ہے ناظرین ڈاکٹر صاحب آپ کو بتائیں گے کہ مردانہ بانجھ پن کسے کہتے ہیں ؟ اس کی وجوہات ، علامات اور علاج اس کے علاوہ اور بہت سی باتیں جن سے مردانہ بانجھ پن سے بچا جا سکتا ہے۔ جیسا کہ بہت سے لوگ جانتے ہیں کہ حکیم ڈاکٹر طارق محمود تاثیر اپنے بہترین ہربل طریقہ علاج کی وجہ سے پوری دنیا میں شہرت یافتہ ہیں تو آئیے ڈاکٹر صاحب سے ملتے ہیں۔
اینکر :۔ڈاکٹر صاحب اسلام و علیکم۔۔۔
ڈاکٹر:۔ وعلیکم اسلام۔۔۔۔
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب سب سے پہلے تو آج آپ ہمارے ناظرین کو اس مرض کے بارے میں بتائیں کے دراصل مردانہ بانجھ پن ہوتا کیا ہے؟
ڈاکٹر:۔بانجھ پن سے مراد میاں بیوی کے درمیان ایک سال تک عمومی و ظیفہ زوجیت اور تعلق قائم رہنے کے باوجود اولاد نہ ہو یا حمل نہ ٹھہر پائے اسے ہم بانجھ پن سے تعبیر کرتے ہیں ۔ جیسا کہ سبھی لوگ جانتے ہیں کہ آدم کی جنس میں مرد کو نر اور عورت کو مادہ کہا جاتا ہے۔ دیگر مقاصد تخلیق کے علاوہ ان کا ایک نہایت ہی بنیادی وصف بقائے نسل انسانی اور تسلسل آدمیت ہے اور جب ان میں کوئی خرابی واقع ہو کر نسل پیدا کرنے کی قابلیت مفقود ہو جائے تو طبی اصطلاح میں اسے بانجھ پن کہا جاتا ہے۔بانجھ پن کے لحاظ سے اس کی تین اقسام ہیں۔
1۔منی میں سپرم کا نہ ہونا azoospermia
2۔منی میں سپرم کی مقدار کا کم ہوناoligospermia
3۔منی میں سپرم کا مردہ ہوناnecrospermia
منی میں سپرم کی غیر موجودگیazoospermia:۔منی میں سپرم کی بالکل غیر موجودگیazoospermiaکہلاتا ہے۔ اس بیماری میں منی میں سپرم بالکل پیدا ہی نہیں ہوتے۔ منی میں سپرم بالکل پیدا نہ ہونے کا سب سے بڑا سبب انفیکشن ہے۔ جس میں پیپ آنا، خون کے سرخ ذرات کا آنا یا پھر بیکٹیریا وغیرہ کی موجودگی ہے۔azoospermiaکی دو اقسام ہیں۔
obstrustcive azoospermia:۔اگر خصیے سائز میں نارمل ہوں اور ہارمون لیول بھی نارمل ہو تو خصیے اور عضوتناسل کے درمیان نالیاں بند ہونے کوobstructive azoospermiaکہتے ہیں۔ یہ مرض خصیوں سے مادہ منی باہر نکالنے والی نالیوں پر چوٹ لگنے یا ان میں نقص پیدا ہونے کی وجہ سے ہوتا ہے ۔اس کے علاوہ ہرنیوں کا آپریشن بھی اس کی خاص وجہ ہے۔
nonobostrictive azoospermia:۔اس بیماری میں منی میں سپرم کا پیدا نہ ہونا خصیوں کی وجہ سے ہوتا ہے۔ جس کی وجہ سے خصیوں میں نقص ہونا اس کے علاوہ خصیوں میں پیدائشی نقص ہونا، ہارمون لیول نارمل نہ ہونا، خصیوں کا انفکیشن اور تیز بخار بھی اس کی وجہ بنتا ہے۔
2۔منی میں سپرم کی کمیoligospermia:۔مردانہ بانجھ پن کی ایک وجہ منی میں سپرم کی تعداد کا کم ہونا ہے۔ سپرم کی مناسب مقدار200ملین سے600ملین ہے ۔ اگر سپرم کی مناسب تعداد120ملین سے کم ہو تو سپرم کی کمی کہا جائے گا۔ اس کی کمی کی کئی حیاتیاتی و ماحولیاتی وجوہات ہو سکتی ہیں ۔ مثلاً کثرت مباشرت ، منی کا کم پیدا ہونا، ان ٹیویز میں نقص ہونا جو سپرم کو خصیوں عضو تناسل کی طرف لے جاتی ہیں۔ خصیوں میں اینٹھن وغیرہ اس کے علاوہ ذہنی جسمانی ، بے چینی ، بے خوابی اور ہارمونز کے توزان میں بگاڑ ہونے سے بھی سپرم کی پیدائش کم ہوتی ہے۔
3۔ منی میں سپرم کا مردہ ہوناnecrospermia:۔necrospermiaبانجھ پن کی ایسی قسم ہے جس میں منی میں سپرم موجود تو ہوتے ہیں لیکن وہ زندہ نہیں ہوتے اور مردہ ہونے کے باعث وہ اس قابل نہیں رہتے کہ حمل قرار پانے کا باعث بن سکیں۔ اگر منی میں40فیصد سپرم مردہ حالت میں ہوں تو یہ بیماریnecrospermiaکہلائے گی۔
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب مردانہ بانجھ پن کی کیا وجوہات ہوتیں ہیں ؟
ڈاکٹر:۔ہمارے معاشرے میں اگر کوئی جوڑا بے اولاد ہوتا ہے تو اس کا سب سے زیادہ الزام عورت کو دیا جاتا ہے حالانکہ بے اولادی صرف عورت کا باعث نہیں بلکہ مرد کی وجہ سے بھی ہو سکتی ہے ۔مردوں میں بہت سی وجوہات پائی جاتی ہے جس کی وجہ سے مرد حضرات بانجھ پن کا شکار ہوتے ہیں۔
گلے کے غدود میں سوزش :۔گلے کے غددو میں سوزش کے باعث مردانہ جرثومے بننے میں رکاوٹ آتی ہے اور بعض حالات میں مرد مکمل بانجھ پن کا شکار بھی ہو جاتا ہے ۔
ٹیسٹیکلزمیں خون کی روانی کا متاثر ہونا:۔سائنسی تحقیق کے مطابق ٹیسٹیکلزمیں موجود خون کی روانی میں کمی کے باعث تولیدی جرثوموں کی افزائش نہیں ہو پاتی ۔
ٹیسٹیکلز کا اپنی جگہ پر موجود نہ ہونا:۔ماہرین کے مطابق بچے کے ٹیسٹیکلز پیٹ میں تشکیل پاتے ہیں اور پیدائش سے کچھ عرصہ قبل ہی یہ اس کی مخصوص جگہ پر آتے ہیں بعض بچوں میں ایک یادونوں ٹیسٹیکلز ہی اپنی جگہ پر نہیں آ پاتے جس کی وجہ سے بچے میں مختلف طبی پیچیدگیاں پیدا ہوتی ہیں جس میں بانجھ پن بھی شامل ہیں۔
ٹیسٹیکل کینسر:۔سائنسد انوں کا کہنا ہے کہ ٹیسٹیکیولرکینسر بھی مردانہ بانجھ پن کی ایک بڑی وجہ ہوتی ہے کینسر کی دیگر اقسام کی طرح اس کا علاج بھی اسی وقت ممکن ہے جب اس مرض کی تشخص ابتدائی سطح پر ہی کر لی جائے ۔کینسر کی یہ قسم میں ٹیسٹیکلزکو شدید متاثر کرتی ہے جس کی وجہ سے مرد نا صرف ہمیشہ کے لئے بانجھ پن کا شکار ہو جاتا ہے بلکہ حق زوجیت کی ادائیگی کی صلاحیت سے بھی محروم ہو جاتا ہے۔
ذیابیطس:۔جدید تحقیق کے مطابق ذیابیطس کا مرض بھی سپرم کی افزائش پر اثر انداز ہوتا ہے۔
آپریشن یا چوٹ:۔کھیل کے دوران کسی حادثے یا آپریشن کے باعث ٹیسٹیکلز testical کو خون پہنچانے والی شر یانوں کو نقصان پہنچتا ہے جس سے تولیدی جرثوموں کی افزائش متاثر ہو سکتی ہے۔
جسمانی معذوری:۔پیشاب کی نالی میں رکاوٹ کے باعث بعض مردوں کا تولیدی مادہ حق زوجیت کے دوران اس کی اصل جگہ پر نہیں پہنچ پاتا جس کے باعث بھی جوڑا اولاد کی نعمت سے محروم رہ سکتا ہے۔
مسلسل زیادہ درجہ حررات میں کام کرنا:۔وہ لوگ جو مسلسل زیادہ درجہ حرارت والے ماحول میں کام کرتے ہیں ان میں بھی بانجھ پن کے کیسز کی تعداد زیادہ دیکھتی گئی ہے۔
آرام کی کمی ، ذہنی دباؤ اور شراب کا استعمال:۔بانجھ پن کی اکثر کیسز نفسیاتی مسائل کے باعث بھی سامنے آتے ہیں جن کی وجوہات بہت زیادہ کام کرنا، آرام بالکل نہ کرنا اور شراب کا بکثرت استعمال کرنا بانجھ پن کا باعث بنتی ہے۔
کیمیائی فیکٹریوں میں کام کرنا:۔جو لوگ کیمیائی فیکٹریوں میں کام کرتے ہیں کیمیکل کے باعث اُن کے جسم کے خلیات ، بافتوں یا کسی مخصوص عضو کو متاثر کرتا ہے اس کیمیکل کی وجہ سے بھی مردانہ بانجھ پن کا شکا ر ہو جاتے ہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب مردانہ بانجھ پن میں مریض کے اند ر کون سے اسباب پائے جاتے ہیں؟
ڈاکٹر:۔مردانہ بانجھ پن کے بہت سے اسباب پائے جاتے ہیں۔
دل کے امراض، خون کی نالیوں میں رکاوٹ ہونا ،ہائی بلڈ پریشر ، ذیابیطس ، موٹاپا ، غذا کے ہضم ہونے اور اس کی جسم میں ترسیل کے مسائل، تمباکو نوشی ، الکوحل اور دیگر منشیات کا استعمال کرنا،پراسٹیٹ کے طاعون کا علاج ، توازن اور حرکت کی خرابی کا مرض ، مدافعتی نظام کا مرکزی اعصابی نظام کو تباہ کرنا،ہارمونز کی بے قاعدگیاں مثلاً ٹیسٹوس ٹیرون کی مقدار میں کمی ،عضوتناسل کی ساخت کے اندر خرابی(spinal)نچلے پیٹ میں کئے جانے والے آپریشن یا زخم جو حرام مغز کو متاثر کرتے ہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب دوران علاج مریض کو کون سی چیزوں سے پرہیز کرنا چاہیے اور کون سی چیزوں کا استعمال کرنا اُس کے لئے مفید ہے؟
ڈاکٹر:۔پرہیز علاج سے بہتر ہے۔
پرہیز:۔آلو مٹر، گوبھی، بیگن، پالک ، چاول، بڑا گوشت، پکوڑے سموسے، اچار چٹنی تمام گرم بادی چٹ پٹی تیز مصالحہ جات تمام گولڈڈرنکس ٹھنڈی اشیاء ، شیو مرغی ۔
استعمال کرنے والی اشیاء:۔کدو، ٹنڈے، توری، مولی، گاجر، شلجم، چھوٹا گوشت ، دودھ، دہی تمام ڈرائی فروٹ، شہد کھجور، کالے سفید چنے دال ماش ۔ مچھلی ، دیسی لیموں فریش فروٹ سیب کینو، مالٹا، آم اور کیلا وغیرہ استعمال کر سکتے ہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب جو مرد اس مرض میں مبتلا ہے اُن مردوں کے لئے آپ کے پاس کوئی تحفہ خاص موجود ہے جس کو استعمال کر کے وہ اس مرض سے بآسانی باہر نکل سکے؟
ڈاکٹر:۔ہمارے ادارے تاثیر دواخانہ کے مایہ ناز ڈاکٹرز، حکماء اور سائنسدانوں نے میری سر پرستی میں برس ہا برس کی تحقیقات اور بانجھ پن کے اصل اسباب اور وجو ہات کو مد نظر رکھ کر اپنی ریسرچ سے ایکربیان سپرم گرو combined plusکورس متعارف کروایا ہے جومرض کی نوعیت کے حساب سے مریض کو دیاجاتاہے جو ہر طرح کے کیمیائی اجزاء سے پاک مکمل طور پر قدرتی دوا ہے اس کا کوئی بھی سائیڈ ایفیکٹ نہیں ہے یہ خالص جڑی بوٹیوں سے تیار شدہ ہیں اور100فیصد نتائج کے حامل ہیں ۔ تاثیر لیبارٹریز نے برسوں کی تحقیق کے بعد سپرم کی افرائش کے لئے ایکربیان سپرم گروcombined plusکورس تیار کیا ہے ۔ یہ کورس شعبہ ریسرچ نے دیسی جڑی بوٹیوں کی آمیزش کے ساتھ طب اسلامی کے اصولوں کے عین مطابق سائنٹیفک طریقوں پر تاثیر لیبارٹریز میں جدید آٹو میٹک مشینری کی مدد سے تیار کیا ہے۔ جس کے استعمال سے ہر طرح کا انفکیشن ختم ہو جاتا ہے اور منی میں جراثیم نسل پیدا ہونے لگتے ہیں ۔ جس سے,oligospermia, necrospermia azoospermiaجیسی بیماری سے مکمل طور پر نجات مل جاتی ہے۔ یہ مردوں کے جرثومہ حیات میں ہونے والی تبدیلیوں کے افرائشی ہارمون HGHکے سپرم کی سطح میں اضافہ کرتا ہے۔ بے اولاد افراد کے سپرم کم ہوں تو ان کے مادہ تولید میں سپرمز کو نارمل حالت میں لاتا ہے ۔مادہ تولید کی افزائش کو بڑھا کر سپرم کو اولاد کے قابل بناتا ہے۔ سپرم کی پیدائشی کمزوری اور کمی ایسی محرومی ہے جو ایک صحت مند آدمی کو بھی کھوکھلابنا دیتی ہے ان دونوں صورتوں میں یعنی کرم منی کی کمزوری اور اس کے قدرتی تناسب کو درست کر کے اس کے قوام کو ٹھیک کرتا ہے اس میں شامل نہایت ہی قیمتی اورنایاب جڑی بوٹیاں نہ صرف مادہ تولید کو پیدا کرنے اور اسے گاڑھا کرنے میں موثر ہے بلکہ اس میں موجودسپرم کی کمی کو بھی دور کرتا ہے یہ
کورس مادہ تولیداور سپرم سمیت تما م مردانہ امراض جو بانجھ پن کا سبب بنتے ہیں جیسے مادہ تولید میں جراثیم یعنی سپرم کا نہ ہونا، خصیوں کا نا کارہ ہونا، خصیوں اور عضوتناسل کے درمیان نالیوں کا بند ہونا، خصیوں میں انفیکشن ہونا وغیرہ کو نہ صرف ختم کرتا ہے بلکہ ان کو دوبارہ پیدا بھی نہیں ہونے دیتا۔یہ کورس 40یوم کے دورانیہ پر مشتمل ہیں اس کورس کا شمار ہمارے پسُت در پسُت صدی نسخہ جات میں ہوتا ہے اس لئے یہ کورس صرف ہمارے ادارے تاثیر دواخانے پر ہی د ستیا ب ہے مرد حضرات کو میں بتاتا چلو کہ وہ پاکستان میں ہے یا دنیا کے کسی بھی ملک میں ہے آپ بذریعہ آرڈر یہ کورس مانگووا سکتے ہیں۔پاکستان میں ہم بذریعہ V.Pپررسل بھیجتے ہیں اس کے علاوہ آپ خود ہمارے کلینک پر تشریف لا کر خود طلب کر سکتے ہیں۔پاکستان سے باہر دنیا کہ ہر ملک میں ہم بذریعہ ائیر شیب بھیجتے ہیں جہاں ایک خاص بات میں بتاتا چلو ہم پوری دنیامیں ہوم ڈیلوری سروس فراہم کرتے ہیں مطلوبہ کورس آپ کے گھر تک پہنچایا جا سکتا ہے۔ نوٹ( کورس کے بہترین نتائج کے لئے 4سے6ماہ مسلسل استعمال کریں)۔
ناظرین اگر آپ بھی ایکربیان سپرم گرو combined plus تھیراپی خریدنا چاہتے ہیں تو دیر مت کیجئے بلکہ ابھی کال کر کے اپنا آرڈر بک کروائیں۔ ہمارے ہیلپ لائن نمبرز یہ
ڈاکٹر صاحب سے براہ راست مشورے کے لئے ان نمبر ز پر رابطہ:+92334-9552889
+92321-9552889
+92300-9552889
آپ کی راہنمائی کے لئے میل اور فی میل میڈیکل آفیسرز ہمہ وقت موجود ہیں جن سے آپ اپنی بیماری اور ہر قسم کے مرض کے بارے میں راہنمائی حاصل کر سکتے ہیں جو آپ کو ہر قسم کی راہنمائی فراہم کرئے گے( کلینک ٹائم صبح 9بجے سے رات8بجے تک ہے )
میڈیکل آفیسر نمبر1: +92333-5501390
میڈیکل آفیسر نمبر2:۔ +92323-5501390
میڈیکل آفیسرنمبر3: +92336-5777696
میڈیکل آفیسرنمبر4: +92336-5777697
فی میل (لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر1: +92331-5607654
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر2: +92332-5607654
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر3: +92332-5530536
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر4: +92315-5530536
کلینک (Reception landline) نمبرز:۔ +9251-5777696,+9251-5777697,+92515530536,+9251-5773239
نوٹ:۔ آپ اپنی بیماری کے متعلق مکمل معلومات کے ساتھ میل کریں ۔ آپ ہمارے ای میل taseerlabs@gmail.com،taseerdawakhana@gmail.comپر بھی آپ اپناآرڈر بک کروا سکتے ہیں۔
ہمارا ایڈریس ہے: تاثیر دواخانہ i-111:اقبال روڈ، نزد کمیٹی چوک، چٹیاں ہٹیاں، تاثیر چوک راولپنڈی۔مزید معلومات کے لئے وزٹ کیجئے ہماری ویب سائیٹ www.taseerlabs.com,dawakhanataseer.com۔
اینکر:۔بہت بہت شکریہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر صاحب آپ نے ہمارے ناظرین کو ایکربیان سپرم گروcombined plusکورس کے بارے میں بہترین راہنمائی کی امید ہے کہ ناظرین اس سے بہت زیادہ فائدہ اُٹھائیں گے اور آپ کو اپنی دعاؤں میں یاد رکھیں گے۔ ناظرین۔۔۔۔ یہ تھے بے اولادی کے مشہور روحانی معالج حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر جو کہ ہر قسم کے مردانہ و زنانہ امراض کے ماہر ہیں۔ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر نے آج مردانہ بانجھ پن سے متعلق ہم سب کی بہترین راہنمائی کی۔ امید ہے آپ ضرور ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتوں پر عمل کر کے مردانہ بانجھ پن سے چھٹکارا حاصل کر سکیں گے اور ایسے افراد تک ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتیں پہنچائیں گے جو کہ اولاد کی نعمت سے محروم ہیں تا کہ وہ جلد از جلد حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر سے اپنا علاج کروا کر اپنے آنگین میں خوشیاں بکھیر سکیں۔۔۔۔ اپنا خیال رکھئے گا۔۔۔ اللہ حافظ۔۔

ایکربیان سپرم گروملٹی پلس تھیراپی

اینکر:۔ اسلام و علیکم۔۔۔ ناظرین امید ہے آپ سب خیریت سے ہوں گے ۔ ناظرین آج ہم نے اپنے پروگرام میں جس شخصیت کو دعوت دی ہے وہ ملک پاکستان کے نامور اور بے اولادی کے مشہور روحانی معالج جو کسی تعارف کے محتاج نہیں جناب حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر آج ہم ڈاکٹر صاحب سے جس کورس کے بارے میں پوچھے گے وہ ہے ایکربیان سپرم گرو ملٹی پلس تھیراپی جس کو استعمال کر کے مرد حضرات اپنے سپرم اکاؤیٹ کو بآسانی بڑھا سکتے ہیں ناظرین ڈاکٹر صاحب آپ کو بتائیں گے کہ مردانہ بانجھ پن ہوتا کیا ہے اس کی علامات اور علاج اس کے علاوہ اور بہت سی باتیں جس سے مردانہ بانجھ پن سے بچا جا سکتا ہے جیسا کہ بہت سے لوگ جانتے ہیں کہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر اپنے بہترین ہربل طریقہ علاج کی وجہ سے پوری دنیا میں شہرت یافتہ ہیں تو آئیے ڈاکٹر صاحب سے ملتے ہیں۔
اینکر :۔ڈاکٹر صاحب اسلام و علیکم۔۔۔
ڈاکٹر:۔ وعلیکم اسلام۔۔۔
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب بانجھ پن کسے کہتے ہیں اور اس کی وجوہات کے بارے میں ہمارے ناظرین کو بتا دیں؟
ڈاکٹر:۔محققین اور اطباء کے نزدیک میاں بیوی کے درمیان ایک سال تک عموی و ظیفہ زوجیت تعلق قائم رہنے کے باوجود اولاد کا نہ ہونا بانجھ پن کہلاتا ہے ۔اولاد کا حصول اور خاندان کی نسلی ترقی ہر انسان کی ضرورت اور مقدس خواہش ہوتی ہے ایک شادی شدہ جو ڑے کی ازدواجی خوشیاں اس وقت تک ادھوری رہتی ہیں جب تک ان کی گود میں اولاد جیسی نعمت موجود نہ ہو۔ اولاد رحمت الٰہی کا ذریعہ ہے اور بحیثیت مسلمان ہمارا ایمان اور یقین ہے کہ اچھی اور صالح اولاد اپنے والدین کے لئے مغفرت و بخشش کا ذریعہ ہے۔بے اولادی کا جب بھی ذکر آئے تو ہمارے ذہنوں میں یہی خیال آتا ہے کہ اس کی وجہ عورت ہے اسی وجہ سے بہت سارے خاندان پریشا ن ہیں اور خواتین کا معاشرتی استحصال بھی ہوتا ہے جب کہ یہ ہرگز ضروری نہیں کہ بے اولادی کی وجہ عورت ہو ، موجودہ دور میں میرا ذاتی مشاہدہ ہے کہ بے اولادی کے اکثر مسائل کی وجہ مرد ہیں ۔ جس کا سبب ان کا بانجھ ہونا، مردانہ کمزوری ، تولیدی جرثوموں کی پیدائشی نہ ہونا یا مطلوبہ مقدار سے کم ہونا اور غیر اسلامی حرکات افعال وحرکات کا مرتکب ہونا ہے۔ مردوں میں بانجھ پن کی بنیادی طبی وجوہات میں موروثی مسائل، تولیدی جرثوموں کی کمی یا عدم موجودگی ، سرعت انزال ،ضعف باہ، کثرت مباشرت ، معدہ کی خرابیوں کی بنا پر جنم لینے والی جنسی بیماریاں جن میں جریان اور احتلام سر فہرست ہیں۔ اس طرح کچھ نفسیاتی وجوہات ہیں ، کاروباری یا مالی پریشانی ، کسی مقدمے یا عدالت کا خوف، دشمن کا خوف، کسی اہم رشتہ یا چیز کا چھن جانا اور اس کی وجہ سے پیدا ہونے والی ذہنی پریشانی ، گھریلو ناچاکی ، میاں بیوی کی باہمی تعلقات میں عدم استحکام و اتفاق ، یاکسی بھی دوسرے غم کی وجہ سے ذہنی مریض بن جانا ۔یہ تمام علامات مر د کے تولید ی عمل میں شدید پریشانی اور رکاوٹ کا باعث بن سکتے ہیں اور جدید سائنس اس سے پوری طرح متفق ہے۔معاشرتی وجوہات میں غلط اور بے راہ روی کے شکار لوگوں کے ساتھ دوستی ، شراب نوشی ، تمباکوو سگریٹ نوشی، لواطت ومشت زنی ، عریاں و فحش مواد کا مطالعہ ، انٹرنیٹ اور ویڈیوز میں بے حیائی پر مبنی مواد دیکھنا ، اپنی منکوحہ یا منکوحہ کو چھوڑ کر غیر عورتوں یا مردوں سے تعلقات کا استوار کر نا وغیرہ شامل ہیں۔مردوں میں ان تمام علامات کی موجودگی کے بعد ، جریان ، پیشاب کے بعدسفید لیسدار قطر ے(جریان) ، جنسی خواہش کا بڑھ جانا مگر انجام نہ دے پانا، یا جنسی خواہش کا انتہائی فقدان ، سر درد ، چڑ چڑا پن ، کام میں دل نہ لگنا ، ڈر اور خوف کا رہنا، اعتماد کی کمی، شکوک و شبہات کا پیدا ہو جانا وغیرہ عام مسائل ہیں ۔
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب مردوں میں بانجھ پن کے کون کون سے اسباب پائے جاتے ہیں؟
ڈاکٹر:۔مردانہ بانجھ پن جنسی قوت کی خرابی کا نام ہے اور جنسی قوت تین قوتوں کا مجموعہ ہے ان تین قوتوں میں سے جب کسی قوت یا فعل میں خرابی ہو گئی تو بانجھ پن پیدا ہو سکتا ہے، ہر وقت کی غیر طبی حالت میں بانجھ پن کی نوعیت بھی مختلف ہو گئی ۔1۔خواہش وجذبے کا نہ ہونا، ، خواہش ، جذبے اور کشش کا تعلق اعصاب سے ہے ۔ اس جذبے میں کمی بیشی کے لئے اعصا ب کو دیکھا جائے گا۔2۔نطفے کی منتقلی کے لئے عضو مخصوص کی کارکردگی کو پیش نظر رکھا جائے گا۔کیونکہ نطفہ اور خواہش دونوں موجود ہوں لیکن متعلقہ مقام تک پہنچانے کے لیے عضو میں ہی جان نہ ہو تو ایسے بانجھ پن کی نوعیت اول سے مختلف ہو گئی۔3۔نطفہ خصیوں testiclesکے تحت تیار ہوتی ہے۔ اس میں نقص واقع ہو تو غدی بانجھ پن تصور ہو گا یہ تینوں مفرد اعضاء اپنی حالت سے ایک دوسرے کو متاثر (طاقتور ، کمزوراور سست)کرتے ہیں۔ جب ان کے افعال میں توازن ہو گا تو جنسی قوت بھی درست ہو گئی۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب مردوں کو مردانہ بانجھ پن میں مبتلا کرنے میں کون کون سے عوامل شامل ہوتے ہیں؟
1۔اعصاب تحریک اور جنسی قوت:۔دماغ و اعصاب احساسات کا مرکز ہیں جو اندر ونی جسم اور بیرونی ماحول میں ہونے والی تبدیلیوں اور محرکات کا احساس کرنے اور حالات کے مطابق عضلات کو حکم رسانی کر کے پسندید گی اور نا پسندیدگی کو حاصل کرتے ہیں ۔ ہضم چہارم کے فضلے کی جب خون میں بہتات ہوتی ہے اس دباؤ کو احساسات ایک خاص لذت کی صورت میں محسوس کرتے ہیں ۔ لذت کی انتہائی صورت اخراج کے وقت حاصل ہوتی ہے ۔ چنانچہ اس دباؤ اور حصول سے نجات کے لیے جنسی اعضاء اعصاب کو حکم دیتے ہیں ۔حکم کا طریقہ یہ ہے کہ اس طرف دوران خون کا رجوع ہو کر عضو مخصوص جس کا زیادہ تر حصہ عضلاتی انسحہ کا بنا ہوتا ہے تناؤ میں آ جاتا ہے پھر اس کی حرکات اور محرکات کے نتیجے میں پیدا ہونے والی حرارت کے اثر سے خصیے اور منی خارج ہوتی ہے۔اخراج منی اور جماع کا یہ فطری طریقہ ہے اور یہ اسی وقت ممکن ہے جب تینوں مفرد اعضاء توازن و صحت کی حالت میں ہوں۔
2۔عضلاتی تحریک اور جنسی بیماری:۔جسم انسانی میں ارادی اور غیر ارادی حرکات کے ذمہ دار عضلات فطری صورت میں مضر اثرات سے بچنے کے لیے اور مر طوبات اور مطلوبات کے حصول کے لیے اعصاب تحت ایک ترتیب و سلیقے سے کام کرتے ہیں لیکن انتہائی موافق حالات پا کر تیزی میں آ جاتے ہیں ۔ اسے ہم عضلاتی تحریک کہتے ہیں ہر تحریک میں درجہ بہ درجہ جسم کے اندر تبدیلیوں میں اضافہ ہوتا رہتا ہے ۔غیر طبی تحریک ہو جائے تو ایک حد تک دماغ کے کنٹرول سے نکل کر جسم اور جنسی قوت پر اثرات مرتب کرتے ہیں۔ عضوpenisمیں سختی اور تناؤ بڑھ جاتا ہے ۔تحریک کی شدت اور سوزش کی صورت میں جنسی اعضاء کی طرف خون کا دورانیہ زیادہ ہو جاتا ہے۔ سوتے ہوئے ایک طرف دماغ کے عضلاتی پردوں میں تحریک سے خیالات کی تحریک بگڑتی ہے اور خصیوں کے عضلات پردوں میں دباؤ سے منی کا اخراج ہوتا ہے۔ اسے ہم احتلام کا نام دیتے ہیں ایسے مریض حالت اغلام ، کثرت مباشرت جیسے افعال سے آغاز جوانی میں اپنی منی خشک یا خراب کر دیتے ہیں ۔ دماغ کی صالح رطوبات بوجہ تحلیل فنا ہوتی رہتی ہیں ۔غدود ، خصیے تسکین کی وجہ سے اپنا کام روک دیتے ہیں یا نسبتاً کم کر دیتے ہیں نتیجتاًمنی کی مطلوبہ مقدار اور کوالٹی برقرار نہیں رہتی ۔ جس بنا پر اس میں سپرم پیدا نہیں ہوتے بلکہ جو زندہ ہوں وہ مر جاتے ہیں۔
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب اولاد سے محروم لوگوں کو آپ کچھ مشورہ دیں تا کہ وہ اس پر عمل کر کے خوشگوار زند گی گزار سکے؟
ڈاکٹر:۔شادی کے بعد ہر مرد اور عورت کی یہی خواہش ہوتی ہے کہ اُن کے گھر میں بھی ایک ننھا منا بچہ ان کی گرہستی کے چمن میں کھلے ۔ ہرمرد کی یہی آرزو ہوتی ہے کہ اس بچے کے روپ میں اس کا خاندانی سلسلہ پھلے پھولے اور پیڑی در پیڑی اس کا نام بھی چلتا رہے ، لیکن اولاد ہونے پر گھر کی خوشی واپس آ جائے ، اس کے لیے کئی بھولے بھالے لوگ تر ڈھونگی سادھوؤں ، سنتوں اور گنڈے تعویز والوں کے چکر میں پڑ کر اپنا وقت اور پیسہ بیکار میں ہی گنوا دیتے ہیں۔ جن کے یہاں اولاد نہیں ہوتی تو انھیں سب سے پہلے اپنے یہاں اولاد نہ ہونے کی وجہ کا پتہ لگانا چاہیے ۔ زیادہ تر مرد عورت کو ہی اس کا ذمہ دار ٹھہراتے ہیں ، لیکن اس کے ذمہ دار وہ خود بھی ہو سکتے ہیں، جبکہ وہ اولاد کے لیے دوسری شادی بھی کر لیتے ہیں ۔ ایسی حالت میں ان کی زندگی اور بھی اجیرن ہو جاتی ہے ۔ان بے اولاد لوگوں کو ہماری یہی صلاح ہے کہ سب سے پہلے شوہر بیوی دونوں ہی اپنی اچھی طرح جسمانی جانچ کر ائیں تا کہ اصلی کمی کا پتہ چل سکے۔ پھر اسی کمی کا علاج کسی اچھے حکیم سے کرائیں تاکہ جلد ہی صاحب اولاد بن سکیں۔ یوں تو جگہ جگہ آپ کو اولاد حاصل کرنے کے لیے بڑے بڑے اشتہار دیکھنے کو مل جائیں گے، لیکن آپ یہ یاد رکھیں کہ اصلی علاج وہی ہے جس سے کچھ فائدے کی امید ہو اس کے لیے ہم آ پ کو صحیح مشورہ دیں گے تاکہ آپ بہترین اور صحیح علاج کریں گے ہمارا یہی مقصد رہے گا کہ آپ اِدھر اُدھر نہ بھٹکیں ، فضول میں اپنا پیسہ اور وقت برباد نہ کریں اور صحیح فائدہ حاصل کر سکیں ۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب دوران علاج مریض کو کون سی چیزوں سے پرہیز کرنا چاہیے اور کون سی چیزوں کا استعمال کرنا اُس کے لئے مفید ہے؟
ڈاکٹر:۔پرہیز علاج سے بہتر ہے۔
پرہیز:۔آلو مٹر، گوبھی، بیگن، پالک ، چاول، بڑا گوشت، پکوڑے سموسے، اچار چٹنی تمام گرم بادی چٹ پٹی تیز مصالحہ جات تمام گولڈڈرنکس ٹھنڈی اشیاء ، شیو مرغی ۔
استعمال کرنے والی اشیاء:۔کدو، ٹنڈے، توری، مولی، گاجر، شلجم، چھوٹا گوشت ، دودھ، دہی تمام ڈرائی فروٹ، شہد کھجور، کالے سفید چنے دال ماش ۔ مچھلی ، دیسی لیموں فریش فروٹ سیب کینو، مالٹا، آم اور کیلا وغیرہ استعمال کر سکتے ہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب جو مرد اس مرض میں مبتلا ہے اُن مردوں کے لئے آپ کے پاس کوئی تحفہ خاص موجود ہے جس کو استعمال کر کے وہ اس مرض سے بآسانی باہر نکل سکے؟
ڈاکٹر:۔ہمارے ادارے تاثیر دواخانہ کے مایہ ناز ڈاکٹرز، حکماء اور سائنسدانوں نے میری سر پرستی میں برس ہا برس کی تحقیقات اور بانجھ پن کے اصل اسباب اور وجو ہات کو مد نظر رکھ کر اپنی ریسرچ ایکربیان سپرم گرو ملٹی پلس کورس کو متعارف کراویاہے جو ہر طرح کے کیمیائی اجزاء سے پاک مکمل طور پر قدرتی دوا ہے اس کا کوئی بھی سائیڈ ایفیکٹ نہیں ہے یہ خالص جڑی بوٹیوں سے تیار شدہ ہے اور100فیصد نتائج کا حامل ہے ۔ تاثیر لیبارٹریز نے برسوں کی تحقیق کے بعد سپرم کی افرائش کے لئے ایسا کورس تیار کیا ہے جس کا نام ایکربیان سپرم گرو ملٹی پلس تھیراپی ہے ۔ یہ کورس شعبہ ریسرچ نے دیسی جڑی بوٹیوں کی آمیزش کے ساتھ طب اسلامی کے اصولوں کے عین مطابق سائنٹیفک طریقوں پر تاثیر لیبارٹریز میں جدید آٹو میٹک مشینری کی مدد سے تیار کیا ہے۔ جس کے استعمال سے ہر طرح کا انفکیشن ختم ہو جاتا ہے اور منی میں جراثیم نسل پیدا ہونے لگتے ہیں ۔ جس سے,oligospermia, necrospermia azoospermiaجیسی بیماری سے مکمل طور پر نجات مل جاتی ہے۔ یہ مردوں کے جرثومہ حیات میں ہونے والی تبدیلیوں کے افرائشی ہارمون HGHکے سپرم کی سطح میں اضافہ کرتا ہے۔ بے اولاد افراد کے سپرم کم ہوں تو ان کے مادہ تولید میں سپرمز کو نارمل حالت میں لاتا ہے ۔مادہ تولید کی افزائش کو بڑھا کر سپرم کو اولاد کے قابل بناتا ہے۔ سپرم کی پیدائشی کمزوری اور کمی ایسی محرومی ہے جو ایک صحت مند آدمی کو بھی کھوکھلابنا دیتی ہے ان دونوں صورتوں میں یعنی کرم منی کی کمزوری اور اس کے قدرتی تناسب کو درست کر کے اس کے قوام کو ٹھیک کرتا ہے اس میں شامل نہایت ہی قیمتی اورنایاب جڑی بوٹیاں نہ صرف مادہ تولید کو پیدا کرنے اور اسے گاڑھا کرنے میں موثر ہے بلکہ اس میں موجود سپرم کی کمی کو بھی دور کرتا ہے یہ کورس مادہ تولیداور سپرم سمیت تما م مردانہ امراض جو بانجھ پن کا سبب بنتے ہیں جیسے مادہ تولید میں جراثیم یعنی سپرم کا نہ ہونا، خصیوں کا نا کارہ ہونا، خصیوں اور عضوتناسل کے درمیان نالیوں کا بند ہونا، خصیوں میں انفیکشن ہونا وغیرہ کو نہ صرف ختم کرتا ہے بلکہ ان کو دوبارہ پیدا بھی نہیں ہونے دیتا۔ایکربیان سپرم گرو ملٹی پلس تھیراپی 90یوم کے دورانیہ پر مشتمل ہے ایکربیان سپرم گرو ملٹی پلس تھیراپی کا شمار ہمارے پشت در پشت صدی نسخہ جات میں ہوتا ہے اس لئے یہ کورس صرف ہمارے ادارے تاثیر دواخانے پر ہی د ستیا ب ہے مرد حضرات کو میں بتاتا Sperm countچلو کہ وہ پاکستان میں ہے یا دنیا کے کسی بھی ملک میں ہے آپ بذریعہ آرڈر ایکربیان سپرم گرو ملٹی پلس تھیراپی مانگووا سکتے ہیں۔پاکستان میں ہم بذریعہ V.Pپررسل بھیجتے ہیں اس کے علاوہ آپ خود ہمارے کلینک پر تشریف لا کر خود طلب کر سکتے ہیں۔پاکستان سے باہر دنیا کہ ہر ملک میں ہم بذریعہ ائیر شیب بھیجتے ہیں جہاں ایک خاص بات میں بتاتا چلو ہم پوری دنیا میں ہوم ڈیلوری سروس فراہم کرتے ہیں مطلوبہ کورس آپ کے گھر تک پہنچایا جا سکتا ہے۔ نوٹ( کورس کے بہترین نتائج کے لئے 4سے6ماہ مسلسل استعمال کریں)
ناظرین اگر آپ بھی ایکربیان سپرم گرو ملٹی پلس تھیراپی خریدنا چاہتے ہیں تو دیر مت کیجئے بلکہ ابھی کال کر کے اپنا آرڈر بک کروائیں۔ ہمارے ہیلپ لائن نمبرز یہ
ڈاکٹر صاحب سے براہ راست مشورے کے لئے ان نمبر ز پر رابطہ:+92334-9552889 +92321-9552889
+92300-9552889
آپ کی راہنمائی کے لئے میل اور فی میل میڈیکل آفیسرز ہمہ وقت موجود ہیں جن سے آپ اپنی بیماری اور ہر قسم کے مرض کے بارے میں راہنمائی حاصل کر سکتے ہیں جو آپ کو ہر قسم کی راہنمائی فراہم کرئے گے( کلینک ٹائم صبح 9بجے سے لے رات8بجے تک)
میڈیکل آفیسر نمبر1: +92333-5501390
میڈیکل آفیسر نمبر2:۔ +92323-5501390
میڈیکل آفیسرنمبر3: +92336-5777696
میڈیکل آفیسرنمبر4: +92336-5777697
میڈیکل آفیسرنمبر5: +92332-5530536
میڈیکل آفیسرنمبر6: +92315-5530536
فی میل (لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر1: +92331-5607654
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر2: +92332-5607654
کلینک (Reception landline) نمبرز:۔
+9251-5777696,+9251-5777697,+92515530536,+9251-5773239
نوٹ:۔ آپ اپنی بیماری کے متعلق مکمل معلومات کے ساتھ میل کریں ۔ آپ ہمارے ای میل taseerlabs@gmail.com،taseerdawakhana@gmail.comپر بھی آپ اپنا آرڈر بک کروا سکتے ہیں۔
ہمارا ایڈریس ہے: تاثیر دواخانہ i-111:اقبال روڈ، نزد کمیٹی چوک، چٹیاں ہٹیاں، تاثیر چوک راولپنڈی۔مزید معلومات کے لئے وزٹ کیجئے ہماری ویب سائیٹ www.taseerlabs.com,dawakhanataseer.com۔
اینکر:۔بہت بہت شکریہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر صاحب آپ نے ہمارے ناظرین کو ایکربیان سپرم گرو ملٹی پلس تھیراپی کے بارے میں بہترین راہنمائی کی امید ہے کہ ناظرین اس سے بہت زیادہ فائدہ اُٹھائیں گے اور آپ کو اپنی دعاؤں میں یاد رکھیں گے۔ ناظرین۔۔۔۔ یہ تھے بے اولادی کے مشہور روحانی معالج حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر جو کہ ہر قسم کے مردانہ و زنانہ امراض کے ماہر ہیں۔ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر نے آج مردانہ بانجھ پن سے متعلق ہم سب کی بہترین راہنمائی کی۔ امید ہے آپ ضرور ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتوں پر عمل کر کے مردانہ بانجھ پن سے چھٹکارا حاصل کر سکیں گے اور ایسے افراد تک ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتیں پہنچائیں گے جو کہ اولاد کی نعمت سے محروم ہیں تا کہ وہ جلد از جلد حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر سے اپنا علاج کروا کر اپنے آنگین میں خوشیاں بکھیر سکیں۔۔۔۔ اپنا خیال رکھئے گا۔۔۔ اللہ حافظ۔۔

طلائی سپرم گرو کورس

اینکر:۔ اسلام و علیکم۔۔ ناظرین۔۔۔ا مید ہے آپ سب خیریت سے ہوں گے۔ ناظرین آج ہم نے اپنے پروگرام میں جس شخصیت کو دعوت دی ہے وہ ملک پاکستان کے نامور اور بے اولادی کے مشہور روحانی معالج جو کسی تعارف کے محتاج نہیں جناب حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر آج ہم ڈاکٹر صاحب سے جس کورس کے بارے میں پوچھے گے اس کورس کا نام طلائی سپرم گرو کورس ہے جس کو استعمال کرکے مرد اپنے سپرم اکاؤیٹ کو بآسانی بڑھا سکتے ہیں اس کے علاوہ ڈاکٹر صاحب آپ کو بتائے گے کہ مردانہ نانجھ پن کسے کہتے ہیں اس کی وجوہات، علامات اور علاج اور اس کے علاوہ اور بہت سی باتیں جن پر عمل کر کے آپ بانجھ پن سے بچ سکتے ہیں جیسا کہ بہت سے لوگ جانتے ہیں کہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر اپنے بہترین ہربل طریقہ علاج کی وجہ سے پوری دنیا میں شہرت یافتہ ہیں تو آئیے ڈاکٹر صاحب سے ملتے ہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب اسلام و علیکم ۔۔۔
ڈاکٹر:۔ وعلیکم سلام ۔۔۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب مردانہ بانجھ پن کسے کہتے ہیں ؟ جس کی وجہ سے مردذہنی مریض بن جاتے ہیں؟
ڈاکٹر؛۔شادی کے بعد ایک سال تک عمومی زوجیت کے باوجود اولاد نہ پیدا ہونا بانجھ پن کہلاتا ہے اس مرض میں مبتلا مرد حضرات زیادہ ہوتے ہیں۔بانجھ پن کی تین اقسام ہیں جس میں مرد حضرات مبتلا ہوتے ہیں۔
1 ۔منی میں سپرم کی غیر موجودگی azoospermia
2۔منی میں سپرم کی کمی oligospermia
3۔منی میں سپر م کا مردہ ہونا necrospermia
منی میں سپرم کی غیرموجودگی :۔ منی میں سپرم کا بالکل موجود نہ ہونا azoospermiaکہلاتا ہے اس بیماری میں سپرم بالکل پیدا ہی نہیں ہوتے ۔ منی میں سپرم بالکل پیدا نہ ہونے کا سب سے بڑا سبب انفکیشن ہے جس میں پیپ آنا، خون کے سرخ ذرات کا آنا پھر بیکٹیریا وغیرہ کی موجودگی ہے۔azoospermiaکی دو اقسام ہیں۔
i۔obstrustctive azoospermia
ii۔nonobostrictive azoospermia
منی میں سپرم کی کمی:۔ مردانہ بانجھ پن کی ایک اور بنیادی وجہ مادہ منویہ میں سپرم کی تعداد کا مطلوبہ مقدار سے کم ہونا ہے سپرم کی مناسب مقدار200ملین سے600ملین ہے ۔ اگرسپرم کی مناسب مقدار120ملین سے کم ہو تو یہ بیماریoligospermiaکہلائے گی۔
منی میں سپرم کا مردہ ہونا:۔necrospermiaبانجھ پن کی ایسی قسم ہے جس میں مادہ منویہ میں سپرم موجود تو ہوتے ہیں لیکن وہ زندہ نہیں ہوتے اور مردہ ہونے کے باعث وہ اس قابل نہیں ہوتے کہ حمل قرار پائے اگر منی میں چالیس فیصد سپرم مردہ حالت میں ہوں تو یہ Image result for INFERTILITY SPERM PICSبیماریnecrospermiaکہلائے گی۔
کچھ مردوں کو حقیقت میں کوئی بیماری نہیں ہوتی۔ چالاک اور بازاری حکیم ان کی اس کمزوری سے فائدہ اٹھاکر ان کے وہم کو بڑھاتے ہیں اور صحت مند انسان کو بھی مریض بنا دیتے ہیں ۔ایسے نوجوان اپنی لا علمی کی وجہ سے کبھی کبھی خود کشی بھی کر لیتے ہیں ، کیونکہ وہ سمجھتے ہیں کہ ان کی زندگی اب بیکار ہو گئی ہے اور اپنی پوری تیاری پر نہیں آ سکتے ، مگر یہ ان کی بھول ہے ایسے مریضوں کو ہم بغیر کسی دوا کی خوراک کھلائے ان کا یہ وہم دور کر کے ان کی ازدواجی زندگی کو پر مسرت بنا سکتے ہیں ۔ اس بارے میں مناسب مشورہ دے کر ان کو ٹھیک کر دیتے ہیں ، علاج کے متعلق بغیر فیس مشورہ کے لیے حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر سے ملیں ۔
اینکر :، ڈاکٹر صاحب منی کی پیدائش کہاں پر ہوتیں ہیں؟
داکٹر:۔مرد کی زندگی میں سب سے زیادہ قیمتی جوہر منی ہی ہے، جو سارے مرد اور عورتوں کو پیدا کر تی ہے، یہ گاڑھے مٹیالے،بھورے اور سفید رنگ کا ایک لیس ہوتا ہے اور یہ جسم کی کسی ایک ہی جگہ پر پیدا نہیں ہوتا۔ رجوع ہونے کی حالت میں جب منی کے جراثیم ، منی کی نالیوں سے ہوتے ہوئے پیشاب کے راستے سے گرنے کی حالت میں ہوتے ہیں تو اسی وقت ان میں پروٹین آ کر مل جاتا ہے ۔منی کی جگہ سے ایک لیس دار ہلکے پیلے رنگ کا لیس پیدا ہوتا ہے، جس میں صابو دانے کی طرح چھوٹے چھوٹے دانے تیرتے رہتے ہیں اسی حالت میں مرد کے جسم میں منی پیدا ہوتی ہے اور منی کا گاڑھا پن اس بات پر منحصر ہے کہ جسم کے کس حصہ سے کس وقت کس حالت میں لیس آ کر ملتا ہے۔
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب منی کا پتلا ہونا بھی مردانہ بانجھ پن کا سبب بنتا ہے؟
ڈاکٹر:۔منی کے بارے میں عام طور پر یہی خیال ہے کہ یہ زیادہ سے زیادہ گاڑھی اور لیس دار ہونی چاہیے، پتلے اور چپچپے پانی جیسی منی کمزوری اورمرض کی وجہ مانی جاتی ہے کیونکہ پتلی منی میں کم ٹھہرنے اور جماع میں طاقت کی کمی مانی جاتی ہے کہا جاتا ہے کہ پتلی منی سے ٹھہرنے میں کامیابی اور عورت کی خواہش پوری نہیں ہو پاتی اور نہ ہی مرد میں پورا جوش ہو پاتا ہے ۔ اگر کسی کو پتلی منی کی شکایت ہو تو اسے جسمانی کمزوری بھی محسوس ہوتی ہے ، جس کی وجہ سے اس میں کام کی خواہش کی کمی بھی پائی جاتی ہے اس لیے ایسے مرد کو کسی اچھے ڈاکٹر یا حکیم سے اپنی منی کی جانچ کر وایا کر اس کا علاج کروانا چاہیے ۔حکمیوں کے پاس اس طرح کی بہت سے دوائیاں موجود ہوتی ہیں جن کے استعمال سے منی گاڑھی ہو جاتی ہے ۔دراصل گاڑھی منی ہی جسم کی جنسی طاقت اور پھرتی کا باعث ہے اور اس کی حفاظت کرنا بہت ضروری ہے۔ زیادہ منی ضائع ہو جانے کی وجہ سے مرد کمزور ہو جاتا ہے کثرت رجوع سے بھی منی کمزور اور پتلی ہو جاتی ہے اس لیے دوسری بار رجوع کے لیے مناسب وقت کا فرق رکھنا بہت ضروری ہے آدمی کے جسم کی بناوٹ ہی ایسی ہوتی ہے کہ زیادہ منی اکٹھا ہونے پر خواب میں نکل جاتی ہے، اس کو روکنے سے بھی بہت سے Related imageامراض پیدا ہو سکتے ہیں ۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب بچہ پیدا ہونے کے لیے کتنے سپرم ہونے چاہیے ؟بیٹے کے لیے صحت مند سپرم ضروری ہیں کیا؟
ڈاکٹر :۔ اصولی طور پر بچہ پیدا کرنے کے لیے صرف ایک سپرم کی ضرورت ہے مگر ایک سپرم کے انڈے تک پہنچنے کے لیے کم از کم تین کروڑ سے زیادہ سپرم چائیں ۔ بہت سے سپرم راستے میں مر جاتے ہیں تھوڑے ہی انڈے تک پہنچتے ہیں ان میں سے صرف ایک سپرم عورت کو حاملہ کرتا ہے۔ ٹیسٹ ٹیوب کی پیدائش کے لیے صرف50 ہزار سپرم سے بھی بچہ ہو سکتا ہے ۔ایک مرد جب منزل ہوتا ہے تو ایک انزال میں اوسطاً 40کروڑ سپرم ہوتے ہیں مگر یہ سارے صحت مند نہیں ہوتے ۔ایک دلچسپ حقیقت یہ ہے کہ اگر صحت مند سپرم کی تعداد زیادہ ہو گی تو عموماً لڑکا پیدا ہو تا ہے اور اگر تعداد کم ہو گی تو لڑکی پیدا ہو تی ہے۔ جب مرد کے پینس سے منی خارج ہوتی ہے تو ایک اخراج میں اوسطاً 40کروڑ سپرم ہوتے ہیں مگر یہ سارے سپرم صحت مند نہیں ہوتے جس کی وجہ سے بچہ پیدا نہیں ہو پاتا۔ تاہم آج کے دور میں ادویات کی مدد سے انھیں بہتر کیا جا سکتا ہے اس کے لیے آج ہی حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر سے رابطہ کریں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب وہ کونسی ایسی علامات ہیں جن کی بنا پر ہم اس مرض کی تشخص کرتے ہیں ؟ یعنی ہم کیسے کہہ سکتے ہیں کہ فلاں Image result for INFERTILITY SPERM PICSمرد کو بانجھ پن ہے؟
ڈاکٹر:۔مردانہ بانجھ کی تشخص عموماً لیبارٹری ٹیسٹ سے کی جاتی ہے جس میں مریض کاsemen anaylsis ٹیسٹ کیا جاتا ہے ۔ اس ٹیسٹ کی مدد سے مریض میں بانجھ پن کی بآسانی تشخص کی جاتی ہے اور اس رپورٹ کی مدد سے مریض میں بانجھ پن کی نوعیت کا بھی پتہ چلایا جاتا ہے جیسے azoospermiaیعنی منی میں سپرم کا بالکل نہ ہوناoligospermiaیعنی منی میں سپرم کا مطلوبہ تعداد سے کم ہوناnecrospermiaیعنی منی میں سپرم تو موجود ہوں لیکن یہ مردہ حالت میں ہوں یہی تینوں قسمیں ہیں جن سے مردانہ بانجھ پن کی تشخص کی جاتی ہے اور انہیں کی بنا پر ہم کہتے ہیں کہ آیا مریض کو کس نوعیت کا بانجھ ہے۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب جیسا کہ آپ بے اولادی کے مشہور و معروف روحانی معالج کا درجہ رکھتے ہیں اور اپنے قدرتی طریقہ علاج کی وجہ سے پوری دنیا میں مشہور و معروف شخصیت ہیں آج آپ ہمارے ناطرین کو بتائیں کہ کیا طب میں مردانہ بانجھ پن کا کوئی علاج موجود ہے؟ اور اگر علاج ہے تو وہ ہمارے ناظرین کو بتائیں تا کہ مردانہ بانجھ پن کے شکار مرد و خواتین اس سے نجات پا کر اپنی دیرینہ خواہش یعنی اولاد کی نعمت سے مالامال ہو سکیں۔
ڈاکٹر:۔سب سے پہلے تو میں ناطرین کو یہ بتانا چاہتا ہوں کہ مردانہ بانجھ پن مردوں مین اولاد کا نہ ہونا ایک قابل علاج مرض ہے۔ اور مردانہ بانجھ پن کے لیے طبی علاج یعنی ہربل طریقہ علاج ہی سب سے بہتر اور پُر اثر علاج ہے جو کہ بانجھ پن کا100فیصد خاتمہ کر کے اولاد کی نعمت سے محروم جوڑوں کو قابل اولاد بناتا ہے اور دوسری بات یہ ہے کہ قدرتی ہربل طریقہ علاج ہی ایسا علاج ہے جس کے رزلٹس مستقل ہوتے ہیں اور اس کا کسی بھی قسم کا کوئی سائیڈ ایفکیٹ بھی نہیں ہوتا۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب دوران علاج مریض کو کون سی چیزوں سے پرہیز کرنا چاہیے اور کون سی چیزوں کا استعمال کرنا اُس کے لئے مفید ہے؟
ڈاکٹر:۔پرہیز علاج سے بہتر ہے۔
پرہیز:۔آلو مٹر، گوبھی، بیگن، پالک ، چاول، بڑا گوشت، پکوڑے سموسے، اچار چٹنی تمام گرم بادی چٹ پٹی تیز مصالحہ جات تمام گولڈڈرنکس ٹھنڈی اشیاء ، شیو مرغی ۔
استعمال کرنے والی اشیاء:۔کدو، ٹنڈے، توری، مولی، گاجر، شلجم، چھوٹا گوشت ، دودھ، دہی تمام ڈرائی فروٹ، شہد کھجور، کالے سفید چنے دال ماش ۔ مچھلی ، دیسی لیموں فریش فروٹ سیب کینو، مالٹا، آم اور کیلا وغیرہ استعمال کر سکتے ہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب جو مرد اس مرض میں مبتلا ہے اُن مردوں کے لئے آپ کے پاس کوئی تحفہ خاص موجود ہے جس کو استعمال کر کے وہ اس مرض سے بآسانی باہر نکل سکے؟
ڈاکٹر:۔ہمارے ادارے تاثیر دواخانہ کے مایہ ناز ڈاکٹرز، حکماء اور سائنسدانوں نے میری سر پرستی میں برس ہا برس کی تحقیقات اور بانجھ پن کے اصل اسباب اور وجو ہات کو مد نظر رکھ کر اپنی ریسرچ سے طلائی سپرم گرو کورس متعارف کروایا ہے جومرض کی نوعیت کے حساب سے مریض کو دیاجاتاہے جو ہر طرح کے کیمیائی اجزاء سے پاک مکمل طور پر قدرتی دوا ہے اس کا کوئی بھی سائیڈ ایفیکٹ نہیں ہے یہ خالص جڑی بوٹیوں سے تیار شدہ ہیں اور100فیصد نتائج کے حامل ہیں ۔ تاثیر لیبارٹریز نے برسوں کی تحقیق کے بعد سپرم کی افرائش کے لئے طلائی سپرم گرو کورس تیار کیا ہے ۔ یہ کورس شعبہ ریسرچ نے دیسی جڑی بوٹیوں کی آمیزش کے ساتھ طب اسلامی کے اصولوں کے عین مطابق سائنٹیفک طریقوں پر تاثیر لیبارٹریز میں جدید آٹو میٹک مشینری کی مدد سے تیار کیا ہے۔ جس کے استعمال سے ہر طرح کا انفکیشن ختم ہو جاتا ہے اور منی میں جراثیم نسل پیدا ہونے لگتے ہیں ۔Image result for INFERTILITY SPERM PICS جس سے,oligospermia, necrospermia azoospermiaجیسی بیماری سے مکمل طور پر نجات مل جاتی ہے۔ یہ مردوں کے جرثومہ حیات میں ہونے والی تبدیلیوں کے افرائشی ہارمون HGHکے سپرم کی سطح میں اضافہ کرتا ہے۔ بے اولاد افراد کے سپرم کم ہوں تو ان کے مادہ تولید میں سپرمز کو نارمل حالت میں لاتا ہے ۔مادہ تولید کی افزائش کو بڑھا کر سپرم کو اولاد کے قابل بناتا ہے۔ سپرم کی پیدائشی کمزوری اور کمی ایسی محرومی ہے جو ایک صحت مند آدمی کو بھی کھوکھلابنا دیتی ہے ان دونوں صورتوں میں یعنی کرم منی کی کمزوری اور اس کے قدرتی تناسب کو درست کر کے اس کے قوام کو ٹھیک کرتا ہے اس میں شامل نہایت ہی قیمتی اورنایاب جڑی بوٹیاں نہ صرف مادہ تولید کو پیدا کرنے اور اسے گاڑھا کرنے میں موثر ہے بلکہ اس میں موجودسپرم کی کمی کو بھی دور کرتا ہے یہ
کورس مادہ تولیداور سپرم سمیت تما م مردانہ امراض جو بانجھ پن کا سبب بنتے ہیں جیسے مادہ تولید میں جراثیم یعنی سپرم کا نہ ہونا، خصیوں کا نا کارہ ہونا، خصیوں اور عضوتناسل کے درمیان نالیوں کا بند ہونا، خصیوں میں انفیکشن ہونا وغیرہ کو نہ صرف ختم کرتا ہے بلکہ ان کو دوبارہ پیدا بھی نہیں ہونے دیتا۔یہ کورس 120یوم کے دورانیہ پر مشتمل ہیں اس کورس کا شمار ہمارے پشت در پشت صدی نسخہ جات میں ہوتا ہے اس لئے یہ کورس صرف ہمارے ادارے تاثیر دواخانے پر ہی د ستیا ب ہے مرد حضرات کو میں بتاتا چلو کہ وہ پاکستان میں ہے یا دنیا کے کسی بھی ملک میں ہے آپ بذریعہ آرڈر یہ کورس مانگووا سکتے ہیں۔پاکستان میں ہم بذریعہ V.Pپررسل بھیجتے ہیں اس کے علاوہ آپ خود ہمارے کلینک پر تشریف لا کر خود طلب کر سکتے ہیں۔پاکستان سے باہر دنیا کہ ہر ملک میں ہم بذریعہ ائیر شیب بھیجتے ہیں جہاں ایک خاص بات میں بتاتا چلو ہم پوری دنیامیں ہوم ڈیلوری سروس فراہم کرتے ہیں مطلوبہ کورس آپ کے گھر تک پہنچایا جا سکتا ہے۔ نوٹ( کورس کے بہترین نتائج کے لئے 4سے6ماہ مسلسل استعمال کریں)۔
ناظرین اگر آپ بھی طلائی سپرم گرو کورس خریدنا چاہتے ہیں تو دیر مت کیجئے بلکہ ابھی کال کر کے اپنا آرڈر بک کروائیں۔ ہمارے ہیلپ لائن نمبرز یہ
ڈاکٹر صاحب سے براہ راست مشورے کے لئے ان نمبر ز پر رابطہ:+92334-9552889
+92321-9552889
+92300-9552889
آپ کی راہنمائی کے لئے میل اور فی میل میڈیکل آفیسرز ہمہ وقت موجود ہیں جن سے آپ اپنی بیماری اور ہر قسم کے مرض کے بارے میں راہنمائی حاصل کر سکتے ہیں جو آپ کو ہر قسم کی راہنمائی فراہم کرئے گے( کلینک ٹائم صبح 9بجے سے رات8بجے تک ہے )
میڈیکل آفیسر نمبر1: +92333-5501390
میڈیکل آفیسر نمبر2:۔ +92323-5501390
میڈیکل آفیسرنمبر3: +92336-5777696
میڈیکل آفیسرنمبر4: +92336-5777697
میڈیکل آفیسرنمبر5: +92332-5530536
میڈیکل آفیسر نمبر6: +92315-5530536
فی میل (لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر1: +92331-5607654
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر2: +92332-5607654

کلینک (Reception landline) نمبرز:۔ +9251-5777696,+9251-5777697,+92515530536,+9251-5773239
نوٹ:۔ آپ اپنی بیماری کے متعلق مکمل معلومات کے ساتھ میل کریں ۔ آپ ہمارے ای میل taseerlabs@gmail.com،taseerdawakhana@gmail.comپر بھی آپ اپناآرڈر بک کروا سکتے ہیں۔
ہمارا ایڈریس ہے: تاثیر دواخانہ i-111:اقبال روڈ، نزد کمیٹی چوک، چٹیاں ہٹیاں، تاثیر چوک راولپنڈی۔مزید معلومات کے لئے وزٹ کیجئے ہماری ویب سائیٹ www.taseerlabs.com,dawakhanataseer.com۔
اینکر:۔بہت بہت شکریہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر صاحب آپ نے ہمارے ناظرین کو طلائی سپرم گرو کورس کے بارے میں بہترین راہنمائی کی امید ہے کہ ناظرین اس سے بہت زیادہ فائدہ اُٹھائیں گے اور آپ کو اپنی دعاؤں میں یاد رکھیں گے۔ ناظرین۔۔۔۔ یہ تھے بے اولادی کے مشہور روحانی معالج حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر جو کہ ہر قسم کے مردانہ و زنانہ امراض کے ماہر ہیں۔ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر نے آج مردانہ بانجھ پن سے متعلق ہم سب کی بہترین راہنمائی کی۔ امید ہے آپ ضرور ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتوں پر عمل کر کے مردانہ بانجھ پن سے چھٹکارا حاصل کر سکیں گے اور ایسے افراد تک ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتیں پہنچائیں گے جو کہ اولاد کی نعمت سے محروم ہیں تا کہ وہ جلد از جلد حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر سے اپنا علاج کروا کر اپنے آنگین میں خوشیاں بکھیر سکیں۔۔۔۔ اپنا خیال رکھئے گا۔۔۔ اللہ حافظ۔۔

کستوری سپرم گرو کورس

اینکر:۔اسلام علیکم ۔۔۔۔ ناظرین ۔۔۔ امید ہے آپ سب خیریت سے ہوں گے ۔۔ ناظرین آج ہم نے اپنے پروگرام میں جس شخصیت کو دعوت دی ہے وہ ملک پاکستان کے نامور اور بے اولادی کے مشہور معالج جو کسی تعارف کے محتاج نہیں جناب حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر آج ہم ڈاکٹر صاحب سے جس کورس کے بارے میں بات کریں گے اس کورس کا نام کستوری سپرم گرو کورس ہے حکیم صاحب آپ کو بتائے گئے کہ مردانہ بانجھ کسے کہتے ہیں اس کی وجوہات، علامات اور علاج اس کے علاوہ بہت سی باتیں جس سے مردانہ بانجھ پن سے بچا جا سکتا ہے جیسا کہ بہت سے لوگ جانتے ہیں حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر اپنے بہترین ہربل طریقہ علاج کی وجہ سے Image result for infertility wallpaperپوری دنیا میں شہرت یافتہ ہیں تو آ ئیے حکیم صاحب سے ملتے ہیں۔
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب اسلام و علیکم۔۔
ڈاکٹر:۔ وعلیکم اسلام۔۔
اینکر:، ڈاکٹر صاحب بانجھ پن کیا ہوتا ہے ؟ کیا صرف عورت ہی بانجھ ہوتی ہے؟
ڈاکٹر:۔ہمارے ہاں اگر کسی کے ہاں شادی کے بعد اولاد نہ ہو تو صرف عورت کو ہی اس کا الزام دیا جاتا ہے کہ یہ بانجھ عورت ہے جبکہ ایسا ہر کیس میں ہونا ضروری نہیں، کیونکہ مردوں میں بھی یہ بانجھ پن کی بیماری پائی جاتی ہے لیکن اس کی طرف عام طور پر توجہ نہیں دی جاتی اور بیچاری لڑکی کے ٹیسٹ کروا کروا کر اس کی مت مار دی جاتی ہے اور طعنے الگ سے یاد رکھیں اولاد کا ہونا یا نہ ہونااللہ کی مرضی پر ہوتا ہے اس میں نہ مرد کا قصو ر ہوتا ہے اور نہ ہی عورت کا کوئی قصور ہوتا ہے۔ لہٰذا شعور پیدا کریں اور عقل استعمال کریں ۔مردوں میں سپرمز کا مسئلہ بانجھ پن کا باعث بنتا ہے ۔ مرد کے ایک بار ڈسچارج ہونے پر منی کی مقدار تقریبا3.5ملی لیٹر ہوتی ہے اس میں20کروڑ سے لے کر ایک ارب سپرمز ہوتے ہیں۔ اگر یہ مقدار کم ہو یا کمزور ہو ں تو یہ اولاد پیدا کرنے کی صلاحیت نہیں رکھتے اور یہی وجہ مردانہ بانجھ پن کا باعث بنتی ہے ۔بانجھ پن کے لحاظ سے اس کی تین ا قسام ہیں جس میں مرد حضرات مبتلا رہتے ہیں۔
منی میں سپرم کی مقدارکا بالکل نہ ہونا azoospermia
منی میں سپرم کی مقدار کا کم ہونا oligospermia
Image result for infertility typesمنی میں سپرم کا مردہ ہونا necrospermia
منی میں سپرم کی غیر موجودگی:۔منی میں سپرم کا بالکل موجود نہ ہوناazoospermiaکہلاتا ہے اس بیماری میں سپرم بالکل پیدا ہی نہیں ہوتے منی میں سپرم بالکل پیدا نہ ہونے کا سب سے بڑا سبب انفکیشن ہے جس میں پیپ آنا، خون کے سرخ ذرات کا آنایا بیکٹیریا وغیرہ کی موجودگی ہے۔azoospermiaکی دو اقسام ہیں۔
i۔obstrustrictive azoospermia:۔اگر خصیے سائز میں نارمل ہوں اور ہارمون لیول بھی نارمل ہو تو خصیے اور عضو خاص کے درمیان نالیاں بند ہونے کوobstrustive azoospermiaکہتے ہیں یہ مرض خصیوں سے مادہ منویہ باہر والی نالیوں پر چوٹ لگنے یا ان میں نقص پیدا ہونے کی وجہ سے ہوتا ہے۔
nonobostrictive azoospermia:۔اس بیماری میں منی میں سپرم کا پیدا نہ ہونا خصیوں کی وجہ سے ہوتا ہے جس کی وجہ سے خصیوں میں نقص ہونا، اس کے علاوہ خصیوں میں پیدائشی نقص ہونا، ہارمون لیول نارمل نہ ہونا ، خصیوں کا انفیکشن اور تیز بخار بھی اس کی وجہ بنتا ہے۔
منی میں سپرم کی کمی oligospermia:۔مردانہ بانجھ پن کی ایک اور بنیادی وجہ مادہ منویہ میں سپرم کی تعداد کا مطلوبہ مقدار سے کم ہونا ہے سپرم کی مناسب مقدار 200ملین سے600ملین ہے ۔ اگر سپرم کی مناسب مقدار120ملین سے کم ہو تو یہ بیماریoligospermiaکہلائے گی۔
منی میں سپرم کا مردہ ہونا necrospermia:۔ یہ بانجھ پن کی ایسی قسم ہے جس میں مادہ منویہ میں سپرم موجود تو ہوتے ہیں لیکن وہ زندہ نہیں ہوتے اور مردہ ہونے کے باعث وہ اس قابل نہیں ہوتے کہ حمل قرار پائے۔ اگر منی میں چالیس فیصد سپرم مردہ حالت میں ہوں تو یہ بیماریnecrospermiaکہلائے گی۔
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب بانجھ پن کی وجوہات کے بارے میں ہمارے ناظرین کو بتا دیں جس کی وجہ سے مردانہ بانجھ پن لاحق ہوتا ہے؟
ڈاکٹر:اس کی بہت سے وجوہات ہے جس کی وجہ سے مردانہ بانجھ پن کا مرض لاحق ہوتا ہے۔
موٹاپا:۔اگر آپ موٹاپے کا شکار ہیں تو فوراً سے پہلے اپنا وزن کم کریں کیونکہ موٹاپے کی وجہ سے فوطے جسم کے ساتھ چمٹے رہتے ہیں جس کی وجہ سے ان کا ٹمپریچر بڑھ جاتا ہے جس کی وجہ سے سپرم مر جاتے ہیں۔
شراب نوشی :۔ یہ ایک تو ویسے ہی حرام ہے اور دوسرا اس سے لڑکا پیدا کرنے والے سپرمز مر جاتے ہیں ، اس لیے اس سے پرہیز Image result for infertility typesکریں ۔
سگریٹ نوشی:۔یہ بھی سپرمز کی دشمن ہے ایک ریسرچ سے پتہ چلا ہے کہ جو لوگ سگریٹ نوشی کرتے ہیں اس کی وجہ سے ان کے15فیصد سپرمز کم ہو جاتے ہیں اور سپرمز بیضہ دانی میں داخل نہیں ہو پاتے ۔ جو لوگ سگریٹ نوشی کرتے ہیں وہ اصول اولاد کے لیے اسے بھی ترک کر دیں۔
تنگ کپڑے پہننا :۔ میں جہاں اپنے ناظرین کو بتانا چاہتا ہوں کہ خصیوں کا درجہ حرارت جسم کے درجہ حرارت سے بہت کم ہوتا ہے جو لوگ تنگ کپڑے پہنتے ہیں خصوصاً تنگ انڈروئیر، اس سے خصیے جسم سے چمٹ جاتے ہیں اور سپرم مر جاتے ہیں۔
گرم پانی سے نہانا :۔جو لوگ زیادہ گرم پانی سے نہاتے ہیں اس سے بھی ان کے سرمز مر جاتے ہیں سو اس سے بچا جائے ۔ آگ کے قریب کام کرنے والوں کے ہاں اکثر لڑکیاں پیدا ہوتی ہے ، کیونکہ گرمی سے نازک لڑکے والے کروموسومز مر جاتے ہیں لہٰذا گرمی سے اپنے خصیوں کو جتنا بچا سکتے ہیں بچائیے ۔
زیادہ ڈرائیونگ کرنا بھی سپرمز کے لیے نقصان دیں ہے:۔جو لوگ زیادہ ڈرائیونگ کر تے ہیں ، انجن کی گرمی کی وجہ سے بھی سپرمز مر جاتے ہیں اس لیے اپنی سیٹ ہوا دار رکھیں اور اگر زیادہ ڈرائیونگ کرنا ہو تو ہر دو گھنٹوں کے بعد خصیوں پر ٹھنڈا پانی ڈالیں ۔
طبی ماہرین نے کہا ہے کہ پاکستان میں بانجھ پن ایک سنجیدہ مسئلہ بنتا جا رہا ہے ۔ ملک میں15سے20فیصد جوڑے بانجھ پن کا شکار ہیں ۔ ایسے بانجھ پن جوڑوں میں سے 40فیصد مردوں،30فیصد عورتوں اور30فیصد کیسز میں مرد اور عورت دونوں میں خرابی ہوتی ہے اس خرابی کے باعث خواتین معاشرے کی ستم ظریفی کا زیادہ شکار ہوتی ہیں۔ اکثر اوقات مردوں میں خرابی کے باوجود عورتوں کو طلاق دے دی جاتی ہے ۔ مرد تین ، تین، چار، چارشادیوں کے باوجود بھی اولاد پیدا نہیں کر پا رہے ہوتے ہیں بانجھ پن کی بیماری کے 80فیصد کیسز کا اب علاج ممکن ہے۔ پاکستان میں بانجھ پن کے مسئلے کو سنجیدگی سے لینے کی ضرورت ہے۔ آج کل19سے22سال کی عمر کی نوجوان لڑکیوں میں ایک بیماری پولی سسٹک اوورین ڈیز یز (رحم کی رسولوں کا مرض )کافی بڑھ گئی ہے جس میں لڑکیوں کی مونچھ اور داڑھی کے بال ظاہر ہونا شروع ہو جاتے ہیں ۔ ایسی صورت حال ہونے پر والدین کو ایسی بچیوں کی جلد شادی کا سوچنا چاہیے کیونکہ شادی اور پھر بچوں کی پیدائش کے بعد یہ مسئلہ کافی کم ہو جاتا ہے انہوں نے کہا کہ اگر کسی جوڑے کے ہاں شادی کے12ماہ کے اندر ازدواجی تعلقات خوشگوار ہونے کے باوجود بچے کی پیدائش نہ ہو تو انہیں بانجھ پن کا مسئلہ ہو سکتا ہے۔اس کے لیے انہیں کسی بھی ماہر معالج کو دکھانا چاہیے جو چیک اپ کے بعد وہ انہیں ضرورت کے مطابق علاج تجویز کر ے گا ۔بانجھ پن کا شکار جوڑوں کو کسی بنگالی بابا اور نا تجربہ کار معالج کے چکر میں نہیں پڑنا چاہیے ۔ بانجھ پن ایک بڑی سائنس ہے اور اس بیماری کے80فیصد کیسز کا کامیاب علاج ممکن ہے ۔ بانجھ پن کے 100میں سے15فیصد کیسز ایسے ہوتے ہیں جن میں خرابی نہ ہونے کے باوجود بھی وہ بچے پیدا کرنے کی صلاحیت نہیں رکھتے ۔ بیماری کی تشخیص کے لیے تجویز کیے گئے ٹیسٹ بھی بعض اوقات لوگ غیرمعیاری لیبارٹریز سے کراتے ہیں جس سے رپورٹ صحیح نہیں ملتی اور بروقت علاج شروع نہیں ہو پاتا ۔ بعض مردوں میں جرثومہ ہی نہیں ہوتے جس کی Image result for infertility typesوجہ سے وہ بانجھ پن کا شکار ہوتے ہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب منی کا اخراج صحت کے لیے نقصان دہ ہے؟
ڈاکٹر:۔یہ بات100فیصد غلط ہے کہ منی کے اخراج سے صحت پر برے اثرات پڑتے ہیں بلکہ حقیقت یہ ہے کہ منی کا اخراج صحت کے لیے بے حد مفید ہے کیونکہ اس کے اخراج سے مرد کو ہمیشہ ذہنی اور جسمانی سکون ملتا ہے جس سے صحت اچھی ہوتی ہے نہ کہ خراب ۔ اس لیے نئی نئی شادی کی صورت میں جب نوجوان زیادہ مباشرت کر کے زیادہ منی خارج کرتے ہیں تو ان کی صحت خراب ہونے کے بجائے بہتر ہو جاتی ہے اور اکثر نوجوان شادی کے بعد موٹے ہو جاتے ہیں۔منی کے حوالے سے ایک عام خیال یہ بھی ہے کہ اگر انزال کے وقت کم مقدار میں منی خارج ہو تو یہ جنسی اور مردانہ کمزوری کی علامت ہے ۔ اس کا حقیقت سے دور کا بھی تعلق نہیں ۔ منی کی مقدار کا انحصار کئی باتوں پر ہے۔ نوجوانوں میں منی کی مقدار زیادہ ہوتی ہے ۔ مگر 50سال کے بعد اس کی مقدار میں کمی ہو جاتی ہے اسی طرح اگر جلدی جلدی منی خارج کی جائے یعنی روزانہ مباشرت کی جائے تو بھی منی کی مقدار کم ہو گی اور اگر ہفتہ میں ایک بار مباشرت کی جائے تو منی کی مقدار زیادہ ہو گی۔ اس طرح اگر فرد جنسی طور پر بہت زیادہ مشتعل ہو یعنی جنسی کھیل(foreplay)لمبا ہو تو بھی زیادہ مقدار میں منی خارج ہو گی۔ تاثیر دواخانے کے اطباء کی تحقیق کے مطابق اوسطاً ایک انزال میں3.5ملی لیٹر منی خارج ہوتی ہے۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب جو لوگ اولاد کی نعمت سے محروم ہے ان پریشان لوگوں کو آپ کوئی طبی مشورہ دیں جس پر عمل کر کے وہ اپنی زندگی کو خوشگوار طریقے سے بسر کر سکیں؟
ڈاکٹر:۔شادی کے بعد ہر مرد اور عورت کی یہی خواہش ہوتی ہے کہ اُن کے گھر میں بھی ایک ننھا منا بچہ ان کے گھر کے چمن میں کھلے۔ ہر مرد کی یہی آرزو ہوتی ہے کہ اس بچہ کے روپ میں اس کا خاندانی سلسلہ پھلے پھولے اور پیڑھی در پیٹرھی اس کا نام بھی چلتا رہے ، لیکن اولاد ہونے پر گھر کی خوشی واپس آ جائے ، اس کے لیے کئی بھولے بھالے لوگ تو ڈھونگی سادھو ؤں ، سنتوں اور گنڈے تعویذ والوں کے چکر میں پڑ کر اپنا وقت اور پیسہ بیکار میں ہی گنواریتے ہیں۔ جن کے یہاں اولاد نہیں ہوتی تو انھیں سب سے پہلے اپنے ہاں اولاد نہ ہونے کی وجہ کا پتہ لگانا چاہیے ۔ زیادہ تر مرد عورت کو ہی اس کا ذمہ دار ٹھہراتے ہیں، لیکن اس کے ذمہ دار وہ خود بھی ہو سکتے ہیں ، جبکہ وہ اولاد کے لیے دوسری شادی بھی کر لیتے ہیں ۔ایسی حالت میں ان کی زندگی اور بھی اجیران ہو جاتی ہے ۔ان بے اولاد لوگوں کو ہماری یہی صلاح ہے کہ سب سے پہلے شوہر بیوی دونوں ہی اپنی اچھی طرح جسمانی جانچ کر ائیں تا کہ اصلی وجہ کا پتہ چل سکے ۔ پھر اسی کمی کا علاج حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر سے کرائیں تاکہ جلد ہی صاحب اولاد بن سکیں ۔ یوں تو جگہ جگہ آپ کو اولاد حاصل کرنے کے لیے بڑے بڑے اشتہار دیکھنے کو مل جائیں گے ، لیکن آپ یہ یادرکھیں کہ اصلی علاج وہی ہے جس سے کچھ فائدے کی امید ہو ۔ اس کے لیے ہم آپ کو صحیح مشورہ دیں گے تاکہ آپ بہترین اور صحیح علاج کریں گے ہمارا یہی مقصد رہے گا کہ اِدھر اُدھر نہ بھٹکیں ، فضول میں اپنا پیسہ اور وقت برباد نہ کریں اور آج ہی ہم سے رابطہ کریں اور خوشگور زندگی بسر Image result for what causes infertilityکریں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب دوران علاج مریض کو کون سی چیزوں سے پرہیز کرنا چاہیے اور کون سی چیزوں کا استعمال کرنا اُس کے لئے مفید ہے؟
ڈاکٹر:۔پرہیز علاج سے بہتر ہے۔
پرہیز:۔آلو مٹر، گوبھی، بیگن، پالک ، چاول، بڑا گوشت، پکوڑے سموسے، اچار چٹنی تمام گرم بادی چٹ پٹی تیز مصالحہ جات تمام گولڈڈرنکس ٹھنڈی اشیاء ، شیو مرغی ۔
استعمال کرنے والی اشیاء:۔کدو، ٹنڈے، توری، مولی، گاجر، شلجم، چھوٹا گوشت ، دودھ، دہی تمام ڈرائی فروٹ، شہد کھجور، کالے سفید چنے دال ماش ۔ مچھلی ، دیسی لیموں فریش فروٹ سیب کینو، مالٹا، آم اور کیلا وغیرہ استعمال کر سکتے ہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب جو مرد اس مرض میں مبتلا ہے اُن مردوں کے لئے آپ کے پاس کوئی تحفہ خاص موجود ہے جس کو استعمال کر کے وہ اس مرض سے بآسانی باہر نکل سکے؟
ڈاکٹر:۔ہمارے ادارے تاثیر دواخانہ کے مایہ ناز ڈاکٹرز، حکماء اور سائنسدانوں نے میری سر پرستی میں برس ہا برس کی تحقیقات اور بانجھ پن کے اصل اسباب اور وجو ہات کو مد نظر رکھ کر اپنی ریسرچ سے کستوری سپرم گرو کورس متعارف کروایا ہے جومرض کی نوعیت کے حساب سے مریض کو دیاجاتاہے جو ہر طرح کے کیمیائی اجزاء سے پاک مکمل طور پر قدرتی دوا ہے اس کا کوئی بھی سائیڈ ایفیکٹ نہیں ہے یہ خالص جڑی بوٹیوں سے تیار شدہ ہیں اور100فیصد نتائج کے حامل ہیں ۔ تاثیر لیبارٹریز نے برسوں کی تحقیق کے بعد سپرم کی افرائش کے لئے کستوری سپرم گروکورس تیار کیا ہے ۔ یہ کورس شعبہ ریسرچ نے دیسی جڑی بوٹیوں کی آمیزش کے ساتھ طب اسلامی کے اصولوں کے عین مطابق سائنٹیفک طریقوں پر تاثیر لیبارٹریز میں جدید آٹو میٹک مشینری کی مدد سے تیار کیا ہے۔ جس کے استعمال سے ہر طرح کا انفکیشن ختم ہو جاتا ہے اور منی میں جراثیم نسل پیدا ہونے لگتے ہیں ۔ جس سے,oligospermia, necrospermia azoospermiaجیسی بیماری سے مکمل طور پر نجات مل جاتی ہے۔ یہ مردوں کے جرثومہ حیات میں ہونے والی تبدیلیوں کے افرائشی ہارمون HGHکے سپرم کی سطح میں اضافہ کرتا ہے۔ بے اولاد افراد کے سپرم کم ہوں تو ان کے مادہ تولید میں سپرمز کو نارمل حالت میں لاتا ہے ۔مادہ تولید کی افزائش کو بڑھا کر سپرم کو اولاد کے قابل بناتا ہے۔ سپرم کی پیدائشی کمزوری اور کمی ایسی محرومی ہے جو ایک صحت مند آدمی کو بھی کھوکھلابنا دیتی ہے ان دونوں صورتوں میں یعنی کرم منی کی کمزوری اور اس کے قدرتی تناسب کو درست کر کے اس کے قوام کو ٹھیک کرتا ہے اس میں شامل نہایت ہی قیمتی اورنایاب جڑی بوٹیاں نہ صرف مادہ تولید کو Image result for what causes infertilityپیدا کرنے اور اسے گاڑھا کرنے میں موثر ہے بلکہ اس میں موجودسپرم کی کمی کو بھی دور کرتا ہے یہ
کورس مادہ تولیداور سپرم سمیت تما م مردانہ امراض جو بانجھ پن کا سبب بنتے ہیں جیسے مادہ تولید میں جراثیم یعنی سپرم کا نہ ہونا، خصیوں کا نا کارہ ہونا، خصیوں اور عضوتناسل کے درمیان نالیوں کا بند ہونا، خصیوں میں انفیکشن ہونا وغیرہ کو نہ صرف ختم کرتا ہے بلکہ ان کو دوبارہ پیدا بھی نہیں ہونے دیتا۔یہ کورس 120یوم کے دورانیہ پر مشتمل ہیں اس کورس کا شمار ہمارے پشت در پشت صدی نسخہ جات میں ہوتا ہے اس لئے یہ کورس صرف ہمارے ادارے تاثیر دواخانے پر ہی د ستیا ب ہے مرد حضرات کو میں بتاتا چلو کہ وہ پاکستان میں ہے یا دنیا کے کسی بھی ملک میں ہے آپ بذریعہ آرڈر یہ کورس مانگووا سکتے ہیں۔پاکستان میں ہم بذریعہ V.Pپررسل بھیجتے ہیں اس کے علاوہ آپ خود ہمارے کلینک پر تشریف لا کر خود طلب کر سکتے ہیں۔پاکستان سے باہر دنیا کہ ہر ملک میں ہم بذریعہ ائیر شیب بھیجتے ہیں جہاں ایک خاص بات میں بتاتا چلو ہم پوری دنیامیں ہوم ڈیلوری سروس فراہم کرتے ہیں مطلوبہ کورس آپ کے گھر تک پہنچایا جا سکتا ہے۔ نوٹ( کورس کے بہترین نتائج کے لئے 4سے6ماہ مسلسل استعمال کریں)۔
ناظرین اگر آپ بھی کستوری سپرم گرو کورس خریدنا چاہتے ہیں تو دیر مت کیجئے بلکہ ابھی کال کر کے اپنا آرڈر بک کروائیں۔ ہمارے ہیلپ لائن نمبرز یہ
ڈاکٹر صاحب سے براہ راست مشورے کے لئے ان نمبر ز پر رابطہ:+92334-9552889
+92321-9552889
+92300-9552889
آپ کی راہنمائی کے لئے میل اور فی میل میڈیکل آفیسرز ہمہ وقت موجود ہیں جن سے آپ اپنی بیماری اور ہر قسم کے مرض کے بارے میں راہنمائی حاصل کر سکتے ہیں جو آپ کو ہر قسم کی راہنمائی فراہم کرئے گے( کلینک ٹائم صبح 9بجے سے رات8بجے تک ہے )
میڈیکل آفیسر نمبر1: +92333-5501390
میڈیکل آفیسر نمبر2:۔ +92323-5501390
میڈیکل آفیسرنمبر3: +92336-5777696
میڈیکل آفیسرنمبر4: +92336-577769
میڈیکل آفیسرنمبر5: +92332-5530536
میڈیکل آفیسرنمبر6: +92315-5530536
فی میل (لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر1: +92331-5607654
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر2: +92332-5607654
کلینک (Reception landline) نمبرز:۔ +9251-5777696,+9251-5777697,+92515530536,+9251-5773239
نوٹ:۔ آپ اپنی بیماری کے متعلق مکمل معلومات کے ساتھ میل کریں ۔ آپ ہمارے ای میل taseerlabs@gmail.com،taseerdawakhana@gmail.comپر بھی آپ اپناآرڈر بک کروا سکتے ہیں۔
ہمارا ایڈریس ہے: تاثیر دواخانہ i-111:اقبال روڈ، نزد کمیٹی چوک، چٹیاں ہٹیاں، تاثیر چوک راولپنڈی۔مزید معلومات کے لئے وزٹ کیجئے ہماری ویب سائیٹ www.taseerlabs.com,dawakhanataseer.com۔
اینکر:۔بہت بہت شکریہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر صاحب آپ نے ہمارے ناظرین کو کستوری سپرم گرو کورس کے بارے میں بہترین راہنمائی کی امید ہے کہ ناظرین اس سے بہت زیادہ فائدہ اُٹھائیں گے اور آپ کو اپنی دعاؤں میں یاد رکھیں گے۔ ناظرین۔۔۔۔ یہ تھے بے اولادی کے مشہور روحانی معالج حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر جو کہ ہر قسم کے مردانہ و زنانہ امراض کے ماہر ہیں۔ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر نے آج مردانہ بانجھ پن سے متعلق ہم سب کی بہترین راہنمائی کی۔ امید ہے آپ ضرور ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتوں پر عمل کر کے مردانہ بانجھ پن سے چھٹکارا حاصل کر سکیں گے اور ایسے افراد تک ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتیں پہنچائیں گے جو کہ اولاد کی نعمت سے محروم ہیں تا کہ وہ جلد از جلد حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر سے اپنا علاج کروا کر اپنے آنگین میں خوشیاں بکھیر سکیں۔۔۔۔ اپنا خیال رکھئے گا۔۔۔ اللہ حافظ۔۔

الماس سپرم گرو کورس

اینکر:۔اسلام و علیکم۔۔۔ ناظرین ۔۔۔ امید ہے آپ سب خیریت سے ہوں گے ۔ ناظرین آج ہم نے اپنے پروگرام میں جس شخصیت کو دعوت دی ہے وہ ملک پاکستان کے نامور اور بے اولادی کے مشہور روحانی معالج جو کسی تعارف کے محتاج نہیں جناب حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر آج ہم ڈاکٹر صاحب سے جس کورس کے بارے میں پوچھے گے اس کورس کا نام الماس سپرم گرو کورس ہے اس کے علاوہ ڈاکٹر صاحب اوربہت سے باتیں بتائیں گے جس سے بانجھ پن سے بچا جا سکے اور سپرم کو قدرتی طریقے سے کیسے بڑھاسکتے ہیں ان تمام امور پر آج ڈاکٹر صاحب سے بات کریں گے جیسا کے بہت سے لو گ جانتے ہیں کہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر اپنے بہترین Image result for infertile couplesہربل طریقہ علاج کی وجہ سے پوری دنیا میں شہرت یافتہ ہیں تو آئیے ڈاکٹر صاحب سے ملتے ہیں۔
اینکر: ڈاکٹر صاحب اسلام و علیکم۔۔۔
ڈاکٹر :۔ وعلیکم اسلام۔۔۔
اینکر:ڈاکٹر صاحب سب سے پہلے تو آج آپ ہمارے ناظرین کو اس مرض کے بارے میں بتائیں کے دراصل مردانہ بانجھ پن ہوتا کیا ہے اور اس کی وجوہات کے بارے میں ہمارے ناظرین کو بتا دیں؟
ڈاکٹر:۔اگر شادی کے بعد ریگولر سیکس کیاجائے یعنی روزانہ مباشرت کی جائے یا ایک دن چھوڑ کر کی جائے یا ہمارے بتائے گے طریقے کے مطابق بیضہ ریزی کے وقت مباشرت کی جائے اور پھر بھی ایک سال تک حمل نہ ہو تو ہو سکتا ہے کہ میاں بیوی میں کوئی بانجھ ہوامریکہ میں 12فیصد لوگ بانجھ ہیں ایک ریسرچ سے معلوم ہوا کہ ان میں سے33فیصد عورتوں میں نقص ہوتا ہے اور33فیصد مردوں میں اور باقی دونوں میں ایک اور ریسرچ کے مطابق 40فیصد مرد بانجھ پن کا شکار ہوتے ہیں۔اولاد وہ سرمایہ ہے کہ دنیا کے تمام خزانے اس کے پاس ہوں اور اولاد جیسے دولت سے محروم ہوں تو اس سے غریب کوئی نہیں ۔اس مرض کے اسباب کثیر اور مختلف ہوا کرتے ہیں جو بعض اوقات عورت کی طرف سے اور بعض دفعہ صرف مرد کی جانب سے واقع ہوتے ہیں کبھی ان میں مرد اور عورت دونوں شریک پائے جاتے ہیں چنانچہ اسی وجہ سے اس کی متعدد انواع قرار دی گئی ہیں۔مر د کی منی یا عورت کی منی میں کسی سو مزاج مثل برودت ، رطوبت ، یبوست اور حرارت کے باعث استقرار حمل کی قابلیت کا نہ ہونا،رحم کی خرابی کسی قسم کے سو مزاج کے لاحق ہونے یا مجازی و منا فذ کی تنگی یا اس کی قوت ماسکہ و جاذبہ وغیرہ کے ضعف سے یا رسولی کے وجود یا زخموں کے اندمال سے فم رحم کا انسداد ہو جانے سے بھی یہ نتیجہ حاصل ہوتا ہے۔اعضائے تولیدی منی یعنی منی پیدا کرنے والے اعضا کی کمزوری عضوتناسل کی کوتاہی یا کجی وغیرہ ۔اعضائے رئیسہ و شریفہ کی کمزوری ۔مرد و عورت کے انزال کا ایک ساتھ نہ ہونا اور دیگر اعراض نسانی مثل خوف ، غم اور غصہ وغیرہ یا اسباب خارجی مثلاً کودنا سخت حرکات ، جماع کے بعد نطفہ کے مستقر ہونے سے پہلے Image result for INFERTILITY SPERM PICSاٹھ کھڑے ہونا وغیرہ شامل ہیں ۔
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب بانجھ پن کی کتنی اقسام ہوتیں ہیں جس میں مرد حضرات مبتلا ہوتے ہیں اور اس کی وجوہات کے بارے میں ہمارے ناظرین ہو بتا دیں؟
ڈاکٹر:۔مردوں میں بانجھ پن کے لحاظ سے تین اقسام ہوتیں ہیں۔
1۔ منی میں سپرم کی کمیoligospermia
2۔منی میں سپرم کی غیر موجودگیazoospermia
3۔منی میں سپرم کا مردہ ہوناnecrospermia
منی میں سپرم کی کمی:۔مردانہ بانجھ پن کی ایک وجہ منی میں سپرم کی تعداد کا کم ہونا ہے سپرم کی مناسب مقدار 200ملین سے600ملین ہے۔ اگر سپرم کی تعداد120ملین سے کم ہو تو اس کوoligospermiaکہا جائے گایعنی سپرم کی تعداد کا کم ہونا اس کی کئی حیاتیانی و ماحولیاتی وجوہات ہو سکتی ہے مثلاً کثرت مباشرت ، منی کا کم پیدا ہونا ، ان ٹیوبز میں نقص ہونا جو سپرم کو خصیوں تک لے کر جاتی ہیں اس کے علاوہ ذہنی و جسمانی بے چینی ، بے خوابی اور ہارمونز کے توازن میں بگاڑ ہونے سے بھی سپرم کی پیدائش کم ہوتی ہے الکوحل اور زیادہ کیمیائی میڈیسن کھانے سے بھی منی کی پیدائش کم پیدا ہوتی ہیں۔
منی میں سپرم کی غیر موجودگی:۔اس بیماری میں منی میں سپرم بالکل پیدا ہی نہیں ہوتے اور اس کا سب سے بڑا سبب انفکیشن ہے جس میں پیپ آنا ، خون کے سرخ ذرات کا آنا یا پھر بیکٹیریا وغیرہ کی موجودگی۔
منی میں سپرم کا مردہ ہوناnecrospermia:۔منی میں سپرم کا مردہ ہونا بانجھ پن کی ایک ایسی قسم ہے جس میں منی میں سپرم موجود تو ہوتے ہیں لیکن وہ زندہ نہیں ہوتے اور مردہ ہونے کے باعث وہ اس قابل نہیں رہتے کہ حمل قرار پانے کا باعث بن سکیں اگر منی میں 40فیصد سپرم مردہ حالت میں ہوں تو یہ بیماری necrospermiaکہلائے گی۔ اس کی بہت سے وجوہات ہوتیں ہیں گردے فیل ہو جانا، مسلسل بخار کی وجہ سے جسم زیادہ گرم ہونا، پرانی جگر کی بیماری وغیرہ شامل ہیں۔
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب نامردی کسے کہتے ہیں اور اس کے اسباب کے بارے میں بھی ناظرین کو بتا دیں؟
ڈاکٹر:۔جو مرد عورت سے صحبت کرنے کے ناقابل ہو جائے اگر کبھی کرئے تو بھی پسینوں سے تربتر ہو کر ہاننپے لگے اور عین وقت پر اعضا تناسل ڈھیلا پڑ جائے۔ کوشش کرنے کے باوجود خواہش پوری نہ کر سکے۔ خواہ گھر میں کیسی ہی خوبصورت عورت ہو اس کو دیکھ کر بھی شہوت پیدا نہ ہو ایسے مردوں کو مرد ہوتے ہوئے بھی نامرد سمجھنا چاہیے۔نامردی کا سب سے بڑا سبب منی ہے نامردی صرف منی سے ہی ہوتی ہے ٹھیک اور طاقتور ہونے پر انسان مرد یعنی عورت کے ہمراہ ٹھیک سے صحبت کرنے کے قابل ہوتا ہے ورنہ اسے نامرد خیال کرنا چاہیے۔ نامردی کے دو بڑے اسباب ہے اول تو منی کی خرابی کے باعث ہونے والی نامردی ، دوئم وہ امراض جو ہماری بری عادتوں کا نتیجہ ہیں یعنی جلق ، اغلام بازی ،کثرت مباشرت ، سوزاک اور آتشک۔جن کے منی میں کسی طرح کی خرابی یا بیماری وغیر ہ کے سبب سے جماع نہیں کر سکتے اور منی کا رنگ پیلا ہو جاتا ہے ان کو ویجوپ گھات نامرد کہتے ہیں۔1۔ٹھنڈی ،سوکھی اور کھٹی چیزوں کا ستعمال کرنا۔2۔بے قاعدہ یعنی بے میل چیزیں کھانے سے جیسے دودھ، مچھلی ایک ساتھ کھانا، 3۔بہت سوچ وفکر اور ہر وقت دہشت یا ڈر میں رہنے سے ۔4۔بہت زیادہ جماع کرنے سے۔5۔جسم میں منی بالکل کم ہو جانے سے۔6۔بہت زیادہ محنت کر نے سے۔7۔دست قے وغیرہ کی حالت میں گڑ بڑ ہونے سے ۔8۔زیادہ فاقے وغیرہ کرنے سے بھی نامردی میں مبتلا ہو جاتے ہیں انسان کے منی میں خرابی ہو جاتی ہے اورآخر کار وہ نامردی کی فہرست میں داخل ہو جاتا ہے۔ فکر و سوچ غصہ اور حد سے زیادہ محنت کرنااس کی Image result for INFERTILITY SPERM PICSوجوہات میں شامل ہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب وہ کون سے باتیں ہیں جنہیں عموماً بانجھ پن کی علامت سمجھا جاتا ہے ؟
ڈاکٹر:۔عضوتناسل میں سختی کا عمر کے ساتھ براہ راست تعلق ہے ،مثلاً 20سال کی عمر میں عضوتناسل بہت سخت ہوتاہے لیکن50سال کی عمر ذرا پہلے سے نرم ہوتا ہے۔یہ حال انسانی بازوں کا ہے20سال کی عمر میں ان میں سختی ہوتی ہے لیکن50سال کی عمر میں ذرا نرمی اگر آپ ان جسمانی تبدیلیوں کو سمجھ سکتے ہیں تو اسی طرح عضوتناسل بھی انسانی جسم کا حصہ ہے اس میں باقی جسم کی طرح تبدیلیاں ایک نارمل جسمانی عمل ہے۔اس سے گھبرانے یا خود کو جنسی طور پر کمزور سمجھنے کی ضرورت نہیں یہ نارمل جسمانی عمل ہے۔بہت سے جسمانی افعال مثلاً دل کی دھڑکن کا تیز ہونا، سانس کی رفتار اور معدہ کی حرکت اور عضوتناسل میں اکڑاہٹ انسانی مرضی کے کنٹرول میں نہیں ۔عضو میں اکڑاہٹ میں کچھ بنیادی ضرورتیں درکار ہیں کبھی بھی عضوتناسل پر حکم چلانے کی کوشش نہ کریں ۔کچھ لوگ سیکس سے پرہیز اس لیے کرتے ہیں تا کہ جنسی طور پر مضبوط رہ سکیں یہ حقیقت ہے کہ سیکس سے پرہیز انسان کو جنسی طور پر مضبوط کرنے کے بجائے کمزور کرتا ہے ایک سیدھی مثال ہے اگر ایک تندرست بازو کو ایک طرف کر کے باندھ دیا جائے اور اس سے کوئی کام نہ لیا جائے تو یہ بازو دوسرے بازو کی نسبت کمزور ہو جائے گا جو روز استعمال میں رہتا ہے یہ مثال عضو تناسل کی ہے اگر اس سے کام لینا چھوڑ دیا جائے تو یہ خود بخود کمزور ہو جاتا ہے۔ اسکی ورکنگ ٹھیک طریقہ سے نہیں ہو پاتی یہ بات مشاہدات میں آئی ہے کہ جو لوگ بیرونی ممالک سے آتے ہیں وہ جنسی طور پر کمزور ہو چکے ہوتے ہیں بعض میں جنسی خواہش بالکل نہیں ہوتی اگر ہوتی ہے تو اکڑاہٹ پیدا کرنے سے قاصر رہتے ہیں ایسے افراد کی اکثریت شدید قسم کے سرعت انزال کا شکار ہوتی ہے ان افراد کو چاہیے کہ وہ بیوی کے ساتھ سیکس میں اگر انہیں شروع کے ایام میں ناکامی ہوتی ہے تو اس سے پریشان نہ ہوں بلکہ یہ مسائل بعد میں خود بخود ٹھیک ہو جاتے ہیں۔ عام طور پر یہ سمجھا جاتا ہے کہ مادہ منویہ سے انسان کی صحت ، خون، شریان، مضبوط رہتی ہیں وہ جوڑوں اور کمر کے درد سے محفوظ رہیں گے وہ لوگ جو باڈی بلٹنگ یا کھلاڑی ہیں انہیں اپنی مادہ منویہ بالکل ضائع نہیں کرنا چاہیے ایسا کرنے سے وہ کمزور ہو جائیں گے وہ اپنے کام میں اچھی پوزیشن حاصل نہیں کر سکتے یہی وجہ ہے کہ پہلوانوں اور باڈی بلڈرز کی جلد شادی نہیں کی جاتی مشاہدات سے یہ حقائق سامنے آئے ہیں کہ ان لوگوں کی صحت بہت بہتر رہی جو ہفتے میں دو دفعہ مباشرت کرتے ہیں ان لوگوں کی نسبت جو مباشرت نہیں کرتے اگر زیادہ عر صہ سیکس نہ کیا جائے تو یہ بوریت، چڑ چڑاپن توجہ کا مرکوز نہ ہونا اور بے شمار جنسی الجھنوں کے باعث انسانی ذہن تناؤ کا شکار ہو جاتا ہے مباشرت سے انسانی ذہن تناؤ سے چھٹکارا حاصل کر لیتا ہے حقیقت تو یہ ہے کہ جس کنویں سے پانی نہ نکا لا جائے تو وہ آخر سوکھ جاتا ہے۔بعض مردجب اپنے مادہ منویہ کا مشاہدہ کرتے ہیں تو اگر معمول کے برعکس یہ مقدار ذرا کم نکلے تو یہ بات اپنے ذہن میں بٹھا لیتے ہیں کہ وہ چند دنوں میں جنسی طور پر کمزور ہونے والے ہیں۔ کیونکہ ان کے جسم میں مادہ منویہ کی مقدار کم ہو گئی ہے مادہ منویہ کے مقدار کا تعلق عمر کے حصے سے ہے مثلاً جوان آدمی میں اس کی مقدار زیادہ ہوتی ہے اس کی نسبت 50سال کے آدمی میں اس کی مقدار کم ہوتی ہے اگر ایک فرد ایک ہفتے کے بعد سیکس کرتا ہے تو وہ مادہ منویہ کا اخراج زیادہ کریں گا اس شخص کی نسبت جو مادہ منویہ کا اخراج روز کرتا ہے بہت زیادہ جنسی اشتعال میں مادہ منویہ کا اخراج زیادہ ہوتا ہے اسی طرح ایک آدمی پہلی مرتبہ سیکس کے دوران مادہ منویہ کا اخراج زیادہ کرئے گا۔دوسری مرتبہ کم اور تیسری مرتبہ اس سے بھی کم اس میں پریشان ہونے کی کوئی ضرورت نہیں یہ ایک قدرت Image result for INFERTILITY SPERM PICSعمل ہے۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب دوران علاج مریض کو کون سی چیزوں سے پرہیز کرنا چاہیے اور کون سی چیزوں کا استعمال کرنا اُس کے لئے مفید ہے؟
ڈاکٹر:۔پرہیز علاج سے بہتر ہے۔
پرہیز:۔آلو مٹر، گوبھی، بیگن، پالک ، چاول، بڑا گوشت، پکوڑے سموسے، اچار چٹنی تمام گرم بادی چٹ پٹی تیز مصالحہ جات تمام گولڈڈرنکس ٹھنڈی اشیاء ، شیو مرغی ۔
استعمال کرنے والی اشیاء:۔کدو، ٹنڈے، توری، مولی، گاجر، شلجم، چھوٹا گوشت ، دودھ، دہی تمام ڈرائی فروٹ، شہد کھجور، کالے سفید چنے دال ماش ۔ مچھلی ، دیسی لیموں فریش فروٹ سیب کینو، مالٹا، آم اور کیلا وغیرہ استعمال کر سکتے ہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب جو مرد اس مرض میں مبتلا ہے اُن مردوں کے لئے آپ کے پاس کوئی تحفہ خاص موجود ہے جس کو استعمال کر کے وہ اس مرض سے بآسانی باہر نکل سکے؟
ڈاکٹر:۔ہمارے ادارے تاثیر دواخانہ کے مایہ ناز ڈاکٹرز، حکماء اور سائنسدانوں نے میری سر پرستی میں برس ہا برس کی تحقیقات اور بانجھ پن کے اصل اسباب اور وجو ہات کو مد نظر رکھ کر اپنی ریسرچ سے الماس سپرم گرو کورس متعارف کروایا ہے جومرض کی نوعیت کے حساب سے مریض کو دیاجاتاہے جو ہر طرح کے کیمیائی اجزاء سے پاک مکمل طور پر قدرتی دوا ہے اس کا کوئی بھی سائیڈ ایفیکٹ نہیں ہے یہ خالص جڑی بوٹیوں سے تیار شدہ ہیں اور100فیصد نتائج کے حامل ہیں ۔ تاثیر لیبارٹریز نے برسوں کی تحقیق کے بعد سپرم کی افرائش کے لئے الماس سپرم گرو کورس تیار کیا ہے ۔ یہ کورس شعبہ ریسرچ نے دیسی جڑی بوٹیوں کی آمیزش کے ساتھ طب اسلامی کے اصولوں کے عین مطابق سائنٹیفک طریقوں پر تاثیر لیبارٹریز میں جدید آٹو میٹک مشینری کی مدد سے تیار کیا ہے۔ جس کے استعمال سے ہر طرح کا انفکیشن ختم ہو جاتا ہے اور منی میں جراثیم نسل پیدا ہونے لگتے ہیں ۔ جس سے,oligospermia, necrospermia azoospermiaجیسی بیماری سے مکمل طور پر نجات مل جاتی ہے۔ یہ مردوں کے جرثومہ حیات میں ہونے والی تبدیلیوں کے افرائشی ہارمون HGHکے سپرم کی سطح میں اضافہ کرتا ہے۔ بے اولاد افراد کے سپرم کم ہوں تو ان کے مادہ تولید میں سپرمز کو نارمل حالت میں لاتا ہے ۔مادہ تولید کی افزائش کو بڑھا کر سپرم کو اولاد کے قابل بناتا ہے۔ سپرم کی پیدائشی کمزوری اور کمی ایسی محرومی ہے جو ایک صحت مند آدمی کو بھی کھوکھلابنا دیتی ہے ان دونوں صورتوں میں یعنی کرم منی کی کمزوری اور اس کے قدرتی تناسب کو درست کر کے اس کے قوام کو ٹھیک کرتا ہے اس میں شامل نہایت ہی قیمتی اورنایاب جڑی بوٹیاں نہ صرف مادہ تولید کو Image result for INFERTILITY SPERM PICSپیدا کرنے اور اسے گاڑھا کرنے میں موثر ہے بلکہ اس میں موجودسپرم کی کمی کو بھی دور کرتا ہے یہ
کورس مادہ تولیداور سپرم سمیت تما م مردانہ امراض جو بانجھ پن کا سبب بنتے ہیں جیسے مادہ تولید میں جراثیم یعنی سپرم کا نہ ہونا، خصیوں کا نا کارہ ہونا، خصیوں اور عضوتناسل کے درمیان نالیوں کا بند ہونا، خصیوں میں انفیکشن ہونا وغیرہ کو نہ صرف ختم کرتا ہے بلکہ ان کو دوبارہ پیدا بھی نہیں ہونے دیتا۔یہ کورس 120یوم کے دورانیہ پر مشتمل ہیں اس کورس کا شمار ہمارے پشُت در پشُت صدی نسخہ جات میں ہوتا ہے اس لئے یہ کورس صرف ہمارے ادارے تاثیر دواخانے پر ہی د ستیا ب ہے مرد حضرات کو میں بتاتا چلو کہ وہ پاکستان میں ہے یا دنیا کے کسی بھی ملک میں ہے آپ بذریعہ آرڈر یہ کورس مانگووا سکتے ہیں۔پاکستان میں ہم بذریعہ V.Pپررسل بھیجتے ہیں اس کے علاوہ آپ خود ہمارے کلینک پر تشریف لا کر خود طلب کر سکتے ہیں۔پاکستان سے باہر دنیا کہ ہر ملک میں ہم بذریعہ ائیر شیب بھیجتے ہیں جہاں ایک خاص بات میں بتاتا چلو ہم پوری دنیامیں ہوم ڈیلوری سروس فراہم کرتے ہیں مطلوبہ کورس آپ کے گھر تک پہنچایا جا سکتا ہے۔ نوٹ( کورس کے بہترین نتائج کے لئے 4سے6ماہ مسلسل استعمال کریں)۔
ناظرین اگر آپ بھی الماس سپرم گرو کورس خریدنا چاہتے ہیں تو دیر مت کیجئے بلکہ ابھی کال کر کے اپنا آرڈر بک کروائیں۔ ہمارے ہیلپ لائن نمبرز یہ
ڈاکٹر صاحب سے براہ راست مشورے کے لئے ان نمبر ز پر رابطہ:+92334-9552889
+92321-9552889
+92300-9552889
آپ کی راہنمائی کے لئے میل اور فی میل میڈیکل آفیسرز ہمہ وقت موجود ہیں جن سے آپ اپنی بیماری اور ہر قسم کے مرض کے بارے میں راہنمائی حاصل کر سکتے ہیں جو آپ کو ہر قسم کی راہنمائی فراہم کرئے گے( کلینک ٹائم صبح 9بجے سے رات8بجے تک ہے )
میڈیکل آفیسر نمبر1: +92333-5501390
میڈیکل آفیسر نمبر2:۔ +92323-5501390
میڈیکل آفیسرنمبر3: +92336-5777696
میڈیکل آفیسرنمبر4: +92336-5777697
میڈیکل آفیسر نمبر5: +92315-5530536
میڈیکل آفیسر نمبر6 : +92332-5530536
فی میل (لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر1: +92331-5607654
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر2: +92332-5607654
کلینک (Reception landline) نمبرز:۔ +9251-5777696,+9251-5777697,+92515530536,+9251-5773239
نوٹ:۔ آپ اپنی بیماری کے متعلق مکمل معلومات کے ساتھ میل کریں ۔ آپ ہمارے ای میل taseerlabs@gmail.com،taseerdawakhana@gmail.comپر بھی آپ اپناآرڈر بک کروا سکتے ہیں۔
ہمارا ایڈریس ہے: تاثیر دواخانہ i-111:اقبال روڈ، نزد کمیٹی چوک، چٹیاں ہٹیاں، تاثیر چوک راولپنڈی۔مزید معلومات کے لئے وزٹ کیجئے ہماری ویب سائیٹ www.taseerlabs.com,dawakhanataseer.com۔
اینکر:۔بہت بہت شکریہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر صاحب آپ نے ہمارے ناظرین کو الماس سپرم گرو کورس کے بارے میں بہترین راہنمائی کی امید ہے کہ ناظرین اس سے بہت زیادہ فائدہ اُٹھائیں گے اور آپ کو اپنی دعاؤں میں یاد رکھیں گے۔ ناظرین۔۔۔۔ یہ تھے بے اولادی کے مشہور روحانی معالج حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر جو کہ ہر قسم کے مردانہ و زنانہ امراض کے ماہر ہیں۔ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر نے آج مردانہ بانجھ پن سے متعلق ہم سب کی بہترین راہنمائی کی۔ امید ہے آپ ضرور ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتوں پر عمل کر کے مردانہ بانجھ پن سے چھٹکارا حاصل کر سکیں گے اور ایسے افراد تک ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتیں پہنچائیں گے جو کہ اولاد کی نعمت سے محروم ہیں تا کہ وہ جلد از جلد حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر سے اپنا علاج کروا کر اپنے آنگین میں خوشیاں بکھیر سکیں۔۔۔۔ اپنا خیال رکھئے گا۔۔۔ اللہ حافظ۔۔

طلائی کستوری سپرم گرو کورس

اینکر:۔اسلام و علیکم۔۔۔ ناظرین۔۔ امید ہے آپ سب خیریت سے ہوں گے ۔ناظرین آج ہم نے اپنے پروگرام میں جس شخصیت کو دعوت دی ہے وہ ملک پاکستان کے نامور اور بے اولادی کے مشہور روحانی معالج جو کسی تعارف کے محتاج نہیں جناب حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر آج ہم ڈاکٹر صاحب سے جس کورس کے بارے میں پوچھے گے اس کورس کا نام طلائی کستوری سپرم گرو کورس ہے اس کے علاوہ بہت سی باتیں جن سے مردانہ بانجھ پن سے بچا جا سکتا ہے جیسا کہ بہت سے لوگ جانتے ہیں کہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود Image result for infertile couplesتاثیر اپنے بہترین ہربل طریقہ علاج کی وجہ سے پوری دنیا میں شہرت یافتہ ہیں تو آئیے ڈاکٹر صاحب سے ملتے ہیں۔
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب اسلام و علیکم۔۔
ڈاکٹر:۔ و علیکم اسلام۔۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب سب سے پہلے تو آج آپ ہمارے ناظرین کو اس مرض کے بارے میں بتائیں کے دراصل مردانہ بانجھ ہوتا کیا ہے؟
ڈاکٹر:۔آج کل بانجھ پن ایک پیچیدہ مسئلہ ہے جو کہ بہت ہی عام ہو چکا ہے اس کے متعلق لوگوں کو بتانا بہت ضروری ہے سب سے پہلے تو یہ کہ بانجھ پن کیا ہے تو اسے ہم یوں بیان کرتے ہیں کہ میاں بیوی کے درمیان ایک سال تک عمومی و ظیفہ زوجیت اور تعلق قائم رہنے کے باوجود اولاد نہ ہونا یا حمل نہ ٹھہر پائے اسے ہم بانجھ پن سے تعبیر کرتے ہیں۔بانجھ پن کا شکار مرد بھی ہو سکتا ہے اور عورت بھی اس مرض کا شکار ہو سکتی ہے مردوں کی نسبت عورتوں میں یہ مرض زیادہ ہوتا ہے یعنی عورتوں میں یہ مرض60فیصد تک جبکہ مرد40فیصد تک اس کا شکار ہیں ۔اگر تو بانجھ پن مرد کی وجہ سے ہو یعنی مرد میں کسی نقص کی وجہ سے اولاد نہ ہو تو ہم کہتے ہیں کہ یہ مردانہ بانجھ پن ہے اور اگر یہ عورت کی وجہ سے ہو تو اسے زنانہ بانجھ پن کا نام دیا جاتا ہے۔
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب ہمارے ناظرین کو بتائے کہ بانجھ پن کی کیا وجوہات ہوتیں ہیں جن کی بنا پر مردوں میں بانجھ پن کا مرض لاحق ہوتا ہے؟
ڈاکٹر:۔مردوں میں بانجھ پن کی بہت سی وجوہات ہیں جن میں بنیادی طبی وجوہات ہیں جیسے موروثی مسائل، تولیدی جرثوموں کی کمی یا عدم موجودگی، سرعت انزال، ضعف باہ، کثرت مباشرت ، معدہ کی خرابیوں کی بنا پر جہنم لینے والی جنسی بیماریاں جن میں جریان اور احتلام سہر فہرست ہیں اسی طرح کچھ نفسیاتی وجوہات ہیں جیسے کاروباری یا مالی پریشانی،کسی مقدمہ یا عدالت کا خوف، دشمن کا خوف، کسی اہم رشتہ یا چیز کا چھن جانا اور اس کی وجہ سے پیدا ہونے والی ذہنی پریشانی، گھریلو نا چاگی، میاں بیوی کے باہمی تعلقات میں عدم استحکام و اتفاق بھی نفسیاتی وجوہات میں شامل ہیں کسی بھی دوسرے غم کی وجہ سے ذہنی مریض بن جانا۔ یہ تمام علامات مردکے تولیدی عمل میں شدید پریشان اور رکاوٹ کا باعث بن سکتے ہیں اور جدید سائنس اس سے پوری طرح متفق ہے۔ کچھ معاشرتی وجوہات بھی ہیں جو کہ مردوں میں بانجھ پن کا سبب بنتی ہیں ان میں غلط اور بے راہ روی کے شکار لوگوں کے ساتھ دوستی، شراب نوشی ، تمباکو و سگریٹ نوشی، مشت زنی ، عریاں و فحش مواد کا مطالعہ، انٹرنیٹ اور ویڈیوز میں بے حیائی پر مبنی مواد دیکھنا، اپنی منکوحہ کو چھوڑ کر غیر عورتوں یا مردوں سے تعلقات کا استوار کرنا وغیرہ۔مردوں میں ان تمام علامات و مسائل کی موجودگی کے بعد بہت سے دوسرے امراض جنم لیتے ہیں جیسے جریان پیشاب کے بعد قطرے، جنسی خواہش کا بڑھ جانا مگر انجام نہ دے پانا ، جنسی خواہش کا انتہائی فقدان، سر درد چڑچڑا پن کام میں دل نہ لگنا، ڈر ، اعتماد کی کمی ، شکوک و شہبات کا پیدا ہو جانا وغیرہ عام مسائل ہیں ۔
اینکر؛۔ڈاکٹر صاحب وہ کونسی ایسی علامات ہیں جن کی بنا پر ہم اس مرض کی تشخص کرتے ہیں ؟ یعنی ہم کہا سکتے ہیں کہ اس مرد کو بانجھ پن کا مسئلہ ہے؟
ڈاکٹر:۔مردانہ بانجھ پن کی تشخص عموماً لیبارٹری ٹیسٹ سے کی جاتی ہے جس میں مریض کاsemen anaylsis ٹیسٹ کیا جاتا ہےsemen anaylsisرپورٹ کی مدد سے مریض میں بانجھ پن کی بآسانی تشخص کی جاتی ہے اور اس ٹیسٹ کی وجہ سے مریض میں بانجھ پن کی نوعیت کا بھی پتہ چلایا جاتا ہے جیسےazoospermiaیعنی منی میں سپرم کا موجود نہ ہونا،oligospermiaیعنی منی میں سپرم کا تعداد میں کم ہونا،necrospermiaیعنی منی میں سپرم کا مردہ ہونا یہ تینوں قسمیں ہیں جن سے مردانہ بانجھ پن کی تشخص کی جاتی ہے اور انہیں کی بنا پر ہم کہتے ہیں کہ آیا مریض کو کس نوعیت کا بانجھ پن ہے ۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب جیسا کہ آپ بے اولادی کے مشہور معروف روحانی معالج کا درجہ رکھتے ہیں اور اپنے قدرتی طریقہ علاج کی وجہ سے پوری دنیا میں مشہور و معروف شخصیت ہیں آج آپ ہمارے ناظرین کو بتائیں تا کہ مردانہ بانجھ پن کے شکار مردو خواتین اس سے نجات پا کر اپنی دیرینہ خواہش یعنی اولاد کی نعمت سے مالامال ہو سکیں۔
ڈاکٹر:۔سب سے پہلے تو میں ناظرین کو یہ بتانا چاہتا ہوں کہ مردانہ بانجھ پن یعنی مردوں میں اولاد کا نہ ہونا ایک قابل علاج مرض ہے اور مردانہ بانجھ پن کے لیے طبی علاج یعنی ہربل طریقہ علاج ہی سب سے بہتر اور پُر اثر علاج ہے جو کہ بانجھ پن کا100فیصد خاتمہ کر کے اولاد کی نعمت سے محروم جوڑوں کو قابل اولاد بناتا ہے اور دوسری بات یہ کہ قدرتی ہربل طریقہ علاج ہی ایسا علاج ہے جس کے رزلیٹس مستقل ہوتے ہیں اور اس کا کسی بھی قسم کا کوئی سائیڈ ایفکیٹ بھی نہیں ہوتا۔
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب اکثر مریضوں کے ذہن میں ہوتا ہے کہ وہ کون سے ایسی احتیاطی تدابیر اور ضروری ہداہات ہیں جن پر عمل پیرا ہو کہ مردانہ بانجھ پن سے بچاجا سکتا ہے؟
ڈاکٹر:۔بہت سی احتیاطی تدابیر ہیں جن پر عمل پیرا ہو کر مرد حضرات بانجھ پن سے بچ سکتے ہیں یہاں میں چند ایک ہدایات و تدابیر کا ذکر کروں گا جو کہ مردانہ بانجھ پن سے بچاؤ میں مددگار ہیں نفسیاتی طریقہ علاج اور سکون پہنچانے والی ورزشیں، یوگا وغیرہ سے بانجھ پن کا شکار مردوں کو فائدے ہو سکتا ہے کسی بھی قسم کا نشہ مثلاًتمبا کو نوشی وغیرہ ہرگز استعمال نہ کریں مردانہ بانجھ پن ماحولیاتی آلودگی جو کہ سمین کی پیداوار میں کمی کا سبب بنتی ہے کوشش کریں ماحولیاتی آلودگی سے بچیں اور صاف ستھرے ماحول Image result for INFERTILITY SPERM PICSمیں رہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب دوران علاج مریض کو کون سی چیزوں سے پرہیز کرنا چاہیے اور کون سی چیزوں کا استعمال کرنا اُس کے لئے مفید ہے؟
ڈاکٹر:۔پرہیز علاج سے بہتر ہے۔
پرہیز:۔آلو مٹر، گوبھی، بیگن، پالک ، چاول، بڑا گوشت، پکوڑے سموسے، اچار چٹنی تمام گرم بادی چٹ پٹی تیز مصالحہ جات تمام گولڈڈرنکس ٹھنڈی اشیاء ، شیو مرغی ۔
استعمال کرنے والی اشیاء:۔کدو، ٹنڈے، توری، مولی، گاجر، شلجم، چھوٹا گوشت ، دودھ، دہی تمام ڈرائی فروٹ، شہد کھجور، کالے سفید چنے دال ماش ۔ مچھلی ، دیسی لیموں فریش فروٹ سیب کینو، مالٹا، آم اور کیلا وغیرہ استعمال کر سکتے ہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب جو مرد اس مرض میں مبتلا ہے اُن مردوں کے لئے آپ کے پاس کوئی تحفہ خاص موجود ہے جس کو استعمال کر کے وہ اس مرض سے بآسانی باہر نکل سکے؟
ڈاکٹر:۔ہمارے ادارے تاثیر دواخانہ کے مایہ ناز ڈاکٹرز، حکماء اور سائنسدانوں نے میری سر پرستی میں برس ہا برس کی تحقیقات اور بانجھ پن کے اصل اسباب اور وجو ہات کو مد نظر رکھ کر اپنی ریسرچ سے طلائی کستوری سپرم گرو کورس متعارف کروایا ہے جومرض کی نوعیت کے حساب سے مریض کو دیاجاتاہے جو ہر طرح کے کیمیائی اجزاء سے پاک مکمل طور پر قدرتی دوا ہے اس کا کوئی بھی سائیڈ ایفیکٹ نہیں ہے یہ خالص جڑی بوٹیوں سے تیار شدہ ہیں اور100فیصد نتائج کے حامل ہیں ۔ تاثیر لیبارٹریز نے برسوں کی تحقیق کے بعد سپرم کی افرائش کے لئے طلائی کستوری سپرم گر و کورس تیار کیا ہے ۔ یہ کورس شعبہ ریسرچ نے دیسی جڑی بوٹیوں کی آمیزش کے ساتھ طب اسلامی کے اصولوں کے عین مطابق سائنٹیفک طریقوں پر تاثیر لیبارٹریز میں جدید آٹو میٹک مشینری کی مدد سے تیار کیا ہے۔ جس کے استعمال سے ہر طرح کا انفکیشن ختم ہو جاتا ہے اور منی میں جراثیم نسل پیدا ہونے لگتے ہیں ۔ جس سے,oligospermia, necrospermia azoospermiaجیسی بیماری سے مکمل طور پر نجات مل جاتی ہے۔ یہ مردوں کے جرثومہ حیات میں ہونے والی تبدیلیوں کے افرائشی ہارمون HGHکے سپرم کی سطح میں اضافہ کرتا ہے۔ بے اولاد افراد کے سپرم کم ہوں تو ان کے مادہ تولید میں سپرمز کو نارمل حالت میں لاتا ہے ۔مادہ تولید کی افزائش کو بڑھا کر سپرم کو اولاد کے قابل بناتا ہے۔ سپرم کی پیدائشی کمزوری اور کمی ایسی محرومی ہے جو ایک صحت مند آدمی کو بھی کھوکھلابنا دیتی ہے ان دونوں صورتوں میں یعنی کرم منی کی کمزوری اور اس کے قدرتی تناسب کو درست کر کے اس کے قوام کو ٹھیک کرتا ہے اس میں شامل نہایت ہی قیمتی اورنایاب جڑی بوٹیاں نہ صرف مادہ تولید کو پیدا کرنے اور اسے گاڑھا کرنے میں موثر ہے بلکہ اس میں موجودسپرم کی کمی کو بھی دور کرتا ہے یہ کورس مادہ تولیداور سپرم سمیت تما م مردانہ امراض جو بانجھ پن کا سبب بنتے ہیں جیسے مادہ تولید میں جراثیم یعنی سپرم کا نہ ہونا، خصیوں کا نا کارہ ہونا، خصیوں اور عضوتناسل کے درمیان نالیوں کا بند ہونا، خصیوں میں انفیکشن ہونا وغیرہ کو نہ صرف ختم کرتا ہے بلکہ ان کو دوبارہ پیدا بھی نہیں ہونے دیتا۔یہ کورس 120یوم کے دورانیہ پر مشتمل ہیں اس کورس کا شمار ہمارے پُشت در پُشت صدی نسخہ جات میں ہوتا ہے اس لئے یہ کورس صرف ہمارے ادارے تاثیر دواخانے پر ہی د ستیا ب ہے مرد حضرات کو میں بتاتا چلو کہ وہ پاکستان میں ہے یا دنیا کے کسی بھی ملک میں ہے آپ بذریعہ آرڈر یہ کورس مانگووا سکتے ہیں۔پاکستان میں ہم بذریعہ V.Pپررسل بھیجتے ہیں اس کے علاوہ آپ خود ہمارے کلینک پر تشریف لا کر خود طلب کر سکتے ہیں۔پاکستان سے باہر دنیا کہ ہر ملک میں ہم بذریعہ ائیر شیب بھیجتے ہیں جہاں ایک خاص بات میں بتاتا چلو ہم پوری دنیامیں ہوم ڈیلوری سروس فراہم کرتے ہیں مطلوبہ کورس آپ کے گھر تک پہنچایا جا سکتا ہے۔ نوٹ( کورس کے بہترین نتائج کے لئے 4سے6ماہ مسلسل استعمال کریں)۔
ناظرین اگر آپ بھی طلائی کستوری سپرم گرو کورس خریدنا چاہتے ہیں تو دیر مت کیجئے بلکہ ابھی کال کر کے اپنا آرڈر بک کروائیں۔ ہمارے ہیلپ لائن نمبرز یہ
ڈاکٹر صاحب سے براہ راست مشورے کے لئے ان نمبر ز پر رابطہ:+92334-9552889
+92321-9552889
+92300-9552889
آپ کی راہنمائی کے لئے میل اور فی میل میڈیکل آفیسرز ہمہ وقت موجود ہیں جن سے آپ اپنی بیماری اور ہر قسم کے مرض کے بارے میں راہنمائی حاصل کر سکتے ہیں جو آپ کو ہر قسم کی راہنمائی فراہم کرئے گے( کلینک ٹائم صبح 9بجے سے رات8بجے تک ہے )
میڈیکل آفیسر نمبر1: +92333-5501390
میڈیکل آفیسر نمبر2:۔ +92323-5501390
میڈیکل آفیسرنمبر3: +92336-5777696
میڈیکل آفیسرنمبر4: +92336-5777697
میڈیکل آفیسر نمبر5: +92332-5530536
میڈیکل آفیسر نمبر6: +92315-5530536
فی میل (لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر1: +92331-5607654
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر2: +92332-5607654
کلینک (Reception landline) نمبرز:۔ +9251-5777696,+9251-5777697,+92515530536,+9251-5773239
نوٹ:۔ آپ اپنی بیماری کے متعلق مکمل معلومات کے ساتھ میل کریں ۔ آپ ہمارے ای میل taseerlabs@gmail.com،taseerdawakhana@gmail.comپر بھی آپ اپناآرڈر بک کروا سکتے ہیں۔
ہمارا ایڈریس ہے: تاثیر دواخانہ i-111:اقبال روڈ، نزد کمیٹی چوک، چٹیاں ہٹیاں، تاثیر چوک راولپنڈی۔مزید معلومات کے لئے وزٹ کیجئے ہماری ویب سائیٹ www.taseerlabs.com,dawakhanataseer.com۔
اینکر:۔بہت بہت شکریہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر صاحب آپ نے ہمارے ناظرین کو طلائی کستوری سپرم گرو کورس کے بارے میں بہترین راہنمائی کی امید ہے کہ ناظرین اس سے بہت زیادہ فائدہ اُٹھائیں گے اور آپ کو اپنی دعاؤں میں یاد رکھیں گے۔ ناظرین۔۔۔۔ یہ تھے بے اولادی کے مشہور روحانی معالج حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر جو کہ ہر قسم کے مردانہ و زنانہ امراض کے ماہر ہیں۔ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر نے آج مردانہ بانجھ پن سے متعلق ہم سب کی بہترین راہنمائی کی۔ امید ہے آپ ضرور ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتوں پر عمل کر کے مردانہ بانجھ پن سے چھٹکارا حاصل کر سکیں گے اور ایسے افراد تک ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتیں پہنچائیں گے جو کہ اولاد کی نعمت سے محروم ہیں تا کہ وہ جلد از جلد حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر سے اپنا علاج کروا کر اپنے آنگین میں خوشیاں بکھیر سکیں۔۔۔۔ اپنا خیال رکھئے گا۔۔۔ اللہ حافظ۔۔

الماس کستوری سپرم گرو کورس

اینکر:۔اسلام وعلیکم۔۔۔ ناظرین ۔۔ امید ہے آپ سب خیریت سے ہوں گے۔ ناظرین آج ہم نے اپنے پروگرام میں جس شخصیت کو دعوت دی ہے وہ ملک پاکستان کے نامور اور بے اولادی کے مشہور روحانی معالج جو کسی تعارف کے محتاج نہیں جناب حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر آج ہم ڈاکٹر صاحب سے جس کورس کے بارے میں پوچھے گے اس کورس کا نام الماس کستوری سپرم گروکورس ہے ڈاکٹر صاحب آپ کوبتائیں گے کہ مردانہ بانجھ پن کیا ہے؟ اس کی وجوہات، علامات اور علاج اس کے علاوہ اور بہت سی باتیں جن سے مردانہ بانجھ سے بچا جا سکتا ہے جیسا کہ بہت سے لوگ جانتے ہیں کہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر اپنے بہترین ہربل طریقہ علاج کی وجہ Image result for SPERMSسے پوری دنیا میں شہرت یافتہ ہیں تو آئیے ڈاکٹر صاحب سے ملتے ہیں۔
اینکر: ڈاکٹر صاحب اسلام و علیکم ۔۔
ڈاکٹر:۔ و علیکم اسلام ۔۔
اینکر:۔ ڈاکٹر صاحب آپ ہمارے ناظرین کو بتائیں کے مردانہ بانجھ پن کسے کہتے ہیں اور حمل کے لیے کون سے شرائط ہوتیں ہیں؟
ڈاکٹر:۔بچہ پیدا کرنے کی صلاحیت میں کمی یا بچہ پیدا کرنے کی صلاحیت کا نہ ہونا، بانجھ پن کی تعریف اس طرح کی جاتی ہے ایک سال کے عرصے تک نارمل مباشرت ہوتے رہنے کے باجود اور مائع ادویات استعمال کیے بغیر حمل قرار نہ پانا ہے۔ بانجھ پن کا شکار مرد بھی ہو سکتا ہے اور عورت بھی اس مرض میں مبتلا ہو سکتی ہے ۔ بانجھ پن ابتدائی اور ثانوی دو طرح کا ہوتا ہے ۔ابتدائی سے مراد وہ بانجھ پن وہ مریض ہیں جن میں حمل پہلے نہیں ہوا اور ثانوی بانجھ پن سے مراد وہ مریض جن میں حمل پہلے واقع ہو چکا ہو۔بانجھ پن کی 40فیصد وجوہات مردوں میں پائی جاتی ہیں اور آج کل تو بہت جلد اس کی تشخص ہو سکتی ہے کہ کون اس مرض میں مبتلا ہے۔حمل کے لیے مرد اور عورت دونوں کا تندرست ہونا ضروری ہے مر د کو سرعت انزال ضعف باہ کا مریض نہیں ہونا چاہیے مرد کی طرف سے اس کے مادہ منویہ نارمل اور مناسب جرثومہ منویہ پیدا ہونے کی ضرورت ہوتی ہے سپرم کی صورت حال کچھ اس طرح سے ہونی چاہیے کہ کم ازکم 72گھنٹے کے پرہیز کے بعد مرد میں مادہ منویہ کا تجزیہ کرنے پر مادہ منویہ کی مقدار 1.5ملی لیٹر سے5ملی لیٹر تک ہوتی ہے۔ایک ملی لیٹر مادہ منویہ میں20ملین یا اس سے زائد سپرم50سے60فیصد تک حرکت کرنے والےmotileاور60فیصد سے زائد نارمل شکل صورت والے سپرم ہونے چائیں ۔مرد کو سپرم کی تعدا د میں کمی oligospermiaیعنی سپرم کی تعداد کا ایک ملی لیٹر میں120ملین سے کم ہونا یا مادہ منویہ میں سپرم کا موجود نہ ہوناazoospermiaکا مریض نہیں ہونا چاہیے ۔عورت کو بھی صحت مند اور توانا ہونا چاہیے عورت کو ورم رحم ، سیلان الرحم ، ماہواری کی بے قاعدگی ، ہارمونز کے توازن میں خرابی ، ماہواری یا حیض کی بندش یا حیض کی تنگی وغیرہ کا شکار نہیں ہونا چاہیے۔
اینکر :۔ڈاکٹر صاحب مردانہ بانجھ پن میں جو مرد حضرات مبتلا ہوتے ہیں ان میں کون سے اسباب پائے جاتے ہیں جس کی وجہ سے ان Image result for INFERTILITY SPERM PICSکی تشخص ہو جاتی ہیں؟
ڈاکٹر:۔مرد میں قضیب اور پیشاب کی نالی کا پیدائشی یا اکتسابی نقص ، ذیابیطس شکری کی وجہ سے خصیوں کی ناقص فعلیت اور خصیوں کا ورم اور عورتوں میں رحم کا نہ ہونا ،مردوں میں بانجھ پن کا سبب اکثر اوقات منی کے جرثوموں کی تعداد کا کم ہونا یا جسمانی نقص ہوتا ہے دیگر عوامل میں منی کے جرثوموں کی حرکت کا انداز یا منی کے جرثوموں کی بناوٹ میں ہونا شامل ہیں۔hypospadiasاس کیفیت میں پیشاب کی نالی میں پیدائشی طور پر نقص ہوتا ہے جس کی وجہ سے پیشاب کا سوراخ خلاف معمول جگہ پر بنتا ہے یعنی عضوتناسل کے نیچے کی جانب یہ سوراخ ہوتا ہے۔vericoceleاس کیفیت میں خصیوں کی تھیلی پھیل جاتی ہیں جنہیں ہاتھ سے چھو کر محسوس کیا جاسکتا ہے اور ایسا محسوس ہوتا ہے، کہ گویا یہ کپڑوں سے بھری ہوئی چھوٹی تھیلی ہو۔ peyronie’s diseaseاس مرض میں عضوتناسل کی بناوٹ میں بہت زیادہ خم ہوتا ہے اور اس خم پر کچھ سختی سی محسوس ہوتی ہے خواہ عضوتناسل تناؤ کی حالت میں نہ ہو اس کیفیت میں جنسی ملاپ کے دوران درد ہوتا ہے اور آخر کار بانجھ پیدا ہو جاتا ہے۔
اینکر:ڈاکٹر صاحب آپ کے پاس مردانہ بانجھ پن کا جو علاج ہے اس کے بارے میں ذرا تفصیل سے ہمارے ناظرین کو بتائیں تاکہ ایسے مرد حضرات جو اولاد کی نعمت سے محروم ہیں اور ہر طرح کے علاج کروا کر بھی اولاد کی نعمت سے محروم ہیں اور اب مایوس ہو چکے ہیں وہ تاثیر دواخانے پر تشریف لائیں اور آپ سے علاج کروا کر اپنی دیرانہ خواہش یعنی اولاد کی نعمت سے مالامال ہوں؟
اینکر:۔تاثیر دواخانے پر مردانہ بانجھ پن کے لیے مختلف قسم کے علاج موجود ہیں جو کہ ہمارے ادارے کے مستند اور تجربہ کار ڈاکٹرز ، حکماء اور سائنسدانوں نے قدیم و جدید تحقیق کے نچوڑ سے اور بے اولادی کے اصل اسباب کو مدنظر رکھ کر مختلف قسم کی قدرتی ریسرچ کر کے بے اولاد مرد حضرات کے لیے بانجھ پن کی تینوں اقسام یعنیazoospermia,oligospermia,necrospermiaکا مکمل قدرتی علاج دریافت کیا ہے ۔بہت سے دوسرے حکماء یا ڈاکٹرز بانجھ کے مریض میں مرض کی مکمل تشخص کیے بغیر اور بنا رپورٹس چیک کئے نسخہ جات یا ادویات تجویز کر دیتے ہیں جس کا نتیجہ مایوسی کی صورت میں ہوتا ہے الحمداللہ ہم مریض کا مکمل چیک اپ کرتے ہیں اور مرض کی رپورٹس دیکھ کر مرض کی اصل وجوہات معلوم کرتے ہیں جس کے بعد ہی بہترین نسخہ تجویز کیا جاتا ہے اللہ کا شکر ہے کہ آج بے اولادی کے لیے بہترین مرکز سمجھا جانے والا ادارہ تاثیر دواخانہ پاکستان کا وہ واحد ادارہ ہے جہاں سے سینکڑوں جوڑے اپنی مراد پوری کر چکے ہیں اور ناظرین اگر آپ ہماری ویب سائیٹ وزٹ کریں تو آپ یہاں پر مریضوں کا مکمل ڈیٹا ملے گا جس میں علاج کے لیے آنے والے مریضوں کا علاج سے پہلے سے لے کر علاج کے بعد تک کی مکمل رپورٹس موجود ہیں جن سے آپ کو ہمارے علاج کا اندازہ ہو گا بے اولادی کے لیے ہمارا علاج ہی مریض کا پہلا انتخاب ہوتا ہے۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب دوران علاج مریض کو کون سی چیزوں سے پرہیز کرنا چاہیے اور کون سی چیزوں کا استعمال کرنا اُس کے لئے مفید ہے؟
ڈاکٹر:۔پرہیز علاج سے بہتر ہے۔
پرہیز:۔آلو مٹر، گوبھی، بیگن، پالک ، چاول، بڑا گوشت، پکوڑے سموسے، اچار چٹنی تمام گرم بادی چٹ پٹی تیز مصالحہ جات تمام گولڈڈرنکس ٹھنڈی اشیاء ، شیو مرغی ۔
استعمال کرنے والی اشیاء:۔کدو، ٹنڈے، توری، مولی، گاجر، شلجم، چھوٹا گوشت ، دودھ، دہی تمام ڈرائی فروٹ، شہد کھجور، کالے سفید چنے دال ماش ۔ مچھلی ، دیسی لیموں فریش فروٹ سیب کینو، مالٹا، آم اور کیلا وغیرہ استعمال کر سکتے ہیں۔
اینکر:۔ڈاکٹر صاحب جو مرد اس مرض میں مبتلا ہے اُن مردوں کے لئے آپ کے پاس کوئی تحفہ خاص موجود ہے جس کو استعمال کر کے وہ اس مرض سے بآسانی باہر نکل سکے؟
ڈاکٹر:۔ہمارے ادارے تاثیر دواخانہ کے مایہ ناز ڈاکٹرز، حکماء اور سائنسدانوں نے میری سر پرستی میں برس ہا برس کی تحقیقات اور بانجھ پن کے اصل اسباب اور وجو ہات کو مد نظر رکھ کر اپنی ریسرچ سے الماس کستوری سپرم گرو کورس متعارف کروایا ہے جومرض کی نوعیت کے حساب سے مریض کو دیاجاتاہے جو ہر طرح کے کیمیائی اجزاء سے پاک مکمل طور پر قدرتی دوا ہے اس کا کوئی بھی سائیڈ ایفیکٹ نہیں ہے یہ خالص جڑی بوٹیوں سے تیار شدہ ہیں اور100فیصد نتائج کے حامل ہیں ۔ تاثیر لیبارٹریز نے برسوں کی تحقیق کے بعد سپرم کی افرائش کے لئے الماس کستوری سپرم گرو کورس تیار کیا ہے ۔ یہ کورس شعبہ ریسرچ نے دیسی جڑی بوٹیوں کی آمیزش کے ساتھ طب اسلامی کے اصولوں کے عین مطابق سائنٹیفک طریقوں پر تاثیر لیبارٹریز میں جدید آٹو میٹک مشینری کی مدد سے تیار کیا ہے۔ جس کے استعمال سے ہر طرح کا انفکیشن ختم ہو جاتا ہے اور منی میں جراثیم نسل پیدا ہونے لگتے ہیں ۔ جس سے,oligospermia, necrospermia azoospermiaجیسی بیماری سے مکمل طور پر نجات مل جاتی ہے۔ یہ مردوں کے جرثومہ حیات میں ہونے والی تبدیلیوں کے افرائشی ہارمون HGHکے سپرم کی سطح میں اضافہ کرتا ہے۔ بے اولاد افراد کے سپرم کم ہوں تو ان کے مادہ تولید میں سپرمز کو نارمل حالت میں لاتا ہے ۔مادہ تولید کی افزائش کو بڑھا کر سپرم کو اولاد کے قابل بناتا ہے۔ سپرم کی پیدائشی کمزوری اور کمی ایسی محرومی ہے جو ایک صحت مند آدمی کو بھی کھوکھلابنا دیتی ہے ان دونوں صورتوں میں یعنی کرم منی کی کمزوری اور اس کے قدرتی تناسب کو درست کر کے اس کے قوام کو ٹھیک کرتا ہے اس میں شامل نہایت ہی قیمتی اورنایاب جڑی بوٹیاں نہ صرف مادہ تولید کو پیدا کرنے اور اسے گاڑھا کرنے میں موثر ہے بلکہ اس میں موجودسپرم کی کمی کو بھی دور کرتا ہے یہ کورس مادہ تولیداور سپرم سمیت تما م مردانہ امراض جو بانجھ پن کا سبب بنتے ہیں جیسے مادہ تولید میں جراثیم یعنی سپرم کا نہ ہونا، خصیوں کا نا کارہ ہونا، خصیوں اور عضوتناسل کے درمیان نالیوں کا بند ہونا، خصیوں میں انفیکشن ہونا وغیرہ کو نہ صرف ختم کرتا ہے بلکہ ان کو دوبارہ پیدا بھی نہیں ہونے دیتا۔یہ کورس 120یوم کے دورانیہ پر مشتمل ہیں اس کورس کا شمار ہمارے پشت در پشت صدی نسخہ جات میں ہوتا ہے اس لئے یہ کورس صرف ہمارے ادارے تاثیر دواخانے پر ہی د ستیا ب ہے مرد حضرات کو میں بتاتا چلو کہ وہ پاکستان میں ہے یا دنیا کے کسی بھی ملک میں ہے آپ بذریعہ آرڈر یہ کورس مانگووا سکتے ہیں۔پاکستان میں ہم بذریعہ V.Pپررسل بھیجتے ہیں اس کے علاوہ آپ خود ہمارے کلینک پر تشریف لا کر خود طلب کر سکتے ہیں۔پاکستان سے باہر دنیا کہ ہر ملک میں ہم بذریعہ ائیر شیب بھیجتے ہیں جہاں ایک خاص بات میں بتاتا چلو ہم پوری دنیامیں ہوم ڈیلوری سروس فراہم کرتے ہیں مطلوبہ کورس آپ کے گھر تک پہنچایا جا سکتا ہے۔ نوٹ( کورس کے بہترین نتائج کے لئے 4سے6ماہ مسلسل استعمال کریں)۔
ناظرین اگر آپ بھی الماس کستوری سپرم گرو کورس خریدنا چاہتے ہیں تو دیر مت کیجئے بلکہ ابھی کال کر کے اپنا آرڈر بک کروائیں۔ ہمارے ہیلپ لائن نمبرز یہ
ڈاکٹر صاحب سے براہ راست مشورے کے لئے ان نمبر ز پر رابطہ:+92334-9552889
+92321-9552889
+92300-9552889
آپ کی راہنمائی کے لئے میل اور فی میل میڈیکل آفیسرز ہمہ وقت موجود ہیں جن سے آپ اپنی بیماری اور ہر قسم کے مرض کے بارے میں راہنمائی حاصل کر سکتے ہیں جو آپ کو ہر قسم کی راہنمائی فراہم کرئے گے( کلینک ٹائم صبح 9بجے سے رات8بجے تک ہے )
میڈیکل آفیسر نمبر1: +92333-5501390
میڈیکل آفیسر نمبر2:۔ +92323-5501390
میڈیکل آفیسرنمبر3: +92336-5777696
میڈیکل آفیسرنمبر4: +92336-5777697
میڈیکل آفیسرنمبر5: +92332-5530536
فی میل (لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر1: +92331-5607654
فی میل(لیڈی میڈیکل آفیسر)نمبر2: +92332-5607654
کلینک (Reception landline) نمبرز:۔ +9251-5777696,+9251-5777697,+92515530536,+9251-5773239
نوٹ:۔ آپ اپنی بیماری کے متعلق مکمل معلومات کے ساتھ میل کریں ۔ آپ ہمارے ای میل taseerlabs@gmail.com،taseerdawakhana@gmail.comپر بھی آپ اپناآرڈر بک کروا سکتے ہیں۔
ہمارا ایڈریس ہے: تاثیر دواخانہ i-111:اقبال روڈ، نزد کمیٹی چوک، چٹیاں ہٹیاں، تاثیر چوک راولپنڈی۔مزید معلومات کے لئے وزٹ کیجئے ہماری ویب سائیٹ www.taseerlabs.com,dawakhanataseer.com۔
اینکر:۔بہت بہت شکریہ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر صاحب آپ نے ہمارے ناظرین کو الماس کستوری سپرم گرو کورس کے بارے میں بہترین راہنمائی کی امید ہے کہ ناظرین اس سے بہت زیادہ فائدہ اُٹھائیں گے اور آپ کو اپنی دعاؤں میں یاد رکھیں گے۔ ناظرین۔۔۔۔ یہ تھے بے اولادی کے مشہور روحانی معالج حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر جو کہ ہر قسم کے مردانہ و زنانہ امراض کے ماہر ہیں۔ حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر نے آج مردانہ بانجھ پن سے متعلق ہم سب کی بہترین راہنمائی کی۔ امید ہے آپ ضرور ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتوں پر عمل کر کے مردانہ بانجھ پن سے چھٹکارا حاصل کر سکیں گے اور ایسے افراد تک ڈاکٹر صاحب کی بتائی ہوئی باتیں پہنچائیں گے جو کہ اولاد کی نعمت سے محروم ہیں تا کہ وہ جلد از جلد حکیم و ڈاکٹر طارق محمود تاثیر سے اپنا علاج کروا کر اپنے آنگین میں خوشیاں بکھیر سکیں۔۔۔۔ اپنا خیال رکھئے گا۔۔۔ اللہ حافظ۔۔

COMPLETE TREATMENT OF
AZOOSPERMIA OLIGOSPERMIA & NECROSPERMIA

Course Name Duration PAYABLE
Spermogin Sperm Grow Therapy 30 Days 90 USD
 Spermogin Sperm Grow Combined Therapy 30 Days 125 USD
Spermogin Sperm Grow Plus Therapy 30 Days 160 USD

Course Name Duration PAYABLE
 Zafrani Sperm Grow Course 40 Days 220 USD
 Marwaridi Sperm Grow Course 40 Days 320 USD
 Yaqooti Sperm Grow Course 60 Days 640 USD
 Zafrani Marwaridi Sperm Grow Course 60 Days 980 USD
  
Course Name Duration PAYABLE
Acrobion Sperm Grow Recommended Therapy 90 Days 1400 USD
Acrobion Sperm Grow Combined Therapy 60 Days 1800 USD
Acrobion Sperm Grow Combined Plus Therapy 90 Days 2600 USD
Acrobion Sperm Grow Multi Plus Therapy 120 Days 4800 USD
  
Course Name Duration PAYABLE
  Talai Sperm Grow Course 120 Days 1500 KWD
  Kasturi Sperm Grow Course 120 Days 1800 KWD
  Almas Sperm Grow Course 120 Days 2300 KWD
  Talai Kasturi Sperm Grow Course 120 Days 3750 KWD
  Almas Kasturi Sperm Grow Course 120 Days 4915 KWD